Results 1 to 2 of 2

Thread: میں تلخی حیات سے گھبرا پی گیا

  1. #1
    Join Date
    Jun 2010
    Location
    Jatoi
    Posts
    59,925
    Mentioned
    201 Post(s)
    Tagged
    9827 Thread(s)
    Thanked
    6
    Rep Power
    21474903

    Default میں تلخی حیات سے گھبرا پی گیا

    Asalam o alaikom..


    میں تلخی حیات سے گھبرا پی گیا
    غم کی سیاہ رات سے گھبرا کے پی گیا

    اتنی دقیق شے کوئی کیسے سمجھ سکے
    یزداں کے واقعات سے گھبرا کے پی گیا

    چھلکے ھوئے تھے جام پریشاں تھی زلف یار
    کچھ ایسے حادثات سے گھبرا کے پی گیا

    میں +آدم ی ھوں کوئی فرشتہ نہیں حضور
    میں +آج اپنی ذات سے گھبرا کے پی گیا

    دنیائے حادثات ھے اک دردناک گیت
    دنیائے حادثات سے گھبر ا کے پی گیا

    کانٹے تو خیر کانٹے ھیں ان سے کیا گلہ
    پھولوں کی واردات سے گھبرا کے پی گیا

    ساغر وہ کہہ رھے تھے کہ پی لیجیے حضور
    ان کی گذارشات سے گھبرا کے پی گیا





    تیری انگلیاں میرے جسم میںیونہی لمس بن کے گڑی رہیں
    کف کوزه گر میری مان لےمجھے چاک سے نہ اتارنا

  2. #2
    Join Date
    Jul 2010
    Location
    Karachi....
    Posts
    31,280
    Mentioned
    41 Post(s)
    Tagged
    6917 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    21474875

    Default Re: میں تلخی حیات سے گھبرا پی گیا

    hmmm nice one


    Ik Muhabbat ko amar karna tha.....

    to ye socha k ..... ab bichar jaye..!!!!


Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •