Results 1 to 9 of 9

Thread: A short introduction of Parveen shakir

  1. #1
    Join Date
    Jun 2010
    Location
    Jatoi
    Posts
    59,925
    Mentioned
    201 Post(s)
    Tagged
    9827 Thread(s)
    Thanked
    6
    Rep Power
    21474903

    Default A short introduction of Parveen shakir

    Asalam o alaikom...

    پروین شاکر

    24, 11, 1952 تاریخ پیداءش

    وجھ شھرت

    پروین شاکر اردو کی منفرد لہجے کی شاعرہ
    پروین شاکر اردو کی منفرد لہجے کی شاعرہ تھیں۔ پروین شاکر استاد اور سرکاری ملازم بھی رہیں۔

    پروین شاکر چوبیس نومبر 1952ء میں کراچی، پاکستان میں پیدا ہوئیں۔ انگلش لٹریچر اور زبانی دانی میں گریجوایشن کیا۔

    آپ سرکاری ملازمت شروع کرنے سے پہلے نو سال شعبہ تدریس سے منسلک رہیں، اور 1986ء میں کسٹم ڈیپارٹمنٹ ، سی۔بی۔آر اسلام آباد میں سیکرٹری دوئم کے طور پر اپنی خدمات انجام دینے لگیں۔

    1990
    میں ٹرینٹی کالج جو کہ امریکہ سے تعلق رکھتا تھا تعلیم حاصل کی اور 1991ء میںہاورڈ یونیورسٹی سے پبلک ایڈمنسٹریشن میں ماسٹرز کی ڈگری حاصل کی۔ پروین کی شادی ایک ڈاکٹر نصیر علی سے ہوئی۔ جس سے بعد میں طلاق لے لی۔ 26دسمبر 1994 کو ٹریفک کے ایک حادثے میں اسلام آباد میں ، بیالیس سال کی عمر میں مالک حقیقی سے جا ملیں۔ ان کے بیٹے کا نام مراد علی ہے۔


    شاعری:
    انکی شاعری کا موضوع محبت اور عورت ہے۔

    کتابیں:

    خوشبو، صدبرگ، خودکلامی، انکار اور ماہ تمام مجموعہ کلام ہیں۔



    معروف شاعرہ پروین شاکر کو ہم سے جدا ہوئے سترہ برس ہوگئے ہیں ۔ وہ انیس سو چورانوے میں ایک حادثے میں جاں بحق ہوگئی تھیں۔ پروین شاکر اپنے زمانہ کی مایہ ناز شاعرہ تھیں۔ ان کی شاعری نے جمالیات میں انسانی احساسات کا آہنگ بھر کر اپنی شاعری کو ایسی طرح دی جس نے دنیائے سخن میں نسوانی شاعری کو اوج کمال دیا۔
    شاعری میں حسیات کی خوشبو بکھیرنے والی جب خوشبو کے ترنم سے معاشرے کے ساز کے ساتھ مترنم ہوئی تو سارے سر خوشبو سے مہکنے لگے۔ وہ شاعری کے ساتھ ساتھ معاشرے میں ایک فعال کردار رکھتی تھیں۔
    پروین شاکر نے تعلیمی میدان میں بھی معرکے سرانجام دیئے ۔ وہ اہم سرکاری عہدوں پر بھی فائز رہیں ۔ ان کی حادثاتی موت سے نوجوان نسل کے ساتھ شاعری کا ایک ایسا دور اختتام پذیر ہوا جو کہ حس و جمالیات کا حسین دور کہاجاسکتا تھا




    Last edited by Arslan; 05-08-2012 at 02:18 AM.





    تیری انگلیاں میرے جسم میںیونہی لمس بن کے گڑی رہیں
    کف کوزه گر میری مان لےمجھے چاک سے نہ اتارنا

  2. #2
    Join Date
    Feb 2008
    Location
    Islamabad, UK
    Posts
    88,506
    Mentioned
    1028 Post(s)
    Tagged
    9706 Thread(s)
    Thanked
    603
    Rep Power
    21474934

    Default Re: A short introduction of Parveen shakir

    hmm beshak sahi baat hai

    jis road pe accident huwa usi road ko parveen shakir road ka naam b dia gaya hai Isb mai ...

  3. #3
    Join Date
    Aug 2008
    Location
    ~Near to Heart~
    Age
    28
    Posts
    78,521
    Mentioned
    3 Post(s)
    Tagged
    2881 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    21474924

    Default Re: A short introduction of Parveen shakir

    In k Accident k waqt Mere cxn jo ab DSp hain wo first wahan phnchay thay wo bata rahe mere samne in ka intiqaal huwa....!!!
    2112kjd - A short introduction of Parveen shakir

  4. #4
    Join Date
    Jun 2010
    Location
    Jatoi
    Posts
    59,925
    Mentioned
    201 Post(s)
    Tagged
    9827 Thread(s)
    Thanked
    6
    Rep Power
    21474903

    Default Re: A short introduction of Parveen shakir

    Quote Originally Posted by sheem View Post
    hmm beshak sahi baat hai

    jis road pe accident huwa usi road ko parveen shakir road ka naam b dia gaya hai Isb mai ...
    Jii aisaa hii haii.....





    تیری انگلیاں میرے جسم میںیونہی لمس بن کے گڑی رہیں
    کف کوزه گر میری مان لےمجھے چاک سے نہ اتارنا

  5. #5
    Join Date
    Jun 2010
    Location
    Jatoi
    Posts
    59,925
    Mentioned
    201 Post(s)
    Tagged
    9827 Thread(s)
    Thanked
    6
    Rep Power
    21474903

    Default Re: A short introduction of Parveen shakir

    Quote Originally Posted by DaNgErOuS tEaRs View Post
    In k Accident k waqt Mere cxn jo ab DSp hain wo first wahan phnchay thay wo bata rahe mere samne in ka intiqaal huwa....!!!





    تیری انگلیاں میرے جسم میںیونہی لمس بن کے گڑی رہیں
    کف کوزه گر میری مان لےمجھے چاک سے نہ اتارنا

  6. #6
    Join Date
    Feb 2008
    Location
    Islamabad, UK
    Posts
    88,506
    Mentioned
    1028 Post(s)
    Tagged
    9706 Thread(s)
    Thanked
    603
    Rep Power
    21474934

    Default Re: A short introduction of Parveen shakir

    Quote Originally Posted by DaNgErOuS tEaRs View Post
    In k Accident k waqt Mere cxn jo ab DSp hain wo first wahan phnchay thay wo bata rahe mere samne in ka intiqaal huwa....!!!
    mujhe abi tak nahi pata k akhir hadsa huwa kaise tha kis ne aa ke takar mari thi

  7. #7
    Join Date
    Feb 2008
    Location
    Karachi, Pakistan, Pakistan
    Posts
    125,914
    Mentioned
    836 Post(s)
    Tagged
    9270 Thread(s)
    Thanked
    1180
    Rep Power
    21474971

    Default Re: A short introduction of Parveen shakir

    walaikum salam

    behtreen shaira thi..
    maine dekhi thi road isb mai.
    aik dor waqie khatam hua hia.
    صرف آواز نہیں ، لفظ بھی مقفل ہیں مرے

    سوچ میں ہوں کہ اب تجھ کو پکاروں کیسے

  8. #8
    Join Date
    Feb 2008
    Location
    Islamabad, UK
    Posts
    88,506
    Mentioned
    1028 Post(s)
    Tagged
    9706 Thread(s)
    Thanked
    603
    Rep Power
    21474934

    Default Re: A short introduction of Parveen shakir

    Quote Originally Posted by naz View Post
    walaikum salam

    behtreen shaira thi..
    maine dekhi thi road isb mai.
    aik dor waqie khatam hua hia.
    me sath dekhi thi na

  9. #9
    Join Date
    Jun 2010
    Location
    Jatoi
    Posts
    59,925
    Mentioned
    201 Post(s)
    Tagged
    9827 Thread(s)
    Thanked
    6
    Rep Power
    21474903

    Default Re: A short introduction of Parveen shakir


    پروین شاکر کی قبر کے کُتبے پر تحریر غزل کا شعر

    مربھی جاؤں تو کہاں لوگ بھلاہی دیں گے
    لفظ میرے، مرے ہونے کی گواہی دیں گے





    تیری انگلیاں میرے جسم میںیونہی لمس بن کے گڑی رہیں
    کف کوزه گر میری مان لےمجھے چاک سے نہ اتارنا

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •