Results 1 to 2 of 2

Thread: دو قومی نظریہ، میڈیا اور ہم

  1. #1
    Join Date
    Jun 2010
    Location
    Jatoi
    Posts
    59,925
    Mentioned
    201 Post(s)
    Tagged
    9827 Thread(s)
    Thanked
    6
    Rep Power
    21474903

    Default دو قومی نظریہ، میڈیا اور ہم

    اسلام علیکم


    دو قومی نظریہ، میڈیا اور ہم




    دو قومی نظریہ کیا تھا میرے خیال میں سب ہی اس کے بارے میں جانتے ہوں گے اس لیے اس کی تفصیل میں جانےکی ضرورت نہیں ہے مختصر الفاظ میں دو قومی نظریہ کو کچھ ان الفاظ میں بیان کیا جا سکتا ہے :۔

    "برصغیر میں دو قومیں ایک ہندو اور دوسری مسلمان آباد ہیں جن کی تہذیب و ثقافت اور رہن سہن قعطی ایک دوسرے سے مختلف ہے۔ جس کی وجہ سے یہ دونوں ایک جگہ اکٹھی نہیں رہ سکتیں"

    اسی نظریہ کو بنیاد بنا کے پاکستان حاصل کیا گیا مگر پاکستان بننے کے بعد شاید ہم نے کبھی یہ سوچا ہی نہیں کہ ہم نے دو قومی نظریے کے ساتھ اب کیا کرنا ہے ، اس لیے ہم نے اس کو صرف درسی کتابوں کی زینت بنا دیا ،اگر پاکستان بننے کے بعد بھی اس کوعملی زندگی کا حصہ بنایا گیا ہوتا تو آج پاکستان میں ایک مسلمان یا پاکستانی قوم آباد ہوتی مگر صد افسوس کے ساتھ کہنا پڑتا ہے کہ بحثیت قوم مسلمانوں نے پاکستان تو حاصل کر لیا مگر پاکستان بننےکے بعد مسلمان بھی تقسیم ہوگئے کوئی دیو بندی ، کوئی بریلوی ، کوئی سنی ، کوئی وہابی ، کوئی اھل ِ تشیع اور کوئی اھلِ حدیث ہو گیا بات یہاں ہی ختم نہیں ہوئی بلکہ پاکستان میں پاکستانی بھی بہت کم ہی ہیں یہاں تو سندھی ، بلوچی ، پنجابی ، پٹھان ، مہاجر ، سرائیکی ، کوہستانی ، پوٹھواری اور پتا نہیں کون کون سی قومیں آباد ہیں ۔

    دو قومی نظریے کی بنیاد تہذیب و تمدن اور رسم و رواج کا فرق تھا مگر آج اگر ہم اپنے اردگرد نظر دوڑائیں اور معاشرے کے رسم ورواج کا بغور مطالعہ کریں تو ہم پہ یہ تلخ حقیقت آشکار ہو گئی کہ ہمارے اکثر رسم و رواج تو ہندو تہذیب سے لیے گئے ہیں جن میں تھوڑی بہت کمی بیشی کرکے اور نام وغیرہ تبدیل کر کے بڑے فخر سے ہم منا رہے ہوتے ہیں مثال کے لیے کہیں زیادہ دور جانے کی ضرورت نہیں بلکہ اپنے گھر یا گلی ،محلے میں ہونے والی کسی خوشی یا غمی کے موقعہ پہ ہونے والے رسم و رواج کا بغور مطالعہ کر لیں اور جو تھوڑا بہت فرق ہے اس کو میڈیا والے اور کیبل والے مٹانے کے چکر میں لگے ہوئے ہیں ۔

    بھارتی چینل جو کچھ دیکھا رہے اس پہ ہم اعتراض نہیں کر سکتے کیونکہ وہ تواپنا کلچرپیش کر رہے ہوتے ہیں مگر آج کل کسی بھی پاکستانی ٹی وی چینل(پی ٹی وی کے علاوہ ) کو دیکھ لیں کہ یہ کیسے انڈین کلچر ، گانے ، ڈرامے اور فلمیں بڑے فخر سے پیش کر رہے ہیں اور افسوس تو اس وقت اور زیادہ ہوتا ہےجب نیوز چینل پہ بھی بے ہودہ ڈانس اور سین چلاے جاتے ہیں اب تو یہی لگتا ہے کہ پاکستانی خبریں بھی شاید انڈین فنکاروں کی خبروں کے بغیر نہیں چلائی جا سکتی چاہے اس کے لیے ہفتہ دو ہفتہ پرانی خبر ہی کیوں نہ چلانی پڑے ۔



    حکومت کی ذمہ داری بھی بنتی ہے کہ بے شک وہ انڈین میڈیا کو کنٹرول نہیں کر سکتی مگر یہاں کے میڈیا اور کیبل آپریٹرز کے لیے تو ضابطہ اخلاق بنایا جا سکتا ہے اورغیر اخلاقی ، ہندو رسم و راوج کے ترجمان پروگرامز اور غیر قانونی طور پہ چلنے والے چیینلز کو تو بند کیا جا سکتا ہے میری والدین سے بھی گزارش ہے کہ اگر ان کا کھانا انڈین ڈراموں اور فلمیں دیکھے بغیر ہضم نہیں ہوتا تو خدارا اپنے بچوں کو تو اس سے دور رکھیں کیوں کے بچوں تو جو دیکھیں گے وہی سیکھیں گئے، یاد رکھیں اگر آج دو قومی نظریہ کے دفاع کے لیے کچھ نہ کیا گیا اور یہ صرف درسی کتابوں تک محدود رہا تو آنے والی نسلیں ہمارے آباواجداد کا مذاق اڑایا کریں گی کہ وہ ہندووں اور مسلمانوں کے درمیان کون سی ثقافت اور تہذیب و تمدن کے فرق کی بات کرتے تھے ۔
    Last edited by sarfraz_qamar; 15-01-2012 at 11:50 PM.





    تیری انگلیاں میرے جسم میںیونہی لمس بن کے گڑی رہیں
    کف کوزه گر میری مان لےمجھے چاک سے نہ اتارنا

  2. #2
    Join Date
    May 2010
    Location
    Islamabad
    Posts
    3,022
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    31 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    21474847

    Default Re: دو قومی نظریہ، میڈیا اور ہم

    media walay kis ki suntay hain

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •