Results 1 to 1 of 1

Thread: Saza

  1. #1
    Join Date
    Aug 2011
    Location
    SomeOne H3@rT
    Age
    31
    Posts
    2,331
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    825 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    429507

    Saza

    سزا


    امی تو اج جان سے ہی مار ڈالین گی اگر انکو پتہ چل گیا،نیلی اس خیال سے ہی لرز گی ۔مگریپھر زبان کے چٹخارے نے اسے مجبور کر دیا اور وہ لڑکیوں کے ہجوم میں چھپتی چھپاتی ریڑھی والے کے پاس جا کر کھڑی ہو گی،تھوڑی دیر مین امی کا خوف اسکے دل سے جا چکا تھااب وہ تیز مصالحہ والے دہی بڑے کھا رہی تھی۔اسکا منہ چل رہا تھا اور ناک سرخ ہو گی تھی۔بار بار استین سے ناک رگڑتی سو سو کرتی جب وہ واپسی کے لیے قدم بڑھانے لگی تو امی کو دیکھ کر اسکا دم ہی نکل گیا۔ "تم ایف اے کی ذہین طالبہ تو کہیں سے نہیں لگتیں ہو"امی گرجیں تو موٹے موٹے آنسوں نیلی کی انکھوں سے نکل پڑے سبز ساری مین ملبوس اوںچا سا جوڑا بناے،نکھرے میک اپ کے ساتھ کہیں سے بھی نیلی کی ماں نہین لگتی تھیں انہونے انگریزی ادب مین ایم اے کیا تھا سوسایٹی مین بیگم آغا کے نام سے مشہور تھیں نفیس عورت کی ایسی لڑکی۔۔نیلی کا سر شرم سے جھک گیا امی کرسی پر بیٹھتے ہوے بولیں"اب اگر تم نے ایسی گندی سندی چیزیں کھایں تو یہ معاملہ تمہارے ڈیئڈی کے سپرد کر دونگی نیلی نے کچھ کہنا چاہا مگر امی کو اخبار اٹھاتا دیکھ کر خاموش ہو گی امی غصے مین تنی کھڑی تھیں پاپا صوفے پر پہلو بدلتے ہوے:" نیلی اج تمہاری امی نے شکایت کی ھے کہ امی کے منع کرنے کے باوجود اج پھر لنچ باکس مین تم وہی گندے دہی بڑے لے کر ای ہو کتنی شرم کی بات ھے اج تمہاری امی تم کو سزا دین گی " پاپا کمرے سے نکلے تو امی تیزی سے میز کی طرف بڑھتے ہوے بولیں" آج مین بھی تمہاری پسندیدہ ڈش دیکھوں " سہمی ہوی نیلی کی نظر میز پر رکھے ہوے لنچ بوکس پر گی دہی مین ڈوبے ہوے بڑوں مین چاٹ کا مصالحہ کیا بہار دکھا رہا تھا۔امی نے نفاست سے چمچہ لے کر لنچ بوکس اگے کھسکایا تو نیلی نے اپنی آنکھیں بند کر لین آج دہی بڑوں مین کھٹای کچھ زیادہ تھی ۔مرچ بھی تیز تھی خلاف توقع جب امی کی تیز اواز سنای نہین دی تو نیلی نے ڈرتے ڈرتے آنکھیں کھولیں امی نی ساری کی پرواہ کیے بغیر قالین پر دھرنا مارے بیٹھی تھیں سامنے لنچ بوکس کھلا ہوا تھا امی کی ناک سے بے تحاشہ پانی بیہ رہا تھا جسے وہ قیمتی بلاوز کی استین سے صاف کرتی جاتی تھیں منہ سے سوں سوں کی اواز نکل رہی تھی اور بڑی رغبت سے دہی بڑے کھا رہی تھیں یہ واقعی نیلی کے یے بہت بڑی سزا تھی کہ ریڑھی والے کے پاس کھڑے ہو کر کھانے کے بجاےلنچ بوکس مین لے ای تھی اور اب وہ انہین حسرت سے تکنے پر مجبور تھی))))
    Last edited by Hidden words; 06-08-2012 at 11:16 PM.

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •