Results 1 to 3 of 3

Thread: Souchne Wala

  1. #1
    Join Date
    Mar 2012
    Location
    Pakistan
    Posts
    4
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    0

    Default Souchne Wala

    میں ناکام ہوں کیونکہ دنیا کو کسی سوچنے والے کی ضرورت نہیں ہے۔ بس سب کو اپنے اپنےسمندر میں اس وقت تک خود کو ڈوبنے سے بچانا ہے جب تک نقارہ بج اٹھے۔ میرے جیسے لوگ جو وقت سے بہت پہلے پانی سے گردن نکالے کسی انتظار میں ہیں، انسانیت کی ترقی کی راہ میں رکاوٹ ہیں۔ یہ ہمارا نصیب ہے کہ کسی کونے میں سسکتے ہوئے دم توڑ جائیں۔ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ایک لاحاصل زندگی کی طرح ایک بے معنی موت۔ انسانیت کی بڑی تصویر میں جس کی کوئی اہمیت نہیں ۔ چھوٹے، معمولی اعشاری اعداد کی طرح ہمیں round off کر دیا جائے گا۔ یہی ہمارا مقدر ہے کہ اپنے اپنے کونوں کھدروں میں کراہتے رہیں۔

    ہماری حیثیت ناقص مال کی سی ہے۔ ہماری پیدائیش کی ضرورت نہیں تھی۔ ہم تو بس ایک بن چاہیby product ہیں۔ ہاں بھلا سوچنے والوں کی ضرورت ہی کیا ہے؟ سر جھکانے والے غلاموں کی کھیپ تھی اور کچھ غلط ہو گیا اور ہم نے سوچنا شروع کر دیا۔ زندگی سے بھی بڑی چیزوں کے بارے میں۔ ہم نے اس سرحد پر پاوں رکھ دیے جہاں صرف دیوتاوں کی اجارہ داری تھی۔ کچھ عجب نہیں کہ ہر شئے ہمیں بیگانی نظر آتی ہے۔ کچھ عجب نہیں کہ ہم مکمل طور پر کھو چکے ہیں۔ ہم ناکام ہیں مگر یہ عیب ہماری تخلیق میں ہے۔

    سورج کی پہلی کرن نے اس پرانے گھرکے پیچھے سے چہرہ اٹھایا۔ میں انہیں سن سکتا ہوں، محسوس کر سکتا ہوں۔ وہ شور کرنے والے غلام بیدار ہو چکے ہیں۔ میرے حساس کان یہ سب برداشت نہیں کر پائیں گے۔ مجھے کسی اور کونے میں دبک جانا ہو گا شام ڈھلنے تک، جہاں میں مکمل تنہائی میں سوچ سکوں۔ کیونکہ سوچنا ہی ہے جو میں کر سکتا ہوں۔ جیسے کھلاڑی ایک پوسٹ سے دوسری تک گیند کو لے جاتے ہیں مجھے بھی اپنے خیالات کے گھوڑوں کو دوڑانا ہو گا۔ یہی میرے تیرنے کا طریقہ ہے۔

    میں نہیں جانتا ۔ کیا خبر ایک آواز، ایک مدھم سی گھنٹی میرے جیسے لوگوں کیلے بھی ہو، کیا خبر کہ نفیر عام ہو جائے کہ مجھھ جیسے راندہ درگاہ لوگوں کیلئے بھی کوئی نجات ہے؟ ہاں مگر اس وقت تک مجھے اپنے سمندر میں ہی تیرنا ہو گا۔

    سید اسد علی کی کتاب ‘‘ اندھیروں کی کہانی’’ سے ایک اقتباس
    Last edited by Hidden words; 06-08-2012 at 08:11 PM.

  2. #2
    Join Date
    Sep 2011
    Location
    Jadoo Nagri
    Posts
    19,713
    Mentioned
    198 Post(s)
    Tagged
    8340 Thread(s)
    Thanked
    10
    Rep Power
    21474862

    Default re: Souchne Wala

    wah bht khoob
    keep sharing

  3. #3
    Join Date
    Jun 2010
    Location
    Jatoi
    Posts
    59,925
    Mentioned
    201 Post(s)
    Tagged
    9827 Thread(s)
    Thanked
    6
    Rep Power
    21474903

    Default re: Souchne Wala

    nice sharing





    تیری انگلیاں میرے جسم میںیونہی لمس بن کے گڑی رہیں
    کف کوزه گر میری مان لےمجھے چاک سے نہ اتارنا

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •