Results 1 to 1 of 1

Thread: چپکے چپکے رات دن آنسو بہانا ياد ھے

  1. #1
    Join Date
    Aug 2011
    Location
    SomeOne H3@rT
    Age
    31
    Posts
    2,331
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    825 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    429507

    چپکے چپکے رات دن آنسو بہانا ياد ھے

    چپکے چپکے رات دن آنسو بہانا ياد ھے
    ھم کو اب تک عاشقي کا وہ زمانہ ياد ھے

    با ھزاراں اضطراب و صد ہزاراں اشتياق
    تجہ سے وہ پہلے پہل دل کا لگانا ياد ھے

    بار بار اٹھنا اسي جانب نگاھ شوق
    اور ترا غصے سے وھ آنکہيں لڑانا ياد ھے

    تجہ سے کچہ ملتے ھي وھ بے باک ھو جانے مرا
    اور ترا دانتوں ميں وھ انگلي کو دبانا ياد ھے

    کہينچ لينا وھ مرا پردے کا کونا دفعتا
    اور دوپٹے سے ترا وھ منہ چہپانا ياد ھے

    جان کر سوتا تجہے وھ قصد پا بوسي مرا
    اور ترا ٹہکرا کے سر، وھ مسکرانا ياد ھے

    تجہ کو جب تنہا کبھي پانا تو ارزاھ لحاظ
    حال دل باتوں ھي باتوں ميں جتانا ياد ھے

    جب سوا ميرے تمہارا کوئي ديوانہ نہ تہا
    سچ کہو کچہ تم کو بھي وھ کار خانہ ياد ھے

    غير کي نظروں سے بچ کر سب کي مرضي کے خلاف
    وہ ترا چوري چہپے راتوں کو آنا ياد ھے

    آگيا گر وصل کي شب بھي کہيں ذکر فراق
    وھ ترا رو رو کر مجہ کوبھي رولانا ياد ھے

    دوپہر کي دہوپ ميں ميرے بلانے يک لئے
    وھ ترا کوٹہے پہ ننگے پائوں آنا ياد ھے

    آج کي نظروں مين ھے وھ صحبت راز و نياز
    اپنا جان ياد ھے تيرا بلانا ياد ھے

    ميٹہي ميٹہي چہير کے باتيں نرالي پيار کي
    ذکر دشمن کا وھ باتوں ميں اڑانا ياد ھے

    ديکہانا مجہ کو جو برگشتہ، تو سو سو ناز سے
    جب منا لينا تو پھر خود روٹھ جانا ياد ھے

    چوري چوري ھم سے تم آکر ملے تھے جس جگہ
    مدتيں گزريں پر اب تک وھ ٹھکانا ياد ھے

    شوق ميں مھندي کے وھ بے دست و پا ھونا ترا
    اور مرا وہ چھيڑنا و گد گدانا ياد ھے

    باوجود ادعائے اتقا حسرت
    آج تک عہد ہوس کاوہ فسانہ ياد ھے
    حسرت موہانی
    Last edited by T@nHA.D!L; 19-04-2012 at 02:47 PM.

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •