Page 1 of 2 12 LastLast
Results 1 to 10 of 15

Thread: Lafz Kahani (Tehreeri Muqabla: Pre-Quarter Final 1)

  1. #1
    Join Date
    Jun 2011
    Location
    China
    Posts
    4,833
    Mentioned
    29 Post(s)
    Tagged
    9237 Thread(s)
    Thanked
    2
    Rep Power
    21474847

    Default Lafz Kahani (Tehreeri Muqabla: Pre-Quarter Final 1)

    As_Salam_O_Alaikum

    Writers club k tehreeri muqablay mai shirkat krnay walay members k names final hu chukay hain...Un k naam yeh hain :

    The Prince , Naz ,Paras, Maliha Farhan, Smiling Assassin, bilal azam, anaya, hijaab, resham,cute ruba, cute paras,sweet.kiran.

    Umeed hay tamam participants is mai bharpoor hissa lain gay.. .

    Iss round main Aap ko aik kahani likhni hay jis ka theme ‘rishtayluq..’ hona chahyay..mukhtasir aur jamay tehreer krnay ki koshish ki jyay ga..Kahani 15 lines sa zyada nahi honi chahyay.


    Rules:

    last date 7th May hay

    1 week baad is thread ko close kar diya jaye ga..

    Aglay round mai janay walay members ka faisla 50% polling aur 50% judges team par depend kray ga.
    (Judges team: Sheem, Heer, Dangerous tears, Hidden words, Falling Tears)

    Is haftay 12 mai sa 10 log hee pre-quarter final-2 mai ja sakay gain.

    Is thread mai sirf tehreer hee share krni hain..Muqablay sa related kisi bhi kisam ki query k lyay alag sa thread stick kr di gai ha..ap apni confusions us thread mai clear kr saktay hain.

    http://sachiidosti.com/forum/writers...ml#post1424029

    Is thread mai share ki gai tehreer edit nahi kar saktay..

    Last edited by Falling Tears; 30-04-2012 at 09:18 AM.

  2. #2
    Join Date
    Mar 2010
    Location
    karachi
    Age
    28
    Posts
    997
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    45 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    21474844

    Default Re: Lafz Kahani (Tehreeri Muqabla: Pre-Quarter Final 1)


    Zindagi taiz rawi sey guzrey jaa rahi hai,,,saal din aur din ghanton k hisab sey guzarney lagey hain..Aur is taiz raftaar zindagi main hum apney rishton ko bohat peechey chor detey hain...kuch samjh nahi aata k taqdeer hamen kahan aur kis taraf ley jaarahi hai... phir aik waqt aisa aata hai jub Insan pey ye raaz aashna hota hai k jis raah pe wo umer bhar apni manzil ko paaney k liye chalta raha wo raasta dar'asal aik khaar gaah hai aur manzil tou phir door door tak kahiin nazar nahi aati... Usi manzil ko paney ki dour main insan apney rishtey gunwa deta hai.. wo rishtey jo parwardigaar ney uske liye banaye hain ta k wo achey aur burey waqton main un rishton ka sahara ley sakey magar jub apka acha waqt chalta hai tou ye rishtey apko apney aas paas hanstey boltey nazar aatey hain aur jub kathin waqt aatey hain tou door door tak koi talluq nibhaney wala nahi dikhta.... Insaniyat rishton ko paison k tarazon main toulna shuru kardiya hai aur yahi hamari sub sey bari bewakofi hai...
    Aaj kal kon sey aise bhai hain jo apas main bohat pyar sey rehtey hain.. Wo jo sub k sub ghareeb hain ya phir bhai jo khandani ameer hain.. Jahan jahan 2 bhaiyon main ya 2 khandano main tabkati fark aata hai wahan apke apney ap se mun mourtey dikhai detey hain aur hairat hoti hai ye jaan ker k unhi khoni rishton sey (jin k sath aap paley barhey hain) apka milna julna bohat he mukhtasir hojata hai aur rafta rafta khatam hojata hai kyun k hum dunya ki chamak main itna gum hojatey hain k hamen yaad he nahi rehti ye baat

    "Rishta Qata krney wala jannat me nahi jai ga." BUKHARI-O-MUSLIM

    Hamen Allah pak sey dua karni chahiye k hamarey rishton ko buri nazar aur burey khayalaat sey bachaye ta k hum gunah k rastey pe kabhi gamzan na hon. Ameen


    Last edited by Cute Ruba; 30-04-2012 at 02:09 PM.
    idamg0 - Lafz Kahani (Tehreeri Muqabla: Pre-Quarter Final 1)

  3. #3
    Join Date
    Nov 2011
    Location
    Sahiwal
    Posts
    288
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    9 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    7

    Default Re: Lafz Kahani (Tehreeri Muqabla: Pre-Quarter Final 1)


    زندگی میں بعض لوگوں کے ہونے یا نہ ہونے سے بہت فرق پڑتا ہے۔ جنہیں ہم نہیں چاہتے اگر وہ ہمارے پاس نہ بھی ہوں تو بھی ہم مطمئن ہوتے ہیں لیکن جنہیں ہم دل میں جگہ دیتے ہیں وہ اگر ہمارے پاس ہوں تب دل مطمئن بھی ہوتا ہے اور ان کی جدائی کا ڈر بھی ہوتا ہے۔ اگر ایسے لوگ زندگی کے سفر میں ہمارے ہم سفر نہ بنیں تو زندگی تو تب بھی گزر جاتی ہے مگر اک کسک کے ساتھ۔ ایک درد جو دل میں اٹھتا ہے وہ تا عمر رہتا ہے۔ اس درد کا ایک علاج ہے اور وہ یہ کہ جنہیں ہم چاہتے ہیں وہ ہمیں مل جائیں، یہ چیز گرمیِ محبت کہلاتی ہے۔ اس کا دائرہ بہت وسیع ہے ہے۔ اس میں ماں باپ، بہن بھائی، بیٹا بیٹی، شوہر بیوی، دوست رشتہ دار مختصر ہر کوئی شامل ہوتا ہے۔ یہ کبھی جاندار اشیاء سے ہوتی ہے تو کبھی بے جان سے۔
    جیسے بعض لوگوں کو اپنے کمرے کے علاوہ کہیں اور نیند نہیں آتی اسی طرح بعض لوگوں کی قسمت ان کے ماں باپ کی دعاؤں پر ہوتی ہے۔ یہی زندگی ہے اور زندگی رشتوں سے مل کر با معنی ہوتی ہے ورنہ وہ بے معنی زندگی کہلاتی ہے۔اختتام دونوں قسم کی زندگی کو ہے مگر بامعنی، جس کی بارش میں رشتوں کی مٹی مہکتی ہے، وہ اختتامِ سفر کے بعد بھی با معنی ہوتی ہے۔ رشتے زندگی کو گردِ سفر نہیں بننے دیتے بلکہ یہ زندگی کو بعد میں


  4. #4
    Join Date
    Mar 2010
    Location
    ممہ کہ دل میں
    Posts
    40,298
    Mentioned
    32 Post(s)
    Tagged
    4710 Thread(s)
    Thanked
    4
    Rep Power
    21474884

    Default Re: Lafz Kahani (Tehreeri Muqabla: Pre-Quarter Fi nal 1)


    رشتے اور تعلق


    آج کی صبح امجد کی امی نے سوچا بھی نا تھا کہ جو درد وہ ایک عرصہ سے سہہ سہہ کہ ٹال رہی تھی ۔ وہ اس قدر بڑھ جائےگا کہ نا چاہتےہوئے بھی انھیں ہسپٹال جانا پڑھا ۔ امجد جو اپنی امی کا اکلوتا بیٹا تھا۔ اور امجد کہ ابو جو ایک ایکسیڈنٹ کی وجہ سے لاچار ہوگئے تھیں ۔ اب امجد ہی ان بوڑھے ماں باپ کااکلوتا سہارہ تھا ۔ وہی ان کی آخری اور پہلی امید تھا۔ ڈاکٹر نے جب کہا کہ ان کی ایک کیڈنی فیل ہوچکی ہیں اور دوسری میں بھی چند باریک پتھر موجود ہیں۔ اورانھیں سخت آرام کی ضرورت ہیں۔ تو امجد کہ ہوش اڑ گئے ۔ امجد کی امی نے روتے ہوئے آنسو سے کہا بیٹا بہو لے آ ، مجھ سے اب اتنا کام نہیں ہونگا ۔۔ بہو آجائےگی تو گھر کی رونق دیکھ کر میری باقی کی زندگی آسانی سے گزر جائنگے ۔ اور ہماری خدمت بھی کریں گی ۔ امجد بیٹا تو خوشبو سے شادی کرلے ۔غریب کی بیٹی ہیں ۔ لیکن سارے گھر کا کام کرتی ہیں ۔ ہزاروں گُن ہے ۔اور بڑی نیک لڑکی ہیں ۔ امجد یہ سن کر دنگ رہ گیا ۔ کیونکہ وہ سہر سے بے پناہ محت کرتا تھا ۔ جو بہت امیر گھرانہ سے تھی ۔ امجد نے امی سے سہر کا کہا تو اس کی امی نے سہر کا امیر گھرانہ کا سن کر سختی سے منع کردیا ۔ یہ کہہ کر کہ وہ اس گھر کہ قابل نہیں ہیں ۔ ایک لڑکی کہ لئے وہ اپنے ماں باپ کا دل دُکھا کر اپنا گھر نا بسائے۔ نا ہی ان سے رشتہ ٹورے ۔ امجد حیران بھی تھا کہ امی نے تواپنی حیثیت کہ مطابق سہی سوچا لیکن میں نے تو ایک امیر گھرانہ کی لڑکی سے اپنے تعلق بنا سوچے سجھے بنا لئے۔
    کیا آج اس موڑ پرسہر میرا ساتھ دیں گی۔۔۔۔۔۔؟ کیا اس چھوٹے سے گھر میں وہ میرا ساتھ رہ سکے گی۔۔۔؟ امجد نے ایک حامی بھری کہ امی کو کیسے منائے اور سہر سے اپنی ماں کی خدمت اور خیال رکھنے کا کہے جو امی نے خوشبو کہ لئے کہا گر وہی سہر کریں تو پھر سب ٹھیک ہوجائے گا۔ اور رات بھر اس پریشانی میں کھویا رہا کہ جو رشتہ ماں باپ سے ہیں وہ بھول کر توڑ کروہ کیسے رہے پائےگا ۔۔۔ سہر کی محبت بھی تو اس کی زندگی تھی ۔۔۔ اب امی کی جان سے بڑھ کر تو اسے سہر کی محبت نہیں ہوسکتی تھی ۔ اس نے سہر کو صبح صبح فون کرکے سب بتا دیا ۔ سہر نے اسے اپنے رشتے کی حامی بھری اور کہا کہ وہ اپنے ماں باپ کی خاطر قطع تعلق نا کریں ۔ جب امجد نے کہا کہ وہ اس کہ چھوٹے سے گھر میں وہ رہ پائنگی ۔ اس کی بیمار ماں کی خدمت کرے گی ۔۔۔؟ اور اس کہ لاچار باپ کا خیال رکھیں گی۔۔۔۔؟ تو وہ اس کی امی کو منائے گا کچھ بھی کرکے۔ لیکن سہر کہ جواب نے ایک پل میں امجد کو توڑ دیا کہ یہ رشتہ سہرسے کتنا کمزور ہیں۔ جب سہر نے کہا تمہاری ماں کو کوئی نوکرانی چاہئے بہو نہیں ۔۔ امجد کو سہر کہ اس جواب کی امید نا تھی ۔

    امجد نے کہا اس سے میری ماں بیمار ہے اگر وہ اپنی بہو سے خدمت کی امید نا رکھیں تو کس سے رکھیں ۔؟ ایکلوتاسہارا تو میں ہی ہوں ۔ سہر نے امجد سے صاف صاف کہا کہ وہ اپنے ماں باپ چھوڑ کر اس کہ ساتھ رہے، کیونکہ سہر کہ گھر والے بھی یہی چاہتے ہیں ۔ امجد گھر داماد بن کہ رہے گر اسے اس سے پیار ہے تو وہ انھیں چھوڑ کر آجائیے ۔ لیکن وہ اس میڈل کلاس گھر میں نوکرانی کی جگہ لینا نہیں چاہتی ۔۔۔ امجد کو شدید دکھ ہوا کہ وہ کیسے اپنے ماں باپ کو چھوڑ کر جائے وہ بھی اس حال میں ماں باپ کا رشتہ دنیا اور آخرت کہ لئے بھی دل کی خوشی اور اللہ کی رضا دیگا ۔ ایک ایسی لڑکی جو اپنے ہی گھر کہ کام کرنے کو نوکرانی سمجھے ۔ اور اپنے فرض کو کام والی کا خطاب دیں ۔سہر اس کہ قابل ہی نہیں ہیں ۔ اس نے سہر سے قطع تعلق کرلیا ہمیشہ کہ لئے اور اس نے اپنی ماں کی خوشی کہ لئے اس غریب لڑکی سے شادی کرلی اور اپنے قیمتی اور عظیم رشتے کو توٹنےسے بچا لیا۔۔۔۔


  5. #5
    Join Date
    Jul 2010
    Location
    Wah cantt
    Age
    25
    Posts
    2,155
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    3 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    21474846

    Default Re: Lafz Kahani (Tehreeri Muqabla: Pre-Quarter Final 1)

    Quote Originally Posted by Cute Ruba View Post

    Zindagi taiz rawi sey guzrey jaa rahi hai,,,saal din aur din ghanton k hisab sey guzarney lagey hain..Aur is taiz raftaar zindagi main hum apney rishton ko bohat peechey chor detey hain...kuch samjh nahi aata k taqdeer hamen kahan aur kis taraf ley jaarahi hai... phir aik waqt aisa aata hai jub Insan pey ye raaz aashna hota hai k jis raah pe wo umer bhar apni manzil ko paaney k liye chalta raha wo raasta dar'asal aik khaar gaah hai aur manzil tou phir door door tak kahiin nazar nahi aati... Usi manzil ko paney ki dour main insan apney rishtey gunwa deta hai.. wo rishtey jo parwardigaar ney uske liye banaye hain ta k wo achey aur burey waqton main un rishton ka sahara ley sakey magar jub apka acha waqt chalta hai tou ye rishtey apko apney aas paas hanstey boltey nazar aatey hain aur jub kathin waqt aatey hain tou door door tak koi talluq nibhaney wala nahi dikhta.... Insaniyat rishton ko paison k tarazon main toulna shuru kardiya hai aur yahi hamari sub sey bari bewakofi hai...
    Aaj kal kon sey aise bhai hain jo apas main bohat pyar sey rehtey hain.. Wo jo sub k sub ghareeb hain ya phir bhai jo khandani ameer hain.. Jahan jahan 2 bhaiyon main ya 2 khandano main tabkati fark aata hai wahan apke apney ap se mun mourtey dikhai detey hain aur hairat hoti hai ye jaan ker k unhi khoni rishton sey (jin k sath aap paley barhey hain) apka milna julna bohat he mukhtasir hojata hai aur rafta rafta khatam hojata hai kyun k hum dunya ki chamak main itna gum hojatey hain k hamen yaad he nahi rehti ye baat

    "Rishta Qata krney wala jannat me nahi jai ga." BUKHARI-O-MUSLIM

    Hamen Allah pak sey dua karni chahiye k hamarey rishton ko buri nazar aur burey khayalaat sey bachaye ta k hum gunah k rastey pe kabhi gamzan na hon. Ameen


    Quote Originally Posted by Bilal Azam View Post

    زندگی میں بعض لوگوں کے ہونے یا نہ ہونے سے بہت فرق پڑتا ہے۔ جنہیں ہم نہیں چاہتے اگر وہ ہمارے پاس نہ بھی ہوں تو بھی ہم مطمئن ہوتے ہیں لیکن جنہیں ہم دل میں جگہ دیتے ہیں وہ اگر ہمارے پاس ہوں تب دل مطمئن بھی ہوتا ہے اور ان کی جدائی کا ڈر بھی ہوتا ہے۔ اگر ایسے لوگ زندگی کے سفر میں ہمارے ہم سفر نہ بنیں تو زندگی تو تب بھی گزر جاتی ہے مگر اک کسک کے ساتھ۔ ایک درد جو دل میں اٹھتا ہے وہ تا عمر رہتا ہے۔ اس درد کا ایک علاج ہے اور وہ یہ کہ جنہیں ہم چاہتے ہیں وہ ہمیں مل جائیں، یہ چیز گرمیِ محبت کہلاتی ہے۔ اس کا دائرہ بہت وسیع ہے ہے۔ اس میں ماں باپ، بہن بھائی، بیٹا بیٹی، شوہر بیوی، دوست رشتہ دار مختصر ہر کوئی شامل ہوتا ہے۔ یہ کبھی جاندار اشیاء سے ہوتی ہے تو کبھی بے جان سے۔
    جیسے بعض لوگوں کو اپنے کمرے کے علاوہ کہیں اور نیند نہیں آتی اسی طرح بعض لوگوں کی قسمت ان کے ماں باپ کی دعاؤں پر ہوتی ہے۔ یہی زندگی ہے اور زندگی رشتوں سے مل کر با معنی ہوتی ہے ورنہ وہ بے معنی زندگی کہلاتی ہے۔اختتام دونوں قسم کی زندگی کو ہے مگر بامعنی، جس کی بارش میں رشتوں کی مٹی مہکتی ہے، وہ اختتامِ سفر کے بعد بھی با معنی ہوتی ہے۔ رشتے زندگی کو گردِ سفر نہیں بننے دیتے بلکہ یہ زندگی کو بعد میں
    yeh tehreer thek hay kia kyn k likhni tu kahani hay na ?

  6. #6
    Join Date
    Mar 2010
    Location
    karachi
    Age
    28
    Posts
    997
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    45 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    21474844

    Default Re: Lafz Kahani (Tehreeri Muqabla: Pre-Quarter Final 1)

    PEHLA AUR AAKHIRI SAJDA

    Raat ki is tareeki main aaj wo apni sochon main bohat dor nikal aaya tha...Kya kiya tha us ney aaj tak...??? Kahan gunwa aaya wo apni zindagi.. Apney rishtey..Apni umar k 35 saal zaya karney ka usey ahsas kyun na huwa kabhi...??? Is andheri raat main aaj usey ye ahsas kis ney bakhsha tha...??? Kyun aaj wo apni zindagi ka muhasiba kar raha tha...???

    Wo to un logon main sey tha jo pyar k naam par faraib kartey hain, Apney rishtey khud apne hathon gunwa detey hain...Kisi ki izzat karna goya apney nafs ki beizzati samajhtey hain isiliye apney "MAA" "BAAP" ko bhi paon ki joti sey ziyada ahmiyat nahi di aur na kisi rishtey ka ahtiram kiya tha.
    Wohi "MAA""BAAP" jinho ney apne iklotey betey par apni zindagi bhar ki kamai vaar di thi aur usi betey ney unhey jeetey jee maar dala tha...
    Aaj ki raat khouf sey uska dil kanp raha tha...Usey apne Waldain ki yaad aarahi thi.. jo us sey bohat dor jaa chukey they...Kya reh gaya tha aaj uske paas...???Wohi "Khouf" aur "Tanhai" jis sey wo zindagi bhar bhagta aaya tha magar zindagi ke paintisveen(35veen) saal ki is raat ney usey ahsas dilaya k wo aakhir hai kya cheez.

    Magar aaj usey apney gunahon ka ahsas horaha tha aur ye ahsas dilaney wali bhi Wohi "PAK" Hasti thi jo apney bandon sey aik pal k liye bhi ghafil nahi hoti...Aanson tawatur sey uske Rukhsaron pey beh rahey they...wo bohat sharminda tha khod sey,Apney Maa Baap sey aur Apney RUb sey jin sey us ne khud apna ta'lluq toor dala tha.

    Wo utha aur wazu kiya..aj wo apni zindagi main pehli baar apney Rub k samney sar basujood honey jaa raha tha intehai nidamat k sath aur is umeed k saath k Allah aur bandey ka risht har rishtey sey mazbut hai aur wo usey zarur maafi bakhshey ga...Magar apni zindagi k is Pehley Sajdey main jakr wo uthna bhool gaya tha....Kitna sukoon tha is sajdey main ("Is rishtey main") jis se aaj tak us ney khod ko mehrom rakha...Aanson they jo rukney ka naam nahi ley rahey they yahan tak k uska "Pehla Sajda" uski zinagi ka "Akhiri Sajda" ban gaya....
    Shayad wo itna sharminda tha k usey kisi bhi qeemat par uthna gawara na tha. Apney Allah ki rehmaton sey pur umeed hoker us ney apni ruuh Apne Parwardigaar k supurd kardi.

    (Nosh)






    idamg0 - Lafz Kahani (Tehreeri Muqabla: Pre-Quarter Final 1)

  7. #7
    Join Date
    Nov 2011
    Location
    Sahiwal
    Posts
    288
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    9 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    7

    Default Re: Lafz Kahani (Tehreeri Muqabla: Pre-Quarter Final 1)

    ایک رشتہ
    علی آج پورے ایک ماہ ہاسٹل سے گھر آیا تھا مگر گھر میں ایک اندوہناک خبر اس کی منتظر تھی۔
    "تمہارے بڑے ماموں کا انتقال ہو گیا ہے۔" امی نے روتے ہوئے کہااور وہ غم اور پریشانی سے امی کو دیکھتا رہ گیا کہ بڑے ماموں تو بھلے چنگے تھے تو پھر یہ سب اچانک کیسے۔مگر اس نے عقل سے کام لیتے ہوئے اور گھرر کے حالات کو مد نظر رکھتے ہوئے فوراََ یہ سوال کیا:
    "ابو کدھر ہیں؟"
    "وہ باہر گئے ہوئے ہیں۔"
    "وہ جا رہے ہیں۔"
    "نہیں۔ وہ نہیں جا رہے۔"
    "مگر انہیں جانا چاہیے ہے۔"
    ابھی یہ باتیں ہو ہی رہیں تھیں کہ ڈور بیل بجی اور ابو اندر داخل ہوئے۔ علی نے سلام لینے کے بعد فوراََ پہلا سوال ہی ان سے یہ کیا:"ابو آپ کو پتہ ہے نا کہ بڑے ماموں فوت ہو گئے ہیں اور آپ اب بھی نہیں جا رہے ہیں۔ آپ کا جانا بنتا ہے اور یہی صحیح ہے۔"
    "اب تم مجھے مت سکھاؤ کہ کیا صحیح ہے اور کیا غلط۔تم سب کچھ جانتے ہوئے بھی یہ بات کہہ رہے ہو، مجھے تم سے یہ امید ہر گز نہ تھی۔"
    "ابو میں صرف اتنا جانتا ہوں کہ نبی کریم ؐ نے فرمایا ہے کہ ایک مسلمان کا دوسرے مسلمان پہ ایک حق یہ بھی ہے کہ جب وہ فوت ہو جائے تو اس کے جنازے میں شریک ہو۔ اور۔۔۔"
    علی نے اپنی بات مکمل نہیں کی تھی کہ اس نے ابو کے بڑھتے ہوئے قدموں کو دیکھا اور ابو کے الفاظ علی کی سماعتوں سے ٹکرائے "ہم سب جا رہے ہیں اور ہمیں اب ان کے لئے دعائے مغفرت کرنی چاہیے۔ اللہ پاک ان کو جنت الفردوس میں جگہ دے، ان کو کروٹ کروٹ جنت نصیب فرمائے۔"
    "آمین!" سب نے کہا۔
    گاڑی میں بیٹھا علی سوچ رہا تھا کہ بڑے ماموں کی وفات کے بعد جو دو گھرانے اکٹھے ہو رہے ہیں اگر یہ سب بڑے ماموں کی زندگی میں ہو جاتا تو شاید ان کی زندگی کے چند دن مزید بڑھ جاتے۔ یہ رشتے بھی کیسی جادؤئی سی چیز ہیں، پل بھر میں بکھر جاتے ہیں تو دیکھتے دیکھتے ایسے مضبوط ہو جاتے ہیں کہ کچھ ہوا ہی نہیں تھا جیسے۔ اور علی کے آنسو اس کا دامن بھگونے لگے۔
    (محمد بلال اعظم)


  8. #8
    Join Date
    Sep 2011
    Location
    Jadoo Nagri
    Posts
    19,713
    Mentioned
    198 Post(s)
    Tagged
    8340 Thread(s)
    Thanked
    10
    Rep Power
    21474862

    Default Re: Lafz Kahani (Tehreeri Muqabla: Pre-Quarter Final 1)

    ذرا سوچئے
    آج نہ جانے کیوں میں سب کو یاد کر رہی ہوں وہ لوگ جو ماضی میں میرے ساتھ تھے میرے اپنے شادی سے پہلے کے میرے رشتےدار۔کیسی عجیب بات ہے نہ ایک شادی کیا ہوی رشتوں کی نوعیت ہی بدل گئ وہ پہلی سی بے تکلفی ناجانے کہاں مفقوذ ہوگئ اب تو بس ہر چیز شوہر کے مزاج کے مطابق کرنی پڑتی ہے۔اس سے ملو اس سے نہ ملوتمہارا فلاں رشتے دار ایسا اور اس نے مجھے ایسے دیکھا یا اس نے مجھے ایسے کہا۔میں سوچ رہی ہوں مرد ہمیشہ کجی یا خامی بیوی کے رشتہ داروں میں کیوں دیکھتے ہیں؟ وہ بھی تو شوہر کے رشتے داروں کواپناتی ہے ان کا بھلا برا سنتی ہے ایسا کیوں ہے؟وہ کیوں نہیں اپنے شوہر پر پابندی لگا سکتی کہ تمہارے رشتہ دار نے بھی تو مجھے برا کہا ہے تم بھی نہ ملو۔لیکن نہیں ایسا نہیں ہوسکتا کیوں کہ ہم مردوں کے معاشرے میں رہ رہے ہیں جو بس اپنی چلانا جانتے ہیں سوچنے کی بات ہے کہ جو تعلق عورت کا شوہر کے رشتے داروں سے ہے وہی تعلق مرد کا بھی بیوی کے رشتے داروں سے ہے پھر یہ تقسیم کیوں؟ایسا کس حدیث میں لکھا ہے کہ شادی کے بعد عورت کا اپنے رشتہ داروں سے تعلق ختم ہوجاتا ہے۔میں آپ لوگوں سے پوچھنا چاہتی ہوں کہ آپ کے گھر میں بھی بیٹی بہن ہوگی ان پر رکھ کے سوچیئے؟؟کیا آپ کو اچھا لگے گا؟نہیں نہ!تو جو بات آپ کو اپنی لیے سہی نہیں لگتی وہ اپنی بیویوں کی لیے کیسے سہی لگ جاتی ہے؟کیا تعلق اور رشتے داری نبھانا صرف عورت کا کام ہے؟ہمارے مزہب میں کہیں ایسی مثال نہیں ملتی تو آپ لوگ ایسا کیوں کرتے ہیں اور ایسا کیوں ہونے دیتے ہیں؟کیا آپ لوگ واقعی مسلمان ہیں دین اسلام پر چلنے والے؟ میری آپ لوگوں سے درخواست ہے اپنی سوچ بدلیے اس سے رشتے اور مضبوط ہوں گے اور عورت کو بھی یہ فخر حاصل رہے گا کہ اس کی ذات اور اس سے وابستہ لوگ بھی اہم ہیں۔


  9. #9
    Join Date
    May 2008
    Location
    Karachi
    Age
    34
    Posts
    8,519
    Mentioned
    6 Post(s)
    Tagged
    274 Thread(s)
    Thanked
    1
    Rep Power
    21474854

    Default Re: Lafz Kahani (Tehreeri Muqabla: Pre-Quarter Final 1)

    مجھے اپنی ذات سے وابستہ ہر رشتے کو خوبصورتی سے نبھاتی آئ ہوں ۔۔۔۔۔ میں اچھی طرح جانتی ہوں کہ رشتوں کو نبھانے کے لئے اپنی مرضی ، اپنا آپ قربان کرنا پڑتا ہے تب جا کر رشتوں میں مضبوطی آتی ہے۔۔۔۔۔ مجھ سے سب خوش تھے اور میں بہت مطمئن بھی ۔۔۔۔۔ پھر مجھ پر آگاہی کا در کھلا اور میں نے جانا کہ مجھ سے دنیاوی رشے تو خوش ہیں مگر میں نے اللہ کو خوش کرنے کے لئے کیا کیا؟ یہ لمحات مجھ پر بجلی بن کر گرے اور میں مقناطیسی کیفیت میں وضو کر کے نماز دو رکعت ادا کی اور پھر اس رات میںپھوٹ پھوٹ کر روئ ، اللہ سے ہدایت مانگتی رہی ، اپنے اللہ سے رشتے کو دائمی کرنے کی درخواست کرتی گئ ، جب فجر کی اذانیں ہوئیں تو مجھے ہوش آیا۔۔۔۔۔ مجھے لگا اللہ نے میری درخواست کو منظور کر لیا ہے۔۔۔ اور پھر فجر کی اذان پڑھ کر تلاوتِ قرآن پڑھ کر جو سرور مجھے حاصل ہوا میں لفظوں میں بیان نہیں کر سکتی ۔۔۔۔

    اب میں خود کو پر سکون محسوس کرتی ہوں کیوں کہ میرا تعلق میرے خالق حقیقی سے جڑ گیا ہے ۔۔۔ میں اللہ سے ہدایت ، توبہ خیر و بھلائ اپنے اور امت مسلمہ کے لئے مانگتی ہوں۔۔۔۔۔ دعا ہے کہ اللہ ہم سب کو سچی اور نیک ہدائت نصیب کرے ، اور اللہ سے محبت کا ، ڈر کا تعلق ہمیشہ جڑا رہے ، کیوں کہ ایمان کی دولت نصیب ہونا بڑے ہی کرم کی بات ہے

    2dnmmf - Lafz Kahani (Tehreeri Muqabla: Pre-Quarter Final 1)

  10. #10
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    Canada
    Posts
    25,300
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    442 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    11381699

    Default Re: Lafz Kahani (Tehreeri Muqabla: Pre-Quarter Final 1)

    تعلق۔ ایک رشتہ، ایک بندھن۔ ایک وعدہ جو ایک انسان کو دوسرے انسان سے جوڑتا ہے۔ اللہ تعالیٰ نے دنیا میں ہر چیز کا جوڑا بنایا ہے۔ اس لئے، کوئی بھی چیز ایک دوسرے کے سہارے اور اس کے ساتھ تعلق جوڑے بغیر ادھوری ہے۔
    ہم اپنے سے جڑے لوگوں، رشتوں، بندھنوں اور وعدوں سے تو جیسے تیسے نبھا کر ہی رہے ہیں۔ مگر ہم ایک ایسے دین کے پیروکار ہیں، جس میں انسانیت سے محبت اور انسانیت کی خدمت ہمارے اولین فرائض میں شامل ہے، اور جب ہم اس سے روگردانی کرتے ہیں تو ہم اپنے خالق اور مالک کو ناراض کر دیتے ہیں۔ اللہ تعالیٰ ہمیں حکم دیتے ہیں کہ اگر مجھ سے محبت کرتے ہو تو میرے بندوں سے محبت کرو۔ اگر مجھ تک پہنچنا چاہتے ہو تو میرے بندوں کے ذریعے پہنچو۔
    ہمیں اپنے تعلق کو اللہ تعالیٰ سے مضبوط کرنے کے لئے، اس کے بندوں سے تعلق مضبوط کرنا ہو گا۔ ہمیں انسانوں کے کام آنا ہو گا۔ ہمیں ضرورت مندوں کی ضرورتیں پوری کرنی ہونگی۔ ہمیں محبت اور خدمت کی سیٹھری چھڑھنی ہوگی، تاکے ہم اپنے تعلق کو اللہ تعالیٰ سے مضبوط کر سکیں اور انسانینت کے رشتے کو سمجھ سکیں اور اسے نبھا سکیں۔

Page 1 of 2 12 LastLast

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •