نواز لیگ اور تحریک انصاف مل کر بھی ہمارا مقابلہ نہیں کر سکتے، وزیر اعظم

وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی نےکہا ہے کہ نواز لیگ ضمنی الیکشن بھی نہیں جیت سکتی، آمریت سے ٹکرانے کے وقت نوازشریف خاندان سمیت بھاگ گئے، وہ آمروں سےسمجھوتے کا ریکارڈ رکھتے ہیں۔

لاہور میں لاہور پریس کلب کے عہدیداروں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ اگر مسلم لیگ (ن) اور عمران خان اکھٹے ہو کر بھی الیکشن لڑیں تو ہم ان کا مقابلہ کرنے کی پوزیشن میں ہیں۔ میاں نواز شریف آمر سے ٹکرانے کی بجائے معاہدہ کر کے ملک سے باہر چلے گئے تھے یہ گیلانیوں اور زرداریوں سے کیا ٹکرائیں گے۔ ان کا کہنا تھا یہ خود کو مہران بینک کیس سے بچانے کے لیے عدلیہ کی حمایت میں تحریک کا ڈھونگ رچا رہے ہیں۔ وزیر اعظم نے کہا کہ ٹیکسلا جیسی چھوٹی چھوٹی جلسیاں وزیر اعظم کے بچے اکیلے ہی کر سکتے ہیں۔ مسلم لیگ (ن) میں ہمت ہے تو اسمبلیوں سے استعفے دے جب ان نشستوں پر ضمنی الیکشن ہوئے تو انھیں اپنی حثیت کا پتہ چل جائے گا، گو گیلانی گو کی تحریک کے پیچھے اب بھی نشانہ صدر آصف علی زرداری ہیں۔ وزیر اعظم نے کہا کہ توہین عدالت کیس کا تفصیلی فیصلہ آنے کے بعد وہ اپیل کریں گے اور اس کے بعد اسپیکر قومی اسمبلی ان کے مستقبل کا فیصلہ کریں گی۔ وزیر اعظم نے کہا کہ نواز شریف اور شہباز شریف اعتراف جرم کر کے ملک سے باہر گئے، طیارہ اغوا کیس میں نوسال سزا یافتہ رہنے کے بعد نواز شریف نے اخلاقی طور پر سیاست کیوں نہیں چھوڑی۔