کراچي… آمن کي آشا کے ثمرات ابتدائي مراحل ميں نظر آنا شروع ہو گئے ہيں. رواں مالي سال کے پہلے 10 ماہ ميں پاکستان سے بھارت کوسيمنٹ برآمد ميں15 في صد اضافہ ديکھا گيا. اعدادوشمار کے مطابق، رواں مالي سال جولائي تا اپريل، پاکستان سے بھارت کو کي جانے والي سيمنٹ برآمدات کا حجم 5 لاکھ ٹن رہا جو گزشتہ سال اسي عرصے کے مقابلے ميں 15في صد زيادہ ہے. صرف اپريل کے مہينے ميں بھارت کو 1 لاکھ ٹن سيمنٹ برآمد کي گئي، جو گزشتہ سال اپريل کے مقابلے ميں 52 في صد زيادہ ہے. بھارتي بلڈزر کے مطابق اس وقت مشرقي بھارت ميں تعميراتي سرگرمياں عروج پر ہيں. بھارت ميں زيادہ تر سيمنٹ فيکٹرياں مغربي حصے ميں ہونے کے باعث،انھيں پاکستاني سيمنٹ کا في سستي پڑتي ہے، اور اسي وجہ سے وہ پاکستان سے سيمنٹ خريدنے کو ترجيح دے رہے ہيں