Results 1 to 2 of 2

Thread: خلیل جبران کی مار!حرف سادہ…… ہمراز احسن

  1. #1
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    ♥ ♥ ChaAnd K paAr♥ ♥
    Posts
    41,780
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    1314 Thread(s)
    Thanked
    2
    Rep Power
    21474887

    Default خلیل جبران کی مار!حرف سادہ…… ہمراز احسن

    ’غلامی کی مجبوریوں سے آزادی کی ذمہ داریوں کا بوجھ کہیں بھاری ہوتا ہے‘۔ معاف کیجئے گا یہ جملہ لبنان نژاد امریکی مصنف خلیل جبران کا نہیں بلکہ میں نے بقلم خود تحریر کیا ہے۔ خدا کو حاضر ناظر جان کر حلف اٹھانے کو تیار ہوں کہ میں نے میٹرک کے بعدخلیل جبران کو نہیں پڑھا۔ میری نوعمری میں خلیل جبران نوجوان لڑکے لڑکیوں میں اتنا ہی مقبول تھا جتنا کہ بعد میں ہمارے شاعر احمد فراز ہوئے اور آج کل ہمارے سیاستدان عمران خان ہیں حالانکہ خان صاحب نے لکھا کم ہے اور بولا زیادہ ہے۔ کتابیں اُن دنوں سستی تھیں اور پبلشرز محمد حنیف رامے جیسے نہ صرف ڈیل کارینگی کی کتابیں چھاپتے تھے بلکہ خود بھی اپنی کتابوں میں لوگوں کو ’جینے کا سلیقہ‘ سکھانے کی کوشش کرتے تھے۔ مارکیٹ میں خلیل جبران کی کتابوں کے اردو تراجم کی بھر مار تھی اور مجھے آوارہ گردی کے علاوہ کتابیں پڑھنے کا بھی شوق تھا۔ لیکن مجھے اعتراف کرنے دیجئے کہ میں نے چڑھتی جوانی میں اپنے اور اپنے قریبی دوستوں کے لئے جو محبت نامے لکھے اُن میں خلیل جبران کے جملوں سے کافی استفادہ کیا۔ نقل کے لیے جس عقل یا توڑ مروڑ کر جملے کو کچھ کا کچھ بنا دینے کی جو تخلیقی صلاحیت درکار ہوتی ہے وہ مجھ میں بدرجہ اتم موجود تھی۔ بس افسوس یہ ہے کہ میں نے اپنی اِن صلاحتیتوں کو استعمال نہیں کیا ورنہ وطن سے ہزاروں میل، معاف کیجئے گا، ہزاروں کلومیٹر دور گوشہ نشینی میں بیٹھا یہ کالم نہ لکھ رہا ہوتا بلکہ میر ے یار بھی زندہ ہوتے اور اُن کی صحبت میں میں بھی خوش وخرم! مجھے اپنے وسیع کاروبارِ زندگی سے فرصت ہی نہ ہوتی کہ میں وزیر اعظم سیدیوسف رضا گیلانی کے خلاف سپریم کورٹ کے سات رکنی بنچ کے مختصر یا مفصل فیصلے کے بارے میں سوچ سکتا اور اس بات پر خوش ہو سکتا کہ چلو اپنے ہاں کہیں تو اتفاق رائے پایا جاتا ہے اور اعلیٰ عدلیہ جب سے آزاد ہوئی ہے، متفقہ فیصلے ہی کر رہی ہے۔ اب ڈھلتی عمر میں پچھتائے کیا ہوت۔ مجھے اپنی جوانی پڑھنے، پڑھانے اور لکھنے، لکھانے جیسے فضول اور غیر پیداواری کاموں میں ’ضائع‘ کرنے کی سزا تو ملے گی۔ سپریم کورٹ کے مذکورہ متفقہ فیصلہ کے ساتھ ایک عزت مآب جج صاحب نے چھ سات صفحات کا جو اضافی نوٹ لکھا ہے اور اُس میں خلیل جبران کی جو نظم درج کی ہے اُس نے میرا تو حشر کر دیا ہے اور مجھے خلیل جبران کے سر پر لکھے گئے وہ سب محبت نامے یاد آ رہے ہیں جن کا جواب محبت ناموں کی بجائے دیگر متشدد یا ناقابلِ قبول صورتوں میں موصول ہوا۔ میرے تو جوانی کے سارے زخم ہرے ہو گئے ہیں جسے اُس اضافی نوٹ کا collateral damage بھی کہا جا سکتا ہے لیکن ڈر لگتا ہے کہ ایسا کہنے سے کہیں میں بھی مضر ضمنی اثرات کی زد میں نہ آ جاؤں۔ میں نے چھٹی جماعت میں فارسی کی کتاب میں محاورہ پڑھا تھا کہ ’رکھی ہوئی چیز کام آتی ہے خواہ وہ سانپ کا زہر ہی کیوں نہ ہو‘۔ ہم نے اپنے زمانہ صحافت میں کئی مارشل لاء بھگتائے ہیں اوربچ بچا کر بات کہنے اور مچھلی کی طرح ہاتھ سے نکل جانے کی جو تربیت اور تجربہ حاصل کیا وہ آج ہمیں کام آ رہا ہے۔ بنگالیوں سے ہم اس لئے مات کھا گئے کہ انہیں ہاتھ سے مچھلی پکڑنے کاصدیوں پرانا فن آتا تھا۔ خلیل جبران کی سب سے مشہور کتاب تو ’پیغمبر‘ہے لیکن وہ نثری دانش کی کتاب ہے۔ ایسے اہم فیصلے کا حصہ بننے والی نظم یا تو ’ارضی دیوتا‘ یا پھر اُس کی کسی اور کتاب سے لی گئی ہو گی۔ ٹی وی کے ٹکرز پر اُس کا جو ترجمہ چل رہا تھا وہ قانونی لحاظ سے درست ہو سکتا ہے کہ لفظی تھا لیکن لفظی ترجمے میں شاعری کی روح مر جاتی ہے۔ پاکستان کو ایسے ایسے تخلیقی تحفے میسر ہیں کہ وہ خلیل جبران کی اس نظم کا ایسا ترجمہ و تشریح کریں کہ مصنف قبر سے اُٹھ کر قسمیں کھاتا مر جائے کہ خدا قسم میرا یہ مطلب نہیں تھا۔ میں زندہ ہوتا تب بھی دوہری شہریت کے قانون کے مطابق کبھی پاکستان کی سیاست کے قریب نہیں پھٹک سکتا تھا۔ اضافی نوٹ نے نوعمری کا جو زمانہ یاد دلایا وہ اس قدر سہانا تھا کہ ’دشمنوں کے درمیان شام‘ گذارنے والوں کے پاس بھی اگلے روز دوستوں کو لعن طعن، غصہ اور نفرت کے بغیر بتانے کیلئے بہت سی باتیں ہوتی تھیں۔ فیض صاحب نے اپنی ایک دکنی غزل میں ایسی ہی شاموں کا قصہ کچھ یو ں بیان کیا ہے کہ؛
    تھی یاروں کی بہتات تو ہم اغیار سے بھی بیزار نہ تھے
    جب مِل بیٹھے تو دشمن کا بھی ساتھ گوارا گزرے تھا!!


    *~*~*~*ღ*~*~*~**~*~*~*ღ*~*~*~*

    2m4ccw6 - خلیل جبران کی مار!حرف سادہ…… ہمراز احسن

    *~*~*~*ღ*~*~*~**~*~*~*ღ*~*~*~*

  2. #2
    Join Date
    May 2012
    Location
    Karachi
    Age
    33
    Posts
    607
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    6

    Default Re: خلیل جبران کی مار!حرف سادہ…… ہمراز احسن

    superb

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •