Results 1 to 4 of 4

Thread: شہر دل، ڈھونڈ رہی ہیں گلیاں

  1. #1
    Join Date
    May 2012
    Location
    lhr
    Age
    34
    Posts
    227
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    188 Thread(s)
    Thanked
    1
    Rep Power
    6

    Default شہر دل، ڈھونڈ رہی ہیں گلیاں

    شہر دل، ڈھونڈ رہی ہیں گلیاں
    زُلف کی چال چلی ہیں گلیاں
    بند دروازے مجلد ناول
    داستانوں سے بھری ہیں گلیاں
    کمرے ، دروازے ، دریچے خاموش
    چلمنیں تاک رہی ہیں گلیاں
    کالی مہرون سے بھرا خط پا کر
    سسکیاں بھرتی رہی ہیں گلیاں
    ایک لمحے کو ٹھہر جانے دو
    مجھ کو پہچان رہی ہیں گلیاں
    رات شبنم گری کچھ حد سے سِوا
    یا بہت روتی رہی ہیں گلیاں
    کون آتا ہے یہاں کس کے لیے
    سب کو پہچان گئی ہیں گلیاں
    میرے ہاتھوں کی لکیروں کی طرح
    آسماں پر بھی بچھی ہیں گلیاں
    بہتے آنسو ترے دامن کی طرف
    شہر کی سمت چلی ہیں گَلیاں
    ان میں مِل جاتے ہیں بھولے بچھڑے
    دل میں ایسی بھی کئی ہیں گلیاں
    بد رتاریخ کے صفحوں میں نہیں
    میری آنکھوں میں بسی ہیں گلیاں
    Merey jaisi aankhon walay jab Sahil per aatay hain
    lehrain shor machati hain, lo aaj samandar doob gaya

  2. #2
    Join Date
    Aug 2010
    Location
    wah cantt
    Posts
    53
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    0

    Default Re: شہر دل، ڈھونڈ رہی ہیں گلیاں

    بد رتاریخ کے صفحوں میں نہیں
    میری آنکھوں میں بسی ہیں گلیاں
    beautiful..

  3. #3
    Join Date
    Feb 2009
    Location
    City Of Light
    Posts
    26,767
    Mentioned
    144 Post(s)
    Tagged
    10310 Thread(s)
    Thanked
    5
    Rep Power
    21474871

    Default Re: شہر دل، ڈھونڈ رہی ہیں گلیاں

    nice



    3297731y763i7owcz zps9ed156a3 - شہر دل، ڈھونڈ رہی ہیں گلیاں

    MAY OUR COUNTRY PROGRESS IN EVERYWHERE AND IN EVERYTHING SO THAT THE WHOLE WORLD SHOULD HAVE PROUD ON US
    PAKISTAN ZINDABAD











  4. #4
    Join Date
    Jun 2010
    Location
    Jatoi
    Posts
    59,925
    Mentioned
    201 Post(s)
    Tagged
    9827 Thread(s)
    Thanked
    6
    Rep Power
    21474903

    Default Re: شہر دل، ڈھونڈ رہی ہیں گلیاں

    nyc





    تیری انگلیاں میرے جسم میںیونہی لمس بن کے گڑی رہیں
    کف کوزه گر میری مان لےمجھے چاک سے نہ اتارنا

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •