Results 1 to 9 of 9

Thread: postgraduate doctor

  1. #1
    Join Date
    Jun 2012
    Location
    hyderabad
    Age
    33
    Posts
    2
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    0

    Thumbs up postgraduate doctor


    پوسٹ گریجوئٹ ڈاکٹر
    مصنّف:ڈاکٹر فیضان
    صاحب ہم ایک ڈاکٹر ھیں،ایک پوسٹ گریجوٹ ڈاکٹر۔ھم ڈاکٹر سے پوسٹ گریجوئٹ ڈاکٹر کیسے بنے اس سوال کےجواب کے لیے اک پوری داستاں درکار ھے۔ تو صا حب وا قعہ یہ ھے کہ جب ھم نے اپنی میڈیکل کی تعلیم کے تمام سال بخیر و عا فیت پورے کر لیے تو ھمیں یونیورسٹی کی طر ف سے بلا آ خر ڈاکٹری کی ڈگری مل گئی۔جناب ڈاکٹری کی ڈگری کیا ملی، ہمیں توجیسے پارس پتھر مل گیا۔ ان دنوں ھمارے گھر پر عزیز و ا قارب کا تا نتا سا بن گیا تھا۔۔جسے دیکھو ھاتھ میں ھار پھول لیے ھمارے گھر چلا آ تا تھا آنے والا ھم پر ھار پھول چڑھاتا،خوب بلائیں ا تارتا،ا ور اس کارنامے پر ھمیں بھت شاباشی بھی دیتا تھا۔سچ پوچھئیے تو ان دنوں ھم بھی خود کو معاشرے کا با عزت فرد سمجھنے لگے تھے۔اس لیے سینہ پھلائے آسمان میں اڑتے پھرتے تھے۔مختصر یہ کہ راوی ان دنوں ھمارے لیے خوشی ھی خوشی اور چین ھی چین لکھ رھا تھا۔مگر ستیاناس جا ئے لوگوں کا ان سے ھماری یہ خوشی دیکھی نہ گئی۔وہ لوگ جو چند دن پھلے ھم پر ھار پھول چڑھا رھے تھے اور ھمیں شاباشی دے رھے تھے ان لوگوں کا رویہ یک دم بدل گیا۔اب جب ھم ان سے ملتے تو ان کی باتیں کچھ اس طرح کی ھوتیں۔’میاں صا حب زادے بھت ھو گیا کھیل کوداب زرا آگے پڑھنے کی سوچو۔آج کل تو گلی گلی میں ایم۔بی۔بی۔ایس ڈاکٹر بیٹھے ھیں۔بھلا اب ایم۔بی۔بی۔ایس ڈاکٹر کو پوچھتا کون ھے‘۔حاجی صاحب پر تو ھمیں بہت غصہ آیا تھا۔ جی چا ھتا تھا کہ ان کا منہ نوچ لیں۔یہ وہ صا حب ھیں جو پو رے چھ سال ھمیں یہ درس دیتے رھے کہ بیٹا چھ سال کے لیے اپنے سارے شوق پس پشت ڈال دو۔خوب دل لگا کر مہنت کرو۔اک دفع ڈاکٹر بن گئے تو اس کے بعد مزے ھی مزے ھیں۔اب ان کا بیان ھی بدل گیا تھا۔فرماتے ھیں۔۔ارے صاحب زادے بھلا ایم۔بی۔بی۔ایس کر کے بھی ٰکوئی ڈاکٹر بن جاتا ھے کیا! میاں اگر ڈاکٹر بننا ھے تو جا کر پوسٹ گریجوئیشن کرو۔جھوٹے مکار کہیں کے۔اگر ھمیں یہ حقیقت پہلے بتادی گئی ھوتی تو ھم ڈاکٹر بننے کے خیال پر ھی لعنت بھیج دیتے۔خیر صا حب ھمارے ساتھ تو خوب ھاتھ ھوا۔مگر اب پچھتا کے کرتے بھی کیا چڑیاصاحبہ تو کھیت چگ ھی چکی تھیں۔حقیقت تو یہ ہے کہ ڈاکٹر کی ڈگری پانے کے بعد تو ھم شادی کے خواب سجائے بیٹھے تھے۔ اسی لیے اک صاحبہ سے ایم۔بی۔بی۔ایس کی تعلیم کے دوران ھی ھم یہ عہد و پیماں کر چکے تھے کہ ڈاکٹری کی ڈگری ملتے ہی ہم انھیں اپنی زوجیت میں لے لینگے۔مگر حالات کو بدلتے دیکھ ھم نے بھی شادی کا ارادھ بدل دیا۔ اک روز ھم نے ان صاحبہ کو ملاقات کے لیے بلایا۔ان کے سامنے سارے حالات کھول کے رکھ دیے اور ان حالات کت پیش نظر شادی کرنے سے معذوری بھی ظاھرکر دی۔۔کچھ دیر تک تو وہ صاحبہ صبر و تحمل سے ھماری باتیں سنتی رھیں۔اور ساتھ ہی ساتھ شادی کے لیے ھمیں قائل کرنیکی بھی کوشش کرتی رھیں۔مگر ھم بضد تھے کہ اب تو ھم پہلے پوسٹ گریجوئیشن کرینگے اور تب کہیں جاکر شادی کا سوچیں گے۔ھمیں قائل ھوتا نہ دیکھ وہ حسن اخلاق کا مجسم پیکر پل بھر میں بدل گٰئی۔ خوب لعن طعن،گالم گلوچ یہاں تک کہ ھمارے ساتھ انھوں نے ھاتھا پاٰئی تک کی۔مزید تفصیل اس واقعہ کی سوائے شرمندگی کے کچھ بھی نہیں۔اس لیے لعنت بھجیئے اس قصے پر۔ تو ھم بتا رھے تھے کہ لوگوں کی باتوں سے تنگ آکر ھم نے پوسٹ گریجوئیشن کرنے کی ٹھان لی۔اک روز ھم یہ مدعا لیکر ابا حضورکے حضور پہنچے ۔ھمارے مذموم ارادے جان کر انکی تیوریاں چڑھ گئیں۔اور اپنے منہ کو وہ جتنا بسور سکتے تھے اس سے کئی زیادہ بسور لیا۔انکے نزدیک تو ھم ڈاکٹر بن چکے تھے۔اب تووہ اس انتظار میں تھے کہ صا حب زادہ کچھ کھانے کمانے کی فکر کرے۔خیر مختلف ہتھکنڈے استعمال کر کے ھم نے انھیں قائل کر ھی لیا۔ لو جی یوں ھم بن گئےایک پوسٹ گریجویٹ ڈاکٹر۔
    پوسٹ گریجٹ ڈا کٹرز کی اپنی ھی ایک دنیا ھوتی ھے۔اس دنیا میں مریضوں، بیماریوں اور کتابوں کے سوا کسی اور چیز کا تصور ڈھونڈے نہیں ملتا۔مسلسل اعصاب شکن ڈیوٹیاں کر کے پوسٹ گر یجوئیٹ ڈاکٹرز خود کسی مریض سے کم نہیں لگتے۔ کم خوراکی اور کم خوابی کی وجہ سے اکثر کے چہرے زردی ما ئل ھوتے ھیں۔ سینیئر پوسٹ گریجوئیٹ ڈاکٹرز تو حسرت و یاس کی ایسی تصویر نظر آتے ھیںِ جسے دیکھ کر اچھے بھلے موڈ کا بیڑا غرق ھو جا ئے۔اوّل اوّل تو ھم سوچتے تھے۔الہی یہ ماجرا کیا ھے۔اور جب سے یہ ماجرا سمجھ آیا ھے تب سے ھم خود اپنی صورت دیکھنے سے بھی اجتناب کرتے ھیں۔
    پوسٹ گریجویٹ ڈاکٹرز کو سرکار کی طرف سے مہانہ وظیفہ بھی ملتا ھے۔ سرکار نے یہ وظیفہ پوسٹ گریجوٹ ڈاکٹرز کی مالی مدد کے لیے مقرر کیا ھے۔ مگر یہ وظیفہ اتنا قلیل ھے کہ ھم اسے پوسٹ گریجوٹ ڈاکٹر بننے کی سزا سمجھتے ھیں۔اس قلیل وظیفے میں تو ھمارا اپنا گزارا بصد مشکل ھو پاتاھے۔اس لیے گھر پر اک پھوٹی کوڑی تک نہیں دے پاتے۔اس لیے گھر والوں کا رویہ بھی ھم پوسٹ گریجویٹ ڈاکٹرز کے ساتھ بڑا عجیب ھوتا ھے۔ھسپتال سے آکر جب ھم گھرمیں داخل ھوتے ھیں۔تو سب گھر والوں کے چہرے پر ناگواری کے تاثرات ابھر اتے ھیں۔ھمیں یوں مہسوس ھوتا جیسے وہ دل ہی دل میں کہتے ھوں۔آگیا نکھٹو کام کا نہ کاج کا دشمن اناج کا۔اول تو ھم سے کھانے کا پو چھا ھی نہین جاتا منہ سے مانگ لو تو کو شش ھوتی ھے کہ کسی طرح بلا ٹل جائے۔اور اگر بحالت مجبوری کھانا دینا پر جائے توپھر ایک حد سے ھمیں آگے بڑھنے نہیں دیا جاتا۔ کچھ روز پہلے کا ھی قصہ ھے۔ دو پہر کے کھانے کے دوران ھمارا ھاتھ جب تیسری روٹی کی طرف بڑھا تو اماں جان نے آٹے،تیل،گھی،کی بڑھتی ھوئی قیمتوں اور کم کھانے کی افادیت پر پر مغز تقریرکر ڈالی۔ لفظوں اور لہجے میں تا ثیر ایسی کہ روٹی کی طرف بڑھتا ھمارا ھاتھ بے اختیار کھنچ گیا۔ اور ھم ھاتھ اٹھا کر با آ واز بلند کھانے کے بعد کی دعا پڑھنے لگے۔
    آہ !!! صاحب آدمی کے دل پہ جب زیادہ بوجھ آن پڑے تو ایسے میں اسکو دوست احباب یاد آتے ھیں۔ھم بھی اکثر دل ھلکا کرنے کو اپنے رفقاء سے پوسٹ گریجویئٹ ڈاکٹرز کی کسمپر سی کا تذکرہ کر دیا کرتے تھے۔ پھر عجیب بات یہ ھئی کہ ھمارے رفقاء نے ھم سے ملنا ھی چھوڑ دیا۔ شاید انھوں نے بھانپ لیا تھاکہ اگر وہ ھم سے ملتے رہے تو ھم کسی روز ان سے ادھار نہ ما نگ بیٹھیں۔ سچ پوچھیے تو ھم اپنے رفقاء کی دور اندیشی کے دل سے قائل ھوگئے ھیں۔
    اک روز اس کسمپرسی کے ھاتھوں تنگ آکر ھم اپنے ساتھی ڈاکٹرز کے ساتھ سڑکوں پر نکل آئے۔سرکار کے خلاف خوب نعرے بازی کی اور اپنے وظیفے میں اضافے کا مطالبہ کیا۔جواباً
    پولیس کی مدد سے سرکار نے ھماری وہ خدمت کی کہ اب احتجاج کے نام سے ھی طبعیت گھبرانے لگتی ھے۔
    سڑکوں پر سرکار اور ھسپتالوں میں عوام اپنے مسیحاؤں کی وہ خدمت کرتی ھے کہ ڈھارے مار مار کے رونے کا جی چا ھتا ھے۔اب زرا یہ ھسپتال کا قصہ بھی سنیئے۔اک دن کیا ھئا کہ وارڈ میں داخل ایک عمر رسیدہ مریض کی حالت انتھائی نازک تھی۔ھمارے سینئر ڈاکٹرز بھی مریض کی حالت کو تشویشناک قرار دے چکے تھے۔ شام کے وقت جب ھم وارڈ میں اکیلے تھے تو مریض کی حالت زیادہ بگڑ گئی۔ھم گھنٹوں مریض کو مختلف انجیکشن لگاتے رھے اور جو کچھ ھم سے ھو سکتا تھا ھم کر رھے تھے اس دوران ھم نے اپنی رفعء حاجت کی خواھش کو موخّر کر رکھا تھا۔مگر جب ضبط کی حد ھو چلی تو ھم نے بحالت مجبوری واش روم کا رخ کیا۔انکل عزرائل تو جیسے اسی گھڑی کی تاک میں تھے ھمارے واسش روم جاتے ھی وہ مریض کی روح کو لیکر چلتے بنے۔جب ھم واش روم سے واپس آئے تو وارڈ میں اک عجیب تماشہ تھا۔
    ھر طرف شور و غوغا۔مریض کے لواحقین واویلا کر رھے تھے۔اس شور میں ھمارے کانوں سے فقط اک آواز ٹکرا رھی تھی۔ ڈاکٹر کی غفلت۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ڈاکٹر کی غفلت سے مریض مر گیا۔اچانک کہیں سے دو چار لوگ ھاتھ میں مائک اور کیمرہ لیے نمودار ھوگئے۔ وہ خود کو میڈیا کا نمائندہ بتا رھے تھے۔ آتے ھی انھوں نے تندوتیز لہجے میں ھم سے پے درپے سوالات شروع کردیے۔ ڈاکٹر صاحب اتنے سیریئس مریض کو چھوڑ کرآ پ کہاں چلے گئے تھے؟ کیا آپ نے مریض کو کوئی غلط انجیکشن لگا دیا ھے؟ یا پھر مریض کو چھوڑ کر آپ کسی نرس کے ساتھ راز و نیاز میں مصروف تھے؟ یہاں میڈیا کے نمائندے ھمارے کردار پر کیچڑاچھال رھے تھے اور ادھر خوف سے ھماری گھگی بندھی ھئی تھی۔ھم سے بات ھی نہیں ھو پا رھی تھی۔ھکلاتے ھئے ھم بس اتنا ھی بول پائے۔صاحب۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔نہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔یہ۔۔۔۔۔۔۔۔ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔بات نہیں ھے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔وہ ھم تو واش روم۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ارے سنیں تو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ھم ابھی اپنی بات بھی مکمل نہیں کر پائے تھے کہ اچانک مریض کے لواحقین نے ھمارے اوپر ھّلا بول دیا۔عجیب جنونی قسم کے لوگ تھے ھماری ایک نا سنی۔ لاتوں اور گھونسوں سے ھماری وہ دھلائی کی یقین جانیئے طبیعت صاف ھو گئی۔
    ان سارے حالات و واقعات نے ھمیں اتنا دل برداشتہ کر دیا ھے کہ آج کل ھم سوچھتے ھیں کہ پیشۂ مسیحائی سے تائب ھو کر کیوں نا تیل بیچیں۔



  2. #2
    Join Date
    Jun 2011
    Location
    China
    Posts
    4,833
    Mentioned
    29 Post(s)
    Tagged
    9237 Thread(s)
    Thanked
    2
    Rep Power
    21474847

    Default Re: postgraduate doctor

    hahaha ///wah wah...kya tehreer likhi hay..maza aa gaya parh kr...
    kya yeh sach mai ap k sath hu chuka ha??
    Last edited by Falling Tears; 15-06-2012 at 09:21 PM.
    Zindagi tu apnay he qadmun pe chalti hay Faraz
    Auron k Sahary tu Janazy utha kartay hain

  3. #3
    Join Date
    Aug 2008
    Location
    ~Near to Heart~
    Age
    28
    Posts
    78,521
    Mentioned
    3 Post(s)
    Tagged
    2881 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    21474924

    Default Re: postgraduate doctor



    zbrdst funny hai
    2112kjd - postgraduate doctor

  4. #4
    Join Date
    Mar 2010
    Location
    ممہ کہ دل میں
    Posts
    40,298
    Mentioned
    32 Post(s)
    Tagged
    4710 Thread(s)
    Thanked
    4
    Rep Power
    21474884

    Default Re: postgraduate doctor

    intersting k saath sad b tu hai ....
    docter logo per kaya kaya zulm hotey hai...
    ger ye such hai aur aap per beet chuki hu tu..
    ALLAH khair karein aur docters k kaam main madad karein Ameen

  5. #5
    Join Date
    Jun 2010
    Location
    Jatoi
    Posts
    59,925
    Mentioned
    201 Post(s)
    Tagged
    9827 Thread(s)
    Thanked
    6
    Rep Power
    21474903

    Default Re: postgraduate doctor






    تیری انگلیاں میرے جسم میںیونہی لمس بن کے گڑی رہیں
    کف کوزه گر میری مان لےمجھے چاک سے نہ اتارنا

  6. #6
    Join Date
    Jan 2012
    Location
    Lost...
    Posts
    17,151
    Mentioned
    135 Post(s)
    Tagged
    11596 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    3865501

    Default Re: postgraduate doctor

    hmm interesting
    Teri ankhon uworiginal - postgraduate doctor

  7. #7
    Join Date
    Jan 2009
    Location
    Zameen pay
    Posts
    12,555
    Mentioned
    11 Post(s)
    Tagged
    6388 Thread(s)
    Thanked
    16
    Rep Power
    21474857

    Default Re: postgraduate doctor

    chalye dr to ban gaye na

  8. #8
    Join Date
    May 2010
    Location
    Karachi
    Age
    22
    Posts
    25,472
    Mentioned
    11 Post(s)
    Tagged
    6815 Thread(s)
    Thanked
    2
    Rep Power
    21474869

    Default Re: postgraduate doctor

    ahahhaha .......
    tumblr na75iuW2tl1rkm3u0o1 500 - postgraduate doctor

    Hum kya hain

    Hmari Muhabatayn kya hain
    kya chahtay hain
    kya patay hain..

    -Umera Ahmad (Peer-e-Kamil)


  9. #9
    Join Date
    Sep 2010
    Location
    Mystic falls
    Age
    29
    Posts
    52,044
    Mentioned
    326 Post(s)
    Tagged
    10829 Thread(s)
    Thanked
    5
    Rep Power
    21474896

    Default Re: postgraduate doctor



    hota aisa hi hai sahi likha hai

    eq2hdk - postgraduate doctor

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •