Results 1 to 2 of 2

Thread: Pariyon Se Liptay Hue Putlay

  1. #1
    Join Date
    Jun 2010
    Location
    Jatoi
    Posts
    59,925
    Mentioned
    201 Post(s)
    Tagged
    9827 Thread(s)
    Thanked
    6
    Rep Power
    21474903

    Default Pariyon Se Liptay Hue Putlay


    پریوں سے لپٹے ہوئے پتلے

    اس دن ہوا میں ایک عجیب سا خمار پھیلا تھا۔۔۔۔۔۔۔ ایسا خمار کہ پتلے کے جسم سے لپٹی پری کے دل میں پھر سے اڑنے کی خواہش جاگی۔ اسنے پتلے کی پیشانی پر ایک الوداعی بوسہ دیا اور ستاروں کی سمت پرواز کر گئی۔

    پتلا اوندھے منہ زمین پر آ گرا۔ وہ صبح تک وہیں پڑا رہا۔ یہاں تک کہ اپنی اپنی پریوں سے لپٹے کچھ پتلے اسکے گرد جمع ہو گئے۔ انہوں نے اسکے بے جان جسم کو اپنے کاندھوں پر اٹھایا اور ...گیت گاتے ہوئے اسے بھٹی کی طرف لے چلے۔

    وہ اسکے جسم کو بھٹی میں پگھلائیں گے اور پگھلے ہوئے لوہے کو ایک نئے پتلے کی صورت میں ڈھالیں گے اور امید کریں گے کہ اپنے آفاقی سفر کے بیچ کوئی پری پھر سے کچھ لمحے دم لینے کو اس جسم پر ٹھہر جائے۔

    سید اسد علی
    Last edited by Hidden words; 04-08-2012 at 09:55 PM.





    تیری انگلیاں میرے جسم میںیونہی لمس بن کے گڑی رہیں
    کف کوزه گر میری مان لےمجھے چاک سے نہ اتارنا

  2. #2
    Join Date
    Sep 2010
    Location
    Mystic falls
    Age
    29
    Posts
    52,044
    Mentioned
    326 Post(s)
    Tagged
    10829 Thread(s)
    Thanked
    5
    Rep Power
    21474896

    Default re: Pariyon Se Liptay Hue Putlay

    nice

    eq2hdk - Pariyon Se Liptay Hue Putlay

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •