Results 1 to 4 of 4

Thread: Dekh Kabira Roya

  1. #1
    Join Date
    Jun 2010
    Location
    Jatoi
    Posts
    59,925
    Mentioned
    201 Post(s)
    Tagged
    9827 Thread(s)
    Thanked
    6
    Rep Power
    21474903

    Default Dekh Kabira Roya


    دیکھ کبیرا رویا

    نگر نگر ڈھنڈورا پیٹا گیا کہ جو آدمی بھیک مانگے گا اس کو فرگتار کر لیا جائے۔ گرفتاریاں شروع ہوئیں۔ لوگ خوشیاں منانے لگے کہ ایک بہت بڑی لعنت دور ہو گئی۔
    کبیر نے یہ دیکھا تو اس کی آنکھوں میں آنسو میں آ گئے۔ لوگوں نے پوچھا۔ "اے جولاہے تو کیوں روتا ہے؟"
    کبیر نے رو کر کہا۔ "کپڑا دو چیزوں سے بنتا ہے، تانے اور پیٹے سے۔ گرفتاریوں کا تانا تو شروع ہو گیا۔ پر پیٹ بھرنے کا پیٹا کہاں ہے؟"

    ایک ایم اے ایل ایل بی کو دو سو کھڈیاں الاٹ ہو گئیں۔ کبیر نے یہ دیکھا تو اس کی آنکھوں میں آنسو آ گئے۔ ایم اے ایل ایل بی نے پوشھا۔ "اے جولاہے کے بچے تو کیوں روتا ہے؟۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔کیا اس لئے کہ میں نے تیرا حق غصب کر لیا ہے؟"
    کبیر نے روتے ہوئے جواب دیا۔ "تمہارا قانون تمہیں یہ نکتہ سمجھاتا ہے کہ کھڈیاں پڑی رہنے دو، دھاگے کا جو کوٹا ملے لے کر بیچ دو۔ مفت کی کھٹ کھٹ سے کیا فائدہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔لیکن یہ کھٹ ھٹ ہی جولاہے کی جان ہے؟"

    چھپی ہوئی کتاب کے فرمے تھے جن کے چھوٹے بڑے لفافے بنائے جا رہے تھے۔ کبیر کا ادھر سے گزر ہوا۔ اس نے دو تین لفافے اٹھائے اور ان پر چھپی ہوئی تحریر پڑھ کر اس کی آنکھوں میں آنسو آ گئے۔ لفافے بنانے والے نے حیرت سے پوچھا۔ "میاں کبیر تم کیوں رونے لگے؟"
    کبیر نے جواب دیا۔ "ان کاغذوں پر بھگت سور داس کی کویتا چھپی ہے۔ لفافے بنا کر اس کی بے عزتی نہ کرو۔"
    لفافے بنانے والے نے حیرت سے کہا۔ "جس کا نام سور داس ہے وہ بھگت کبھی نہیں ہو سکتا۔"
    کبیر نے زار و قطار رونا شروع کر دیا۔

    صف آرا فوجوں کے سامنے جرنیل نے توریر کرتے ہوئے کہا۔ "اناج کم ہے، کوئی پرواہ نہیں۔ فصلیں تباہ ہو گئی ہیں کوئی فکر نہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ہمارے سپاہی دشمن سے بھوکے لڑیں گے۔"
    دو لاکھ فوجیوں نے زندہ باد کے نعرے لگائے۔ کبیر چلا چلا کر رونے لگا۔ جرنیل کو بہت غصہ آیا۔ چنانچہ وہ پکار اٹا۔ "اے شخص بتا سکتا ہے تو کیوں رو رہا ہے؟"
    کبیر نے روتی آواز میں کہا۔ "اے میرے بہادر جرنیل۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔بھوک سے کون لڑے گا۔"
    دو لاکھ آدمیوں نے کبیر مردہ باد کے نعرے لگانے شروع کر دیئے۔

    دس بارہ ہزار کے مجمع میں ایک آدمی تقریر کر رہا تھا۔ "بھائیو، بازیافتہ عورتوں کا مسئلہ ہمارا سب سے بڑا مسئلہ ہے۔ اس کا حل ہمیں سب سے پہلے سوچنا ہے۔ اگر ہم غافل رہے تو یہ عورتیں قحبہ خانوں میں چلی جائیں گی۔ فاحشہ بن جائییں گی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔سن رہے ہو، فاحشہ بن جائیں گی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔تمہارا فرض ہے کہ تم ان کو اس خوفناک مستقبل سے بچاؤ اور اپنے گھروں میں ان کے لئے جگہ پیدا کرو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔اپنی، اپنے بھائی کی یا اپنے بیٹے کی شادی کرنے سے پہلے تمہیں ان عورتوں کو ہرگز فراموش نہیں کرنا چاہئے۔"
    کبیر پھوٹ پھوٹ کر رونے لگا۔ توریر کرنے والا رک گیا۔ کبیر کی طرف اشارہ کر کے اس نے بلند آواز میں حاضرین سے کہا۔ "دیکھو اس شخص کے دل پر کتنا اثر ہوا ہے۔"
    کبیر نے گلو گیر آواز میں کہا۔ "لفظوں کے بادشاہ تمہاری تقریر نے میرے دل پر کچھ اثر نہیں کیا۔۔۔۔۔۔۔۔میں نے جب سوچا کہ تم کسی مالدار عورت سے شادی کرنے کی خاطر ابھی تک کنوارے بیٹھے ہو تو میری آنکھوں میں آنسو آ گئے۔

    ایک دکان پر یہ بورڈ لگا تھا۔ "جناح بوٹ ہاؤس۔" کبیر نے اسے دیکھا تو تو زار و قطار رونے لگا۔
    لوگوں نے دیکھا کہ ایک آدمی کھڑا ہے۔ بورڈ پر آنکھیں جمی ہیں اور روئے جا رہا ہے انہوں نے تالیاں بجانا شروع کر دیں۔
    "پاگل ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔پاگل ہے۔"

    منٹو کہانیاں۔ کتاب نمرود کی خدائی از سعادت حسن منٹو۔





    تیری انگلیاں میرے جسم میںیونہی لمس بن کے گڑی رہیں
    کف کوزه گر میری مان لےمجھے چاک سے نہ اتارنا

  2. #2
    Join Date
    Jan 2012
    Location
    Lost...
    Posts
    17,151
    Mentioned
    135 Post(s)
    Tagged
    11596 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    3865501

    Default re: Dekh Kabira Roya

    Teri ankhon uworiginal - Dekh Kabira Roya

  3. #3
    Join Date
    Aug 2011
    Location
    SomeOne H3@rT
    Age
    31
    Posts
    2,331
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    825 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    429507

    Default re: Dekh Kabira Roya

    5 - Dekh Kabira Roya
    B•O•H•T♥K•H•O•O•B▼
    Acha Intikhab Hai Hamarey Sath Share Karne K Liye▼

    Thank You Glitters 57 - Dekh Kabira Roya

  4. #4
    Join Date
    Sep 2010
    Location
    Mystic falls
    Age
    29
    Posts
    52,044
    Mentioned
    326 Post(s)
    Tagged
    10829 Thread(s)
    Thanked
    5
    Rep Power
    21474896

    Default re: Dekh Kabira Roya

    a normal man in abnormal world

    eq2hdk - Dekh Kabira Roya

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •