Results 1 to 6 of 6

Thread: Sunehra Gubar Se Iqtibas

  1. #1
    Join Date
    Jun 2010
    Location
    Jatoi
    Posts
    59,925
    Mentioned
    201 Post(s)
    Tagged
    9827 Thread(s)
    Thanked
    6
    Rep Power
    21474903

    Default Sunehra Gubar Se Iqtibas


    احمد ندیم قاسمی صاحب کے افسانوی مجموعہ "طلوع و غروُب" کے افسانے "سُنہرا غبار" سے اِقتباس:

    "ٹیلوں پر چاندنی جُھکی ھوُئی تھی اور دُور کھجوروں کے ایک جُھنڈ میں کوئی پنچھی سہمی سہمی تانیں اُڑا رھا تھا۔ میں اِس صحرا میں شکار کھیلنے آیا تھا۔ میرا بوُڑھا ملازم سو گیا تھا اور چونکہ پردیس میں مجھے نیند بہت کم آتی ھے اور صحراؤں کی چاندنی راتیں سونے کے لیے نہیں بلکہ جاگنے کے لیے ھوتی ھیں، اس لیے پہلے تو میں بستر پر پڑا کروٹیں بدلتا رھا مگر جب کھوروں کے جُھنڈ میں کِسی پرندے کی دُکھی دُکھی، سہمی سہمی تانیں سُنیں اور پھر ان میں کِسی بھاگتی ھوئی خوفزدہ دوشیزہ کے گُھنگریالے بالوں کی طرح کچھ لہراتا دیکھا تو میں اُٹھ کھڑا ھوُا۔ میرے کُتے اپنی دُمیں ھِلانے لگے اور طلائی ریت اُن کی دُموں کی ھر حرکت پر اُڑنے لگی۔ ایک اُونچے ٹیلے پر چڑھ کر میں نے چار سوُ نگاھیں دوڑائیں۔ اِکا دُکا کھجوروں کے آسیبی سائے اور سائیں سائیں کرتی ھوُئی خاموشی کے سِوا تنہائی کے اِس لق و دَق براعظم میں اور کوئی چیز موجود نہ تھی۔ میں ٹھنڈی ریت کو مُٹھیوں میں دبا کر اسے ھولے ھولے نیچے گِرانے لگا۔ ریت کے ننھے ننھے سے مینار سے اُبھر آئے اور میں سوچنے لگا کہ اگر خدا نے زمین کا اِس قدر طویل اور عریض ٹکڑا ریت اور صرف ریت کے لیے وقف کیا تو آخر اس کا مقصد!۔۔۔۔۔۔۔۔ یوں کیوں نہ ھوُا کہ یہاں سرسبز اور شاداب کھیت ھوتے۔ گیہوُں کی سُنہری بالیاں ھوا کے جھونکوں کے ساتھ ایک اندازِ بے نیازی سے اپنی گردنیں خم کر دیتیں اور سارا منظر کنوؤں کی رُوں رُوں اور چشموں کے دبے دبے نغموں سے لبریز ھوتا ۔۔۔۔۔۔۔ یا یوُں کیوں نہ ھوُا کہ یہاں اُونچے اُونچے پہاڑ ھوتے، جن پر بلند صنوبروں کے جنگل ھوتے۔ ننھی ننھی ندیاں چٹانوں پر سر پٹختی، جھاگ کے بادل اُڑاتی، زخمی ناگنوں کی طرح لہراتی پھرتیں اور ڈھلانوں پر اَلہڑ چرواہیاں پتلی پتلی اُنگلیوں میں موٹی موٹی بنسریاں تھامے گُلابی ھونٹوں کے ایک ذرا سے مَس سے فضاؤں میں موسیقی کا رَس گھولتیں ـــــــــ یو یوُں کیوں نہ ھوُا کہ یہاں بڑے بڑے شہر ـــــــــ ! میرے خیالات کی پرواز اچانک رُک گئی اور چاندنی کے سِیمیں اندھیرے میں مجھے اُونٹوں کی گھنٹیوں کی دھیمی دھیمی صدائیں سُنائی دِیں۔ خاموشی کے اِس سمندر پر ان سُریلی آوازوں کا سفینہ تیرتا ھوُا آیا اور میرے احساسات کے ساحل سے ٹکرانے لگا اور اچانک میرے ذہن پر پُرانے زمانے کے ایک قافلے کے نقوُش اُبھرنے لگے ــــــ اُونٹوں کی دُور اُفق میں گُم ھوتی ھوئی قطار ــــــــــ ھدی خواں ــــــــ ساربان ـــــــــــــ محلوں میں بیٹھی ھوئی حسین دوشیزائیں جن کے پھوُل سے کانوں کی لَووں میں چاندی کے بُندے، اُونٹ کے ھر ھچکولے پر پھڑکتے تھے ـــــــــ کھجوروں کے جُھنڈ میں بے نام پرندے نے ایک تان اُڑائی اور خاموشی کے سینے پر جیسے ایک تیز نشتر چلا دیا۔ قافلہ ھولے ھولے قریب آتا گیا ــــــــــ "
    -------------------------------------------------





    تیری انگلیاں میرے جسم میںیونہی لمس بن کے گڑی رہیں
    کف کوزه گر میری مان لےمجھے چاک سے نہ اتارنا

  2. #2
    Join Date
    Jul 2010
    Location
    Karachi....
    Posts
    31,280
    Mentioned
    41 Post(s)
    Tagged
    6917 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    21474875

    Default re: Sunehra Gubar Se Iqtibas

    Khoob


    Ik Muhabbat ko amar karna tha.....

    to ye socha k ..... ab bichar jaye..!!!!


  3. #3
    Join Date
    Sep 2010
    Location
    Mystic falls
    Age
    29
    Posts
    52,044
    Mentioned
    326 Post(s)
    Tagged
    10829 Thread(s)
    Thanked
    5
    Rep Power
    21474896

    Default re: Sunehra Gubar Se Iqtibas


    eq2hdk - Sunehra Gubar Se Iqtibas

  4. #4
    Join Date
    Apr 2011
    Location
    pakistan
    Posts
    3,290
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    2597 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    541177

    Default re: Sunehra Gubar Se Iqtibas

    nice

  5. #5
    Join Date
    Jan 2011
    Location
    pakistan
    Posts
    9,092
    Mentioned
    95 Post(s)
    Tagged
    8378 Thread(s)
    Thanked
    2
    Rep Power
    429513

    Default re: Sunehra Gubar Se Iqtibas

    bht zabardast


  6. #6
    Join Date
    Jun 2010
    Location
    Jatoi
    Posts
    59,925
    Mentioned
    201 Post(s)
    Tagged
    9827 Thread(s)
    Thanked
    6
    Rep Power
    21474903

    Default re: Sunehra Gubar Se Iqtibas

    shukriyaaa





    تیری انگلیاں میرے جسم میںیونہی لمس بن کے گڑی رہیں
    کف کوزه گر میری مان لےمجھے چاک سے نہ اتارنا

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •