Page 1 of 2 12 LastLast
Results 1 to 10 of 15

Thread: ضمیر اور ماں

  1. #1
    Join Date
    Mar 2010
    Location
    ممہ کہ دل میں
    Posts
    40,298
    Mentioned
    32 Post(s)
    Tagged
    4710 Thread(s)
    Thanked
    4
    Rep Power
    21474884

    Default ضمیر اور ماں

    ضمیراور ماں

    وہ اپنی ماں کی قبر کہ پاس بیٹھ کر ضمیر کی ملامتیں تلاش کرکے اپنے ماضی کی کتاب کھول کر روتے روتے معافی مانگ رہا تھا ۔ کہ اے ماں مجھے معاف کردیں میں پشیماں ہو آج بہت میں نے ہمیشہ تیرا دل دکھایا ۔ ہمیشہ تجھے چیکھ کر ہی جواب دیا ۔ ہر وقت تو سائے کی طرح میرے سکھ دکھ میں ساتھ تھی ۔لیکن میں نے تیرے وجود کو الجھن کی نظر سے چڑ کر دیکھا ۔ آج میری آنکھیں تجھے ڈھونڈتی ہے کہ میری ماں جب جب میں بچپن میں اسکول سے آتا تھا تو توہی میرا انتظار کھڑےنظر آتی تھی ۔ اس احساس سے کہ بستہ میں کتابوں کا وزن زیادہ ہے تو بستہ تھام لیتی تھی ۔ اور مجھے پیار سے گھر میں لیجا کر کھانا کھلاتی تھی۔ میں جوان ہوا تو دوستوں کی صحبت نے مجھے بدتمیز بنا دیا ۔ میں لڑ کر جھگڑ کر اونچی آواز میں بولنے لگا ۔ پھر بھی تو ہمیشہ میرا پہلے کی طرح انتظار کرتی رہی ۔ اور میری سلامتی سے واپس گھر آنے کی دعا کرتی رہی ۔ اور پھر میں کتنی بھی رات کو آؤ تو پھر بھی کہتی کہ کھانا نکالو بیٹا ۔ مجھے کچھ نہیں ملتا تو میں تیرے کھانے میں نقص نکالتا کہ تجھے کھانا بنانے نہیں آتا ۔ اور میں اللہ کی نعمت کہ ساتھ بھی برا سلوک کرکے پھینک دیتا ۔ ماں آج میں بہت بھوکا ہوں ماں مجھے تو کھانا کھلا دیں ۔ ماں اٹھ ماں میں نے گناہ کیا ہے تیرا دل دکھا کر مجھے معاف کئے بغیر تو کیسے چلی گئی ماں ۔ !! میری خطاؤں کو تو یہ کہہ کی معاف کر دیتی تھی ہمیشہ کہ میں نادان ہو بچہ ہوں ، تو مجھے سمجھاتی تھی نا میرا دل دکھا کر گنہگار نا بن آج میں پاس ہو کل نا رہو اپنی جنت نا گنوا ۔ بیٹا جب تجھے احساس ہونگا ماں کی قدر ہونگی تب تک بہت دیر نا ہوجائے بیٹا۔ ماں کا دل دکھا کر اپنی جنت گوا رہا ہوں ۔تو ہی کہا کرتی تھی نا ماں ۔۔۔؟ کہ میں بچہ ہو کم عقل ہو اللہ مجھے ہدیات دینگا ایک روز ۔ ماں آج وہ دن آگیا ہے ۔ اللہ نے تیری دعا قبول کرلی ۔ آج واقعی بہت دیر ہوگئی ماں آج ، ضمیر نے مجھے آواز دینے میں بہت دیر کردی ہے، میں نے آج جانا ماں کیا ہوتی ہے ۔ کل تک میرا ضمیر سویا ہوا تھا ۔ کوئی نہیں تھا میرا تیرے سیوا اور آج محسوس ہوا ہے مجھے کہ تو ہی میری دینا تھی، ماں میں نے بہت دکھ دئے ہے ماں میں نے ہمیشہ تیرا مذاق اڑایا ہے ، ہمیشہ تجھے بدتمیزی سے ہی جواب دیا ضد کی تجھ سے بہت ، بہت رلایا میں نے ۔ جب تو درد سے تڑپ رہی تھی میں نے کہا ناٹک کر رہی ہے تو ، اور تجھے اس درد میں چھوڑ کر چلا گیا جس نے تیری جان لیں لی ماں وہ رونے لگا ضمیرے سے بلک بلک کر میری لاپرواہی کی وجہ سے تیری جان چلی گئی ماں ، میرے لئے ماں تونے سب کچھ کیا ابا کی موت کہ بعد بھی تونے مجھے کبھی بھوکا نا سونے دیا ، اور میں نے کبھی دوروٹی تجھے کما کر نہیں دی ،کبھی یہ نہیں سوچا میری ماں محتاج ہے ۔ اسے کسی چیز کی ضرورت ہے ۔ کبھی نہیں ۔ ہمیشہ تجھ پر رعب کیا ۔ ماں مجھے معاف کردیں یہاں تو دم ٹور رہی تھی اور وہاں میں دوستوں میں شراب پیکر تیرا مذاق اڑا رہا تھا کہ میری ماں بہت بڑی ناٹک باز ہے ۔ درد کہ نام سے رو رہی تھی ، اور میرے بدکار دوست قہقہہ لگا کر ہسنے لگے کسی نے بھی نہیں کہا یہ غلط ہے ۔ یہاں ج چندا جمع کرکے تیرا کفن خرید رہے تھے اور وہاں میں کالج کہ نام سے تیری جمع کی ہوئی فیس سے سب کو شراب پلا کر پڑا تھا ۔ اللہ نے مجھے میرے کئے کی سزا دے دی ماں اسکی آنکھوں میں آنسو تھے ۔ وہ پشیماں ہوکر ماں کی قبر سے لپیٹ کر معافی مانگ رہا تھا ۔ کیا ایسی اولاد کی معافی ہے ۔۔۔؟ جو اپنے جوانی کہ غرور میں بڈھی ماں کا دل دکھاتے ہے ۔ ان کی جان لیں لیتے ہے ۔ انھیں بڑھاپے میں گھر سے بے گھر کر دیتے ہے ۔۔؟
    شادی کہ بعد اپنے ماں باپ کو گھر سے نکال دیتے ہے بیوی کہ کہنے پر کیا اللہ کہ فرمان کا ذکر ان کا ضمیر یاد نہیں رکھتا یا شیطان کہ متابعہ وہ اپنا ضمیر کو روند کر اسے اپنے ہی ہاتھوں مار دیتے ہے ۔۔۔ انھیں ایک پل کہ لئے خیال نہیں آتا گر آج وہ اپنی ماں کہ ساتھ کریں گے تو کل انکی اولاد ان کے ساتھ ایسا ہی کرے گی دیکھ کر ان سے یہی سیکھے گی ۔۔۔
    اللہ کہ نیک اعمال کو حدیث و دین کو اور نماز کہ پڑھنے والوں کی بھی مایئں ان سے خفا ہیں ۔ کبھی سوچا آپ نے کیوں یہ لوگ تو نمازی ہے حجی ہے پھر کیوں ایسا ۔ ؟ کیونکہ وہ اپنی ماں سے یہ نہیں کہتے کہ ماں تونے کھانا کھایا ۔ کبھی یہ نہیں کہتے کہ ماں آ تیرے آج پیر دبا دوں ۔ تجھے گھر خرچ کچھ دیں دوں ماں تونے تو مجھے برتن صاف کرکے بھی پالا تھا لیکن میں بڑے بڑے بیزنس کرکے بھی تجھے سمبھال نا سکھا ، چند روپئے تجھے دینے کا ذہن میں نہیں آیا بیوی کہ لئے زیور بنانا یاد رہا ۔ اسے سینمہ لے جانا یاد رہا اسے گھومانا لیکن دو وقت تیرے ساتھ گزارنا یاد نہیں رہا ۔ اے ماں زمانے کی رونقوں نے اور دوستو کی صحبتوں نے مجھے اتنا بھی وقت نا دیا کہ میں اپنے بڑھے ماں باپ کہ ساتھ بیٹھ کر کچھ دیر ہی سہی ان کا سہارہ بنو ۔ میرا ضمیر نہیں ہے یا میں بدکار تھا جو اللہ کی رضا مسجدوں اور بیوی کی خوشی میں تلاش کر رہا تھا ۔ لیکن تیرے سامنے میرا سر جھکانے سے شرم محسوس کرتا رہا ۔ میں بھول گیا تھا کہ تیرے تو قدموں میں جنت العظیم ہے پھر میری آخرت میں تجھے ناراض کرکے کیسے بنا سکتا ہوں ماں ۔۔۔؟
    اللہ کی نیکیاں میں کرتا رہا لیکن میری ماں جس نے سب کچھ سہہ کر مجھے پروان کیا اس کہ آنسو نا دیکھ سکا ۔ ملامتیں ضمیر کی ہو یا انسانیت کی ہو یا محبت کی ہو سب کچھ گنوا کر ہی کیوں آتی ہے ۔ وقت آج بھی ہمارے پاس اور ہماری جنت بھی تو پھر اس کی قدر اور اس کی خدمت کرنے میں اتنی دیری کیوں ۔ ؟ ضمیر تو زندہ ہوگیا اس بیٹے کا جو اپنی ماں کہ قبر پر رو رہا تھا لیکن کیا اسکی ماں زندہ ہوسکے گی ۔۔۔۔؟ نہیں نا پھر کیوں اتنی دیر حق داروں کا حق ادا کرنے میں ۔ ماں کا دل دکھایا تو ہونگا ہم میں سے کسی نے لیکن ماں کہ آنسو پونچھ سکا کوئی ۔ وہ تو ؑعظمتوں کی اعلی مثال ہے ۔ اللہ کی رضا کا سرمایا تو گھر میں موجود ہے پھر نیکیاں کس کام کی جب وہ خفا ہے ہم سے ۔۔۔؟ اب بھی وقت ہے ان سے معافی مانگ لیں اور ان کہ سر پر بوسہ دیکر جایئں گھر سے باہر اور ہاتھ چوم کر اپنی جنت کو سلام کریں دیکھنا اللہ کی رضا رحمت بنکر آپ کی حفاظت کریں گی ۔دنیا میں بھی اور آخرت میں بھی ۔
    ضمیر کو مار کر ناجئے ضمیر تو کل پشیماں کروا ہی دینگا لیکن اللہ تعالی عقوق والدین کرنے والوں کو کبھی معاف نہیں کرے گے ۔ اے ماں تجھے سلام تونے جاتے جاتے بھی ہدایت ہی دی اور مرنے کہ بعد بھی تو ایک بدکار بیٹے کو اچھا بنا کر چلی گئی ۔
    اللہ ہم سب کی ماؤ ں کو سلامت رکھیں اور ہمارے ضمیر ماں کی محبت نا بھولیں اور ہمارے دین و دینا ماں کی محبت اور خدمت اور نرمی و پیار سے سرشار رہیں امین

    از ریشم



  2. #2
    Join Date
    May 2012
    Location
    !!!KiSii Kii DuAouN meii!!!:):)
    Posts
    10,485
    Mentioned
    83 Post(s)
    Tagged
    10415 Thread(s)
    Thanked
    28
    Rep Power
    2184012

    Default Re: ضمیر اور ماں

    ameen sumaameen.... JAZAAK ALLAH......... wah kitna xabardast aurr sae likhaa u ney.......waqae aaj kal yehii to ho raha haii...... lakiin afsoos sub kuch jaantey huey bhii bndaa anjaaan bnn jata haii.....aurr jbb waqt haath sey nikal jaata haii to yeh keh diyaa jaata haii k shaitan ney behkaa diyaa tha.... lakiin ous waqt yeh nae sochtaa k agar shaitan k behkaaway meii inni asaani sey aajana tha to ALLAH JAL SHAAN NA HOO ...ney ashraf ul makhlookaat kiyun bnaaya insaan ko ... isi liye k wo ghor o fikar n akal o shaoor sey kaam le.......
    ---------------- -----------------

    sigpic16201 13 - ضمیر اور ماں


    -------------------------------------------------------------
    some people are worth
    melting for....!!!
    ..(olaf)..
    ------------------------------------------------------------------------


  3. #3
    Join Date
    Sep 2010
    Location
    Mystic falls
    Age
    29
    Posts
    52,044
    Mentioned
    326 Post(s)
    Tagged
    10829 Thread(s)
    Thanked
    5
    Rep Power
    21474896

    Default Re: ضمیر اور ماں

    bohat khubsurat likha hai maan k baray main jitna b likha jaye kam hai
    bohat khubsurat likha hai Masha ALLAH
    keep writing

    eq2hdk - ضمیر اور ماں

  4. #4
    Join Date
    Apr 2011
    Location
    pakistan
    Posts
    3,290
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    2597 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    541177

    Default Re: ضمیر اور ماں

    bht umda

  5. #5
    Join Date
    Jan 2012
    Location
    Lost...
    Posts
    17,151
    Mentioned
    135 Post(s)
    Tagged
    11596 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    3865501

    Default Re: ضمیر اور ماں

    walaikum assalam
    bohat hi umda tehreer hoti hai aap ki hamesha
    ye bhe aap ne bohat umdagi se bayaan kiya sb ma sha ALLAH
    Teri ankhon uworiginal - ضمیر اور ماں

  6. #6
    Join Date
    Mar 2010
    Location
    Karachi,Pakistan
    Posts
    11,803
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    16 Thread(s)
    Thanked
    2
    Rep Power
    21474855

    Default Re: ضمیر اور ماں

    MashAllah..buhut acha likha hai humesha ki terhaan
    Alhamdullilah

  7. #7
    Join Date
    Sep 2011
    Location
    Karachi
    Posts
    3,929
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    1530 Thread(s)
    Thanked
    4
    Rep Power
    21474846

    Default Re: ضمیر اور ماں

    speechless.....
    1383466 1388375978065877 814058537 n zpsc25ba847 - ضمیر اور ماں

  8. #8
    Join Date
    Sep 2012
    Location
    Bermuda Triangles
    Posts
    3,039
    Mentioned
    3 Post(s)
    Tagged
    3495 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    9

    Default Re: ضمیر اور ماں

    wa'alaikum salam
    bahot pur asar tehreer ha resham g
    thanx for sharing

  9. #9
    Join Date
    May 2010
    Location
    *!~ In EmoTiOns~!*
    Posts
    1,615
    Mentioned
    3 Post(s)
    Tagged
    220 Thread(s)
    Thanked
    1
    Rep Power
    0

    Default Re: ضمیر اور ماں

    zaberdast yar

  10. #10
    Join Date
    Jan 2011
    Location
    pakistan
    Posts
    9,092
    Mentioned
    95 Post(s)
    Tagged
    8378 Thread(s)
    Thanked
    2
    Rep Power
    429513

    Default Re: ضمیر اور ماں

    bht zabardast likha hai aap ne
    keep it up
    waqai ye reality hai k hum sab kuch janne k bawjood b anjaan bane rehte hain allah k bad sirf hamare parents hi hain jo hamari galtion ko maaf kar sakte hai n ye insaan ki fitrat hai k jo cheez us se hamesha k liye cheen jati hai use us ki qadar tab hoti hai pehle nhi
    n again u ne bht acha likha keep it up


Page 1 of 2 12 LastLast

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •