Results 1 to 3 of 3

Thread: اسی حریف کی غارت گری کا ڈر بھی تھا

  1. #1
    Join Date
    Nov 2008
    Location
    اسلامی جمہوریہ پاکستان
    Posts
    3,461
    Mentioned
    276 Post(s)
    Tagged
    8176 Thread(s)
    Thanked
    90
    Rep Power
    1073759

    candel اسی حریف کی غارت گری کا ڈر بھی تھا

    اسی حریف کی غارت گری کا ڈر بھی تھا
    یہ دل کا درد مگر زارِ رہگزر بھی تھا

    اسی پہ شہر کی ساری ہوائیں برہم تھیں
    کہ اک دیا مرے گھر کی منڈیر پر بھی تھا

    یہ جسم و جان تیری ہی عطا سہی لیکن
    ترے جہان میں جینا مرا ہنر بھی تھا

    اسی کھنڈر میں خواب کی گلی بھی تھی
    گلی میں پیڑ بھی تھا پیڑ پر ثمر بھی تھا

    مجھے کہیں کا نہ رکھا سفید پوشی نے
    میں گرد گرد رواں تھا تو معتبر بھی تھا

    میں سرخرو تھا خدائی کے روبرو یوسف
    کی اس کی چاہ کا الزام میرے سر بھی تھا
    2v1u8md - اسی حریف کی غارت گری کا ڈر بھی تھا

  2. #2
    Join Date
    Jul 2010
    Location
    Karachi....
    Posts
    31,280
    Mentioned
    41 Post(s)
    Tagged
    6917 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    21474875

    Default Re: اسی حریف کی غارت گری کا ڈر بھی تھا

    nice one....


    Ik Muhabbat ko amar karna tha.....

    to ye socha k ..... ab bichar jaye..!!!!


  3. #3
    Join Date
    Feb 2009
    Location
    City Of Light
    Posts
    26,767
    Mentioned
    144 Post(s)
    Tagged
    10310 Thread(s)
    Thanked
    5
    Rep Power
    21474871

    Default Re: اسی حریف کی غارت گری کا ڈر بھی تھا

    nice



    3297731y763i7owcz zps9ed156a3 - اسی حریف کی غارت گری کا ڈر بھی تھا

    MAY OUR COUNTRY PROGRESS IN EVERYWHERE AND IN EVERYTHING SO THAT THE WHOLE WORLD SHOULD HAVE PROUD ON US
    PAKISTAN ZINDABAD











Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •