Results 1 to 3 of 3

Thread: کیا کیا ضرورتوں سے فزوں کھا گئی ہوا

  1. #1
    *jamshed*'s Avatar
    *jamshed* is offline کچھ یادیں ،کچھ باتیں
    Join Date
    Oct 2010
    Location
    every heart
    Posts
    14,586
    Mentioned
    138 Post(s)
    Tagged
    8346 Thread(s)
    Thanked
    4
    Rep Power
    21474858

    Default کیا کیا ضرورتوں سے فزوں کھا گئی ہوا

    کیا کیا ضرورتوں سے فزوں کھا گئی ہوا
    کم پڑ گئی خرد تو جنوں کھا گئی ہوا
    اب انہدامِ قصرِ تخیل کا وقت ہے
    گن گن کے ایک ایک ستوں کھا گئی ہوا

    ہم تو صدا سے خاک تھے، خوراکِ خاک تھے
    دورِ ہوا سرشت کو کیوں کھا گئی ہوا

    کیا داستانِ عہدِ گذشتہ رقم کریں
    وہ خواب، وہ نشہ، وہ فسوں کھا گئی ہوا

    صرصر صفت خیال ہیں، لب سوختہ سوال
    ہر آدمی کا سوزِ دروں کھا گئی ہوا

    ایسا لگا کہ اس نے تو کھایا ہی کچھ نہیں
    اختر ہمیں تو موج میں یوں کھا گئی ہوا

  2. #2
    Join Date
    Feb 2009
    Location
    City Of Light
    Posts
    26,767
    Mentioned
    144 Post(s)
    Tagged
    10310 Thread(s)
    Thanked
    5
    Rep Power
    21474871

    Default Re: کیا کیا ضرورتوں سے فزوں کھا گئی ہوا

    nice



    3297731y763i7owcz zps9ed156a3 - کیا کیا ضرورتوں سے فزوں کھا گئی ہوا

    MAY OUR COUNTRY PROGRESS IN EVERYWHERE AND IN EVERYTHING SO THAT THE WHOLE WORLD SHOULD HAVE PROUD ON US
    PAKISTAN ZINDABAD











  3. #3
    Join Date
    May 2010
    Location
    Karachi
    Age
    22
    Posts
    25,472
    Mentioned
    11 Post(s)
    Tagged
    6815 Thread(s)
    Thanked
    2
    Rep Power
    21474869

    Default Re: کیا کیا ضرورتوں سے فزوں کھا گئی ہوا

    wah....
    tumblr na75iuW2tl1rkm3u0o1 500 - کیا کیا ضرورتوں سے فزوں کھا گئی ہوا

    Hum kya hain

    Hmari Muhabatayn kya hain
    kya chahtay hain
    kya patay hain..

    -Umera Ahmad (Peer-e-Kamil)


Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •