Page 1 of 2 12 LastLast
Results 1 to 10 of 13

Thread: بابائے قوم کا مقصد حیات ۔۔۔

  1. #1
    Join Date
    Mar 2010
    Location
    ممہ کہ دل میں
    Posts
    40,298
    Mentioned
    32 Post(s)
    Tagged
    4710 Thread(s)
    Thanked
    4
    Rep Power
    21474884

    Default بابائے قوم کا مقصد حیات ۔۔۔

    نوت: بخصوص قائد اعظم کے جنم دن کا سوچ کر لکھی یہ تحریرقائد اعظم کو ڈیڈیکیٹ کرتی ہوں
    10f3k49 - بابائے قوم کا مقصد حیات ۔۔۔
    بابائے قوم کا مقصد حیات

    ایک درد کی آواز آزادی ہے جس کا نام

    دیتی ہے شجاعت ہمیں بابائے قوم کا پیغام



    یوں دی ہمیں آزادی کہ دنیا ہوئی حیران

    اے قائد اعظم تیرا احسان ہے احسان



    بقول قائد اعظم

    ہم جتنی زیادہ تکلیفیں سہنا اور قربانیاں دینا سیکھیں گے اتنی ہی زیادہ پاکیزہ ، خالص اور مضبوط قوم ابھریں گے جیسا سونا آگ میں تپ کر کندن بن جاتا ہے ۔


    بابائے قوم کا فرمان۔۔


    اپنی تنظیم اس طرح کیجئے کے کسی پر بھروسہ کرنے کی ضرورت نہ رہے۔ یہی آپ کا واحد اور بہترین تحفظ ہے ۔اس کا یہ مطلب یہ نہیں کہ ہم کسی کے خلاف بد خواہی یا اعناد رکھیں۔ اپنے حقوق اور مفاد کے لئے وہ طاقت پیدا کرلیجئے کہ آپ اپنی مدا فعت کرسکیں



    علم کے سورج سےجس نےبنایا تھا پاکستان

    اپنی شناخت سے جس نے دی ہمیں پہچان

    25 دسمبربابا ئے قوم کی سالگرہ کا دن ہے ۔ جو آج بھی کروڑوں کے دلوں میں زندہ ہیں ۔ اور آج کا یہ دن دنیا کی تاریخ کا عظیم ترین دن ہے ۔ یوم ِ قائد پاکستانی قوم کی محبت سے سرشارہیں ۔ جب پاکستان کی تاریخ کو اللہ تعالی نے ایک عظمت کا معیار قائم رکھنے والی شخصیت سے نوازا ۔ محمد علی جناح رحمت اللہ علیہ کو پاکستان کے لئے رحمت

    بن کر آئے ۔ اور اس ارض پاک پر اللہ پاک نے ایک اعلی و ارفع شخصیت کو آزاد پاکستان عطا کرنے کے لئے بھیجا ۔


    محمد علی جناح رحمت اللہ علیہ جیسی عظیم شخصیت سے کون نا واقف ہوگا ؟ دنیا کے ہر کونے میں یوم قائد کا یہ دن لوگ محبت وخلوص سے مناتے ہیں ۔ کون جانتا تھا کراچی میں پیدا ہونے والا یہ مشرقی معصوم سا بچہ اس ملک کا شہزادہ بنے گا ۔ اور قیامِ پاکستان کو عمل میں لائے گا ۔ ؟وقت کتنی بھی کروٹ کیوں نا بدل لے تاریخ اپنی شناخت کی گواہی دینے مسلسل آتی ہے ۔ اور ثابت کرتی ہے ملک کے جانبازوں اور شہیدوں کی قربانیاں اورعزیز محافظوں کا تذکرہ ضرور دہراتی ہے ۔ محمد علی جناح نے تلخ حقیقت کو جذبہ ء یقین میں بدلنے کا حوصلہ اپنے کردار اور اصولوں سے شروع کیا۔ بابا ئے قوم نے اس ملک کے لئے بہت سی دشواریوں کا سامنا کیا ۔اور کافی جدوجہد کے بعد آزادی کی شمع جلانے میں وہ کامیاب رہے۔ پاکستان کی قیادت کے رہبر نے ہمیں غلامی سے نجات دلائی ۔ ہمیں آزاد قومی و مشرقی مسلم ملک سے نوازا ۔ اس عزیز وطن کو آزاد کرکے پوری پاکستانی قوم پر ایک احسان کرنے والے محمد علی جناح کو بابائے قوم اور قائد اعظم کا خطاب ملا

    تحریکِ پاکستان کے لئے حکیم الامت علامہ اقبال نے قائد اعظم کو خط لکھ کر کہا کے مسلمانوں کو آپ کی ضرورت ہے ۔ اور بابائے قوم نے اپنے ارادوں کی عظیم پختگی کا آغاز کرکے برطانیہ کی پوری سیاست کو مات دے دی ۔ اپنی استقامت کو عمل میں لاکر عدل کی اس جنگ میں پاکستان کی بنیاد سچائی کے انمول اصولوں سے جاری رکھی ۔شجاعت کی اس تشکیل کے پیچھے سیاست اور اقتصادیات پر محیط ترقی کے موتی سمیٹ کر علم کی روشنی سے ایک ترقی یافتہ ملک کی بنیاد شروع سے ہی آپ نےکی ۔ آپ کی قیادت میں مسلمانوں نے برطانیہ سے آزادی حاصل کی ۔ اور پاکستان کا قیام آپ کی بدولت ہی عمل میں آیا۔ اس ملک کی ترقی اور خوشحالی کے لئے آپ نے امن کی فضا برقرار رکھتے ہوئے معاشی ترقی کے لئے مسلسل کوشش کی، اور ہمیں انگریزوں کی قید سے رہنمائی دلا کر ایک آزاد وطن سے نوازا ۔ خلوص نیت اور استقامت کے ساتھ اپنے اصولوں پر مبنی توحید اسلام کی بنیاد بھی آپ نے قیام میں رکھی ۔ مشرقی تہذیب سے بابائے قوم نے لوگوں کے دلوں میں جذبہء وطن کو جگایا ۔ محمد علی جناح بابائےقوم کی بات ہی کیا تھی !! اپنے مقصد کو قیام میں لانے کے لئے بچپن سے علم حاصل کرنے کا زوق وشوق جاری رکھا۔ اور ء 1893تعلیم مکمل کرنے انگلستان چلے گئے ۔وہاں سے کامیابی کے بعد بمبئی میں وکالت شروع کی ۔حمایت و تعاون سے دنیا کی عظیم قوموں کی صف میں کھڑے رہ کر قیام پاکستان کا چراغ روشن کیا ۔ اپنی والدہ کی وفات کے بعد شدت ِ غم کے باوجود بھی انھوں نے تعلیم کو ہی اپنا اہم مقصد سمجھا ۔ اور قانوناً اپنے مقاصد میں کامیابی حاصل کی ۔ بابائے قوم نے دنیا کی نظریاتی اور بنیادی اعتبار کو سیاسی حیثیت سے بھی اپنی مشرقی تہذیب ذاتی عقائد کو قائم دائم رکھا ۔ ہند و پاکستان کی سیاست کو ایک کرنے اور ہندو اور مسلمان کے تفرّق کو دور کرنے کی کوششوں کے باعث کانگریس کی سیاسی زندگی میں بھی قدم رکھا۔ اپنی مخلصانہ نیت سے مذہبی اعتبار سے ہندو حکمرانوں کا جائزہ لیکر دو مختلف تہذیب و تمدن کہ متصادم خیالات کی روشنی میں ، بجانب کانگریس کی صف میں کھڑے رہ کر آپ نے محسوس کر لیا کے کانگریس صرف ہندؤں کے مفاد میں شامل ہے ۔

    قائد اعظم نے کانگریس سے فوراً علیحدگی کرکے مسلم لیگ میں شرکت کی ۔ دل میں وطن کی محبت کا جذبہء رکھ کر ایمان و یقین اورنظریات کی بقا ء میں آزاد پاکستان کے خواب کی بنیاد بنا کر قیام پاکستان کو بابائے قوم نے اپنے سچے اصولوں سے عمل میں لایا۔


    اسلام زندہ ہوتا ہے ہر کربلا کے بعد

    در بست پڑے ملک پہ ہو جائیے قربان

    اے قائد اعظم تیرا احسان ہے احسان

    قائد اعظم پاکستان کہ پہلے جرنل گورنربنے ۔قائد اعظم محمد جناح پاکستان 25 دسمبر 1876 بروز پیر کو کراچی کے ایک گھر وزیر منشن میں پیدا ہویئں ۔ آپ پاکستان کے عظیم رہبر تھے ۔ پوری پاکستانی قوم قائد اعظم کی رہنمائی کی احسان مند ہے ۔ آپ کی قیادت میں ہمیں ایک آزاد ملک نصیب ہوا ۔آپ نے ملک کے تحفظ کی با وقار شخصیت کے کارناموں ،اور کردار کی بے مثال محبت اور اس عزیز وطن کے لئے مسلسل جد و جہد کی وجہ سے ،آج بھی قوم نے آپ کو سینکڑوں کے دل میں زندہ رکھا ہے ۔ قائد عظم نے اس پیارے وطن کے استحکام میں امن اور خوش حالی کے لئے اپنا ایک اہم کردار ادا کیا ۔ اپنے مقصد کے لئے انگریزوں کی مرعات کو حقارت سے ٹھکرا کر بابائے قوم نے عزیز وطن کی محبت سے اپنے دل کو سرشاررکھا ۔ اور جذبہ ءعمل اور ایثار سے پاکستان کا قیام تاریخ کے صفحوں سنہری لفظوں سےروشن کردیا اور اس ملک کو آزادی کے رنگ میں رنگ دیا۔ اور آپ کی بدولت دارِ حکومت پاکستان میں امن کا سبز پرچم لہرایا ۔


    14 اگست 1947 کو قائد اعظم اپنی محنت و لگن سے پاکستان کو آزاد کرانے میں کامیاب ہوگئے ۔ آپ کے کردار کی روشن خیالی اور امن پسندی کی خوشبو آج بھی پاکستان کی قوم کے دلوں میں مہک رہی ہیں ۔ آپ کے کردار کی شخصیت کی تاریخ کہ اوارق پر نمو دار ہوئی ۔ قائد اعظم نے تحریر پاکستان کے لئے کوئی تلوار یا اسلحہ کو نہیں اپنایا ۔ آپ کی نظر میں انگریزوں سے آزادی حاصل کرنا کا راستہ قانون کہ ذریعہ ہی تھا ۔ اور اپنے سچے اصولوں کی بنیاد پر اپنی اعلی تعلیم سے اپنے اہداف و مقاصد کی بناء پر قانون کی اور ملک کی رہبری کرتے گئے ۔ اورعلم کی روشنی سے برطانیوں سے 14 اگست یومِ پاکستان کا پرچم لہرایا۔ اور قومی اہداف کے باعث ان کا ساتھ دینے والے جناب علامہ اقبال جیسی عظیم شخصیت اور لیاقت علی خان بھی شامل تھے ۔


    علامہ اقبال اور بابائے قوم کی صداقت و اقکار نے اپنا کمال دکھایا۔۔جہاں قائد اعظم اپنی تقریروں میں علامہ اقبال کی اہمیت کا بیان دیتے تھے ،وہاں جناب اقبال بھی بابائے قوم کی عملی حقیقت کا بیان کبھی اپنی شاعری میں تو کبھی اپنی کتابوں میں لکھتے تھے ۔ ملک کی یہ دو عظیم شخصیت نے خلوص نیت اور تعاون واستقامت اور شجاعت کے ساتھ ایکدوسرے کا ساتھ دیا ۔قائد اعظم کی زیر قیادت آزادی پاکستان اور قائد اعظم کے احسان کا تذکرہ ملک بھر نے ہمیشہ دہرایا ہے۔ اور ملک کے نظام میں علم کی تعلیمی ترقی اور سہولت امن و امان کے ساتھ جان و مال کی حفاظت سے کی گئی ۔ اورسماجی معاشی ، مذہبی انحاطاط پر مسلم معاشرہ جس زوال کا شکار تھا اسے اپنے سچے اصولوں سے دور کردیا ۔ اپنی ریاست کے دوران آپ ایک قابلِ فخر حکمران ثابت ہوئے ۔ اور بابائے قوم نے حبِ وطن کی شمع بجھنے نہ دی ۔ پاکستانی فوجیوں کو شجاعت کا پیغام دیکر ہمیشہ ان کا حوصلہ قا ئم رکھا۔ آپ نے اپنی حکمت اور مقصد وعلم کی طاقت سے ہندؤں کی سیاست کو بھی مات دے دی ، اور ایک کامیاب ترقی یافتہ ملک کی بنیاد قائم کی ۔

    پاکستا ن بنا نے میں آپ کامیاب ہوگئے ۔ مذہب اور انسانی زندگی اور معاشرہ کی اہمیت اور ضرورتوں کا بھی اپنے ہمیشہ خیال رکھا ۔ ملک کی اندورنی اور بیرونی ، معا شی ترقی کے لئے مسلسل جد و جہد کی۔اور بہت جلد ہی ملک کی کامیابی کو چار جاند لگا دیئے ۔ آپ اپنے دور سے آج تک ایک قابلَ فخر حکمران مانے جاتے تھے ۔آپ کے بعد آپ جیسا عظیم حکمران آج تک تاریخ کے صفحوں پر نہیں آیا ۔ آپ اور جناب علامہ اقبال نے ملکر قوم کی روح کو جذبہ وطن کے لئے بیدار کرتے ،اور اپنے اقوال اور حوالہ سے ، شاعر انہ انداز سے عظیم شاعر نے اپنے کلام سے ایک حب الوطن کا پیغام، اتحاد واخلاص، و تعاون کاپیغام قوم اور بنیاد پاکستان کے لئے چھوڑ گئے وہ الفاظ آج بھی ہماری روح میں اترجاتے ہیں ۔



    دو دوستوں کی مخلصانہ صداقت اور وطن کی محبت رنگ لائی ۔ پاکستان نے خوب ترقی حاصل کی ۔ اور آپ نے ملک کو علم و امن کی روشنی دکھائی ، نہ ہی کوئی تلوار تھی نہ ہی کوئی ہتھیار تھا ۔ اپنی حکمت اور نیک ارادوں میں صرف سچائی اور خلوص نیت جو وطن کے لئے تھی وہی کامیاب پاکستان کا راز تھا ۔ بابائے قوم کا کیا ہی وہ دور تھا جس میں وہ اپنی شخصیت کے معیار پر فرنگیوں کو مات دے دیتے تھے ۔ اور ہندؤں کی سیاست کا تختہ منٹوں میں ہی پلٹ دیتے تھے۔ بناء کسی ہتھیارکے ، اپنی ذکاء کے پیکر میں محبت و امن کی فضاء قائم رکھنے والا یہ جانباز ویر 11 ستمبر ء1948 کو خالقَ ِحقیقی کے پاس کوچ کر گئے ۔ کامیابی اور کامرانی کا ادھورا سفر ان کی آنکھوں میں ہی رہ گیا ۔ اس وطن عزیز کو چھوڑ کر وہ چلیں گئے ۔ اور پاکستان نے ایک قیمتی جوہر کھو دیا ۔ لیکن آج بھی وہ سب کے دلوں میں زندہ ہے ۔ اور آج بھی روح قائد کی قیامِ پاکستان کے خواب دیکھ رہی ہے ۔ جس کی تکمیل آج وطن چاہتاہے ۔ جس کا مقصد حیات قوم کا ہر مخلص باشندہ چاہتا ہے ۔ جو آپ کی آنکھوں میں ہی ادھورا رہ گیا ۔ اور پاکستان کی ترقی یافتہ بنیاد کو آگے بڑھانے والا نہ کوئی حکمران ہمیں ملا، اور نا ہی پاکستان کو امن سے قیام میں لانے والا کوئی آپ جیسا قائد ملا ، بابائے قوم جیسا کوئی محافظ اس ملک کو پھر دوبارہ نہ ملا ۔ تاریخ آج بھی آپ کی کوششیں اور شجاعت کی دلیلیں دیتی ہے ۔آپ کی طرح جو تاریخی شخصیت اور قومی ا من و تحفظ کے ساتھ آگے بڑھے ، آج ہم سب کی آنکھیں ببابائے قوم و علامہ اقبال جیسے شاعر کو ڈھونڈتی ہیں۔ لیکن حدِ افسوس نہ بابائے قوم اس ملک کو نہ ہی علامہ اقبال جیسا شاعر مل سکا۔ سینکڑوں کے دلوں میں زندہ رہنے والی یہ دو اعلی شخصیات کو آج کی تاریخ سلام کرتی ہے ۔ پوری قوم سلام کرتی ہیں ۔اور عقیدت و محبت کے ساتھ محمد علی جناح کی پیدائشی تاریخ پر فخر کرتی ہے ۔ اور قائد اعظم اسپیشل بنانے کی دلی کوشش میں جڑی رہتی ہے ۔ آؤ بابائے قوم کی محبت کی خاطر آؤ آج ایک عہدکرتے ہے ۔کے ہم خود کو قائد جیسا بنانے کی پرُ زور کوشیش کریں گے اور قائد اعظم رحمۃ اللہ علیہ کی خلوص نیت و حب وطن کے ساتھ ، ہم خود اپنے دل میں بابائے قوم جیسا شخص ڈھونڈیں گے ۔ بغیر ایک دوسرے پر انگلی اٹھائے ۔ یہ مت سوچو کہ پاکستان نے آپ کو کیا دیا یہ سوچو کے ہم نے پیارے پاکستان کے لئے کیا کیا ۔۔۔؟ اور یہی سے شروع ہوگی ہماری پہچان ، اور تبھی ہم وطن عزیز کو ملک کے دشمنوں سے محفوظ رکھیں گے ۔ ذرا سوچو جب ایک منفردشخص محمد علی جناح جیسا بن کر ہمیں آزاد وطن ِپاکستان دیتا ہے ، تو کیا ہم ان جیسے بن جائیں اگر اور ہم سب ایک ہوجایئں تو ہماری ایکتا و تعاون سے
    اس مسلم ملک کے ہر بچے کو قائد جیسا بنا سکتے ہیں ۔ قومی ترانہ کے ساتھ اس ملک میں امن و سکوں سے محبت و تعاون کی بارشیں ہوگی ۔ اور امن و سکون کی روشنی سے یہ ملک ہمیشہ سرشار رہے گا ۔ اور دشمنوں سے بھی محفوظ انشاء اللہ ۔۔۔۔

    چلیں آج ہم ہمت سے حوصلوں کی بنیاد کا وطن کی خاطر اس مقصد حیات کہ لئے کوشش کا پہلا قدم اٹھاتے ہیں ۔ آج ہمارے ملک کو ہمارے قائد جیسی شخصیت کی ضرورت ہے ۔ علم و وفاء کے ساتھ حب ِ وطن کو امن و امان سے روشن کرنا ہے ۔ نعرے لگا کر اور شور و غل مچا کر کوئی جانباز نہیں بن جاتا ۔ اس سے تو اور فساد کی ہی امید بنتی ہے ۔ محبت تو خاموشی کی زباں سے بھی اپنا سفر مکمل کرتی ہے ۔ اور وطن عزیز کی محبت سے بڑھ کر کیا کوئی اور محبت ہوگی ۔!! ؟


    ہمیں تکمیل پاکستان کا خواب جو ہمارےقائد اعظم نے دیکھا تھا اسے پورا کرنا ہے۔ بنا شور و فوضی و فساد کے ۔ جو درس امن کا وہ چھوڑ گئے اسی پر چلنا ہے خاموشی کے ساتھ ،اور اپنے کردار میں بابائےقوم کو لانا ہے ۔ محبت کا یہ رابطہ اپنے ملک کے لئے کرنے کی کو شش تو کریں۔ اس وطن کے امن کو قائم رکھنے کی کیا ادنیٰ سی کوشش ہم نہیں کر سکتے ۔؟ ، دشمن ہمیں آپس میں الجھانے کے لئے جال پھینک رہے ہیں۔ لیکن خود مختاری بابائے قوم کی ہم نے واقعی کھو دی تو اس وطن کی حفاظت کون کرے گا ۔۔۔؟ اور اس عزیز وطن کی رہنمائی میں اپنا کردار ادا کرکے آنے والی نسلوں کو ہم کیا مکمل پاکستان کی خوشحالی و امن کا سبق کیسے سنا سکیں گے ۔؟ ضرورت ہے بہت ملک کو آپ کی دعا اور وفا کی اور حب الو طن کی۔ آپ کے دل کو بھی بابائے قوم کا وہ مخلصانہ جذبہء ملک اور قوم کے لئے بیدار کرنا ہے ۔ اور اسی حکمت سے قیام پاکستان کا ادھورا خواب مکمل کرنا ہے ۔ آپ کا مقصد ِ حیات پورا کرنا ہے ۔ جس طرح ہمارے قائد کے کردار میں تھا ۔ اس مقصد کی تکمیل کے لئے پہلا قدم ہم میں سے کوئی رکھےتو ملک میں محمد علی جناح جیسے مخلص ہر جگہ ملے گے ۔ اور ملک کی خوشحالی و امن پھر سے بہت جلد لوٹ آیئے گی اور باباء قوم کی بنیاد کو کسی کی نظر نا لگے گی انشاء اللہ آمین

    عمل سے زندگی بنتی ہے جنت بھی جہنم بھی اور اختیار ہمارے ہاتھ میں ہے ۔۔۔؟

    اے باباء قوم اے جانباز ویر تجھے شجاعت و محبت بھری سالگرہ مبارک ہو

    لاکھوں کے دلوں میں آج بھی زندہ ہے تو اس قوم کو یوم ِ قائد مبارک ہو

    یو دی ہمیں آزادی کے دنیا رہ گئی حیران

    اے قائد اعظم تیرا احسان ہے احسان

    تیرا احسان ہے تیرا احسان

    لڑنے کا دشمنوں سے عجب ڈھنگ نکالا

    نہ توپ نہ بندوق نہ تلوار نہ بھالا

    سچائی کے انمول اصولوں کو سنبھالا

    ہے تیرے پیغام میں جادو تھا نرالا

    ایمان والے چل پڑے سن کے تیرا پیغام

    اے قائد اعظم تیرا احسان ہے احسان

    تیرا احسان ہے تیرا احسان

    رائٹر ریشم

    Last edited by *resham*; 17-12-2012 at 01:35 AM.

  2. #2
    Join Date
    Jun 2010
    Location
    Jatoi
    Posts
    59,925
    Mentioned
    201 Post(s)
    Tagged
    9827 Thread(s)
    Thanked
    6
    Rep Power
    21474903

    Default Re: بابائے قوم کا مقصد حیات ۔۔۔

    Bohatt Khoobsoorrattt





    تیری انگلیاں میرے جسم میںیونہی لمس بن کے گڑی رہیں
    کف کوزه گر میری مان لےمجھے چاک سے نہ اتارنا

  3. #3
    Join Date
    Sep 2010
    Location
    Mystic falls
    Age
    29
    Posts
    52,044
    Mentioned
    326 Post(s)
    Tagged
    10829 Thread(s)
    Thanked
    5
    Rep Power
    21474896

    Default Re: بابائے قوم کا مقصد حیات ۔۔۔

    bohat khubsurat tehreer likhi parh kar acha likha
    aey quaid tera ehsaan hai

    eq2hdk - بابائے قوم کا مقصد حیات ۔۔۔

  4. #4
    Hidden words's Avatar
    Hidden words is offline "-•(-• sтαү мιηε •-)•-"
    Join Date
    Nov 2011
    Location
    Kisi ki Ankhon Aur Dil Mein .......:P
    Posts
    56,915
    Mentioned
    322 Post(s)
    Tagged
    10949 Thread(s)
    Thanked
    4
    Rep Power
    21474899

    Default Re: بابائے قوم کا مقصد حیات ۔۔۔

    bohaat umda likha reshu
    suno hworiginal - بابائے قوم کا مقصد حیات ۔۔۔
    575280tvjrzkx7ho zps19409030 - بابائے قوم کا مقصد حیات ۔۔۔ღ∞ ι ωιll αlωαуѕ ¢нσσѕє уσυ ∞ღ 575280tvjrzkx7ho zps19409030 - بابائے قوم کا مقصد حیات ۔۔۔

  5. #5
    Join Date
    Jan 2012
    Location
    Lost...
    Posts
    17,151
    Mentioned
    135 Post(s)
    Tagged
    11596 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    3865501

    Default Re: بابائے قوم کا مقصد حیات ۔۔۔

    bohat ba-kamal tareqay se tehreer kiya aap ne....
    Teri ankhon uworiginal - بابائے قوم کا مقصد حیات ۔۔۔

  6. #6
    Join Date
    Jul 2010
    Location
    Karachi....
    Posts
    31,280
    Mentioned
    41 Post(s)
    Tagged
    6917 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    21474875

    Default Re: بابائے قوم کا مقصد حیات ۔۔۔

    bht hi khoobsurat likha hai dear


    Ik Muhabbat ko amar karna tha.....

    to ye socha k ..... ab bichar jaye..!!!!


  7. #7
    Join Date
    Apr 2011
    Location
    pakistan
    Posts
    3,290
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    2597 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    541177

    Default Re: بابائے قوم کا مقصد حیات ۔۔۔

    bht acha likha hy

  8. #8
    Join Date
    Sep 2012
    Location
    Bermuda Triangles
    Posts
    3,039
    Mentioned
    3 Post(s)
    Tagged
    3495 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    9

    Default Re: بابائے قوم کا مقصد حیات ۔۔۔

    bahot zabardast likha likhti rahen resham g
    viper siggi - بابائے قوم کا مقصد حیات ۔۔۔

  9. #9
    Join Date
    Apr 2012
    Location
    Karachi/Lahore Pakistan
    Posts
    12,439
    Mentioned
    34 Post(s)
    Tagged
    9180 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    249126

    Default Re: بابائے قوم کا مقصد حیات ۔۔۔

    buhat umdaa...superb

  10. #10
    *jamshed*'s Avatar
    *jamshed* is offline کچھ یادیں ،کچھ باتیں
    Join Date
    Oct 2010
    Location
    every heart
    Posts
    14,586
    Mentioned
    138 Post(s)
    Tagged
    8346 Thread(s)
    Thanked
    4
    Rep Power
    21474858

    Default Re: بابائے قوم کا مقصد حیات ۔۔۔

    bohat zabardast

Page 1 of 2 12 LastLast

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •