Results 1 to 2 of 2

Thread: ایک مجذوب اُداسی میرے اندر گُم ہے

  1. #1
    Join Date
    Nov 2012
    Location
    Bahawalpur
    Age
    25
    Posts
    58
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    62 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    0

    Default ایک مجذوب اُداسی میرے اندر گُم ہے

    ایک مجذوب اُداسی میرے اندر گُم ہے
    اس سمندر میں کوئی اور سمندر گُم ہے

    بے بسی کیسا پرندہ ہے تُمھیں کیا معلوم
    اُسے معلوم ہے جو میرے برابر گُم ہے

    چرخِ سو رنگ کو فُرصت ہو تو ڈھونڈے اُس کو
    نیلگوں سوچ میں جو مست قلندر گُم ہے

    دھُوپ چھاؤں کا کوئی کھیل ہے بینائی بھی
    آنکھ کو ڈھونڈ کے لایا ہوں تو منظر گُم ہے

    سنگریزوں میں مہکتا ہے کوئی سُرخ گُلاب
    وُہ جو ماتھے پہ لگا تھا وُہی پتھر گُم ہے

    ایک مدفون دفینہ اِنہیں اطراف میں تھا
    خاک اُڑتی ہے یہاں اور وُہ گوہر گُم ہے
    life is not a bed of roses

  2. #2
    Join Date
    Oct 2012
    Location
    saudi arabia
    Posts
    1,125
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    719 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    7

    Default Re: ایک مجذوب اُداسی میرے اندر گُم ہے

    kHo0b...

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •