Results 1 to 2 of 2

Thread: Umaira Ahmed Ke Novel Thora Sa Asmaan Se

  1. #1
    *jamshed*'s Avatar
    *jamshed* is offline کچھ یادیں ،کچھ باتیں
    Join Date
    Oct 2010
    Location
    every heart
    Posts
    14,586
    Mentioned
    138 Post(s)
    Tagged
    8346 Thread(s)
    Thanked
    4
    Rep Power
    21474858

    Default Umaira Ahmed Ke Novel Thora Sa Asmaan Se


    عمیرہ احمد کے ناول تھوڑا سا آسمان

    زندگی میں ہمارے ساتھ چلنے والا ہر شخص اس لئے نہیں ہوتا کہ ہم ٹھوکر کھا کر گریں اور ہمیں سنبھال لے، ہاتھ تھام کر، گرنے سے پہلے یا بازو کھینچ کر گرنے کے بعد، بعض لوگ زندگی کے اس سفر میں ہمارے ساتھ صرف یہ دیکھنے کے لئے ہوتے ہیں کہ ہم کب کہاں اور کیسے گرتے ہیں، لگنے والی ٹھوکر ہمارے گھٹنوں کو زخمی کرتی ہے یا ہاتھوں کو ، خاک ہمارے چہرے کو گندا کرتی ہے یا کپڑوں کو۔

    ( عمیرہ احمد کے ناول تھوڑا سا آسمان )

  2. #2
    Join Date
    May 2010
    Location
    Karachi
    Age
    22
    Posts
    25,472
    Mentioned
    11 Post(s)
    Tagged
    6815 Thread(s)
    Thanked
    2
    Rep Power
    21474869

    Default re: Umaira Ahmed Ke Novel Thora Sa Asmaan Se

    theak..
    tumblr na75iuW2tl1rkm3u0o1 500 - Umaira Ahmed Ke Novel Thora Sa Asmaan Se

    Hum kya hain

    Hmari Muhabatayn kya hain
    kya chahtay hain
    kya patay hain..

    -Umera Ahmad (Peer-e-Kamil)


Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •