Results 1 to 2 of 2

Thread: یہ 618ھ کا واقعہ ہے

  1. #1
    Join Date
    Jun 2010
    Location
    Jatoi
    Posts
    59,925
    Mentioned
    201 Post(s)
    Tagged
    9827 Thread(s)
    Thanked
    6
    Rep Power
    21474903

    Default یہ 618ھ کا واقعہ ہے


    یہ 618ھ کا واقعہ ہے جب مشہور بزرگ حضرت شیخ جلال الدین تبریزی رحمتہ ﷲ علیہ بدایوں میں مقیم تھے اور بابا فرید رحمتہ ﷲ علیہ آپ سے ملنے کے لئے وہاں تشریف لے گئے تھے۔ ایک دن بابا فرید رحمتہ ﷲ علیہ حضرت شیخ جلال الدین تبریزی کی خدمت میں حاضر تھے۔ حضرت شیخ اچانک اٹھے اور مکان سے نکل کر اپنے دروازے پر بیٹھ گئے۔ بابا فرید رحمتہ اﷲ علیہ نے بھی آپ کی تقلید کی پھر حضرت شیخ جلال الدین تبریزی رحمتہ ﷲ علیہ کسی موضوع پر گفتگو کرتے رہے اور حضرت بابا فرید رحمتہ ﷲ علیہ آپ کی گفتگو بہت غور سے سنتے رہے۔
    بات کرتے کرتے یکایک حضرت شیخ تبریزی رحمتہ ﷲ علیہ خاموش ہوگئے اور سامنے کی طرف دیکھنے لگے۔ حضرت بابا فرید رحمتہ ﷲ علیہ نے بھی اسی طرف دیکھنا شروع کردیا جدھر حضرت جلال الدین تبریزی رحمتہ ﷲ علیہ کسی خاص چیز کا مشاہدہ کررہے ہوں گے مگر وہاں کوئی موجود نہیں تھا۔ بس ایک وہی بیچنے والا دیہاتی نام انسان تھا جو آوازیں لگا لگا کر اپنا دہی بیچ رہا تھا۔
    پھر جب وہ دہی بیچنے والا حضرت شیخ جلال الدین تبریزی رحمتہ ﷲ علیہ کے قریب سے گزرا تو آپ نے بلند آواز میں اسے مخاطب کرکے فرمایا ’’کیا بیچ رہے ہو؟‘‘
    ’’دہی بیچ رہا ہوں‘ خریدوگے؟‘‘ اس شخص نے بڑی بے نیازی کے ساتھ تلخ لہجے میں کہا۔
    حضرت بابا فرید رحمتہ ﷲ علیہ کو اس دیہاتی انسان کا یہ گستاخانہ لہجہ بہت ناگوار گزرا مگر آپ حضرت شیخ جلال الدین تبریزی رحمتہ ﷲ علیہ کے احترام میں خاموش رہے۔
    دراصل دہی فروخت کرنے والا وہ شخص بدایوں کا مشہور ڈاکو ’’مولا‘‘ تھا۔ اس نے چوروں کی ایک جماعت بنائی تھی جو دن کے وقت مزدور پیشہ لوگوں کے لباس میں محلہ در محلہ مختلف چیزیں بیچتے پھرتے تھے اور رات کے اندھیرے میں ڈاکے ڈالتے تھے۔ اگرچہ ’’مولا‘‘ ان کا سردار تھا لیکن اس نے بھی ایک دہی فروش کا روپ دھار رکھا تھا اور اس وقت حضرت شیخ جلال الدین تبریزی رحمتہ ﷲ علیہ کے سامنے سے آوازیں لگاتا ہوا گزر رہا تھا۔ ڈاکوئوں کا سردار ہونے کی وجہ سے ’’مولا‘‘ کے لہجے میں تلخی تھی۔ وہ سمجھ رہا تھا کہ اس کا مخاطب بدایوں کی گلیوں میں گھومنے والا کوئی عام فقیر ہے۔ اس لئے اس کے طرز گفتار سے اکھڑ پن جھلکنے لگا تھا۔
    ’’ہاں! ہاں! خریدیں گے‘‘ حضرت شیخ جلال الدین تبریزی رحمتہ ﷲ علیہ نے مسکراتے ہوئے فرمایا ’’تیرا سب کچھ خرید لیں گے‘‘
    مولا جیسا ڈاکو اور جابر و سفاک انسان ان الفاظ کا متحمل کس طرح ہوسکتا تھا۔ حضرت شیخ تبریزی رحمتہ ﷲ علیہ کی بات سن کر اس کے بڑھتے ہوئے قدم رک گئے اور اس نے سر پر رکھے ہوئے دہی کے مٹکے کو ذرا سا ترچھا کرکے یہ دیکھنے کی کوشش کی کہ اس سے اس لہجے میں بات کرنے والا آخر کون شخص ہے؟ مگر جیسے ہی ’’مولا‘‘ کی نظر حضرت شیخ جلال الدین تبریزی رحمتہ ﷲ علیہ کے رخ روشن پر پڑی‘ وہ کانپ کر رہ گیا۔ اس کے جسم کی لرزش اتنی تیز تھی کہ ’’مولا‘‘ اپنا توازن برقرار نہ رکھ سکا اور مٹکا اس کے ہاتھ سے چھوٹ کر زمین پر گر پڑا۔ دوسرے ہی لمحے حضرت بابا فرید رحمتہ ﷲ علیہ نے دیکھا کہ سارا دہی مٹی میں مل چکا ہے اور ٹھیکرے ادھر ادھر بکھر گئے ہیں۔
    ’’اب کیا بیچوگے؟‘‘ حضرت شیخ جلال الدین تبریزی رحمتہ ﷲ علیہ نے اس تبسم کے ساتھ فرمایا ’’اپنی ساری متاع تو خاک میں ملادی‘ اب تمہارے پاس فروخت کرنے کو کیا باقی بچا ہے؟‘‘
    ’’مولا‘‘ شاید عالم تحیر میں کسی بے جان مجسمے کی مانند کھڑا تھا۔ پھر جب اس کی حیرت کا طلسم ٹوٹا تو بے اختیار کہنے لگا ’’دنیا میں ایسے لوگ بھی ہوتے ہیں؟‘‘
    حضرت شیخ جلال الدین تبریزی رحمتہ ﷲ علیہ نے ’’مولا‘‘ کی بات کا کوئی جواب نہیں دیا۔ بس خاموشی سے اس کی بدلتی ہوئی حالت کو دیکھتے رہے۔
    چند لمحوں کے بعد مولا دوبارہ کہنے لگا ’’ابھی میرے پاس بیچنے کو بہت کچھ ہے۔ میں اپنے رسم و رواج بیچوں گا‘ مذہب بیچوں گا‘ یہاں تک کہ تمہارے ہاتھ اپنے دل و جان بھی بیچ ڈالونگا‘ خدا کے لئے واپس نہ لوٹائو۔ مجھے خرید لو‘ بے مول خرید لو‘‘ یہ کہہ کر مولا آگے بڑھا اور حضرت شیخ جلال الدین کے قدموں پر سر رکھ کر رونے لگا۔
    حضرت شیخ نے بدایوں کے سنگ دل ڈاکو کے لرزتے ہوئے جسم پر ایک نظر ڈالی اور پھر نہایت محبت آمیز لہجے میں فرمایا ’’اٹھو! تم نے سب کچھ بیچ ڈالا اور ہم نے سب کچھ خرید لیا

  2. #2
    Join Date
    Sep 2011
    Location
    Jadoo Nagri
    Posts
    19,713
    Mentioned
    198 Post(s)
    Tagged
    8340 Thread(s)
    Thanked
    10
    Rep Power
    21474862

    Default Re: یہ 618ھ کا واقعہ ہے

    Subhan Allah

    Last edited by ~Maliha~; 05-02-2013 at 09:59 AM.

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •