کراچی (اسٹاف رپورٹر) پاکستان فٹ بال فیڈریشن کے سربراہ مخدوم سید فیصل صالح حیات نے میونخ میں فٹ بال کی عالمی تنظیم فیفا کے سربراہ سیپ بلاٹر سے ملاقات کی اور پاکستان کیلئے گول پروجیکٹ سمیت دیگر اقدامات پر ان کا شکریہ ادا کیا۔ اس بات کا اظہار پی ایف ایف کی جانب سے جاری کئے جانے والے بیان میں کیا گیا۔ پی ایف ایف کے مطابق فیصل صالح حیات خصوصی دعوت پر فیفا کی جانب سے بلائے گئے اجلاس میں شرکت کیلئے میونخ گئے ہیں جہاں وہ فیفا کی اسٹرٹیجک کمیٹی کے اجلاس میں شرکت کریں گے۔ اجلاس سے قبل فیصل صالح حیات نے میونخ (سوئزر لینڈ) میں صدر فیفا جے ایس بلاٹر سے ملاقات کی۔ صدر پی ایف ایف کو فیفا کی طرف سے ہونے والے فیفا اسٹرٹیجک کمیٹی کے دوسرے اجلاس میں شرکت کرنے کی دعوت دی گئی تھی۔ اجلاس کی اہم بات یہ ہے کہ اسٹرٹیجک کمیٹی فیفا کی واحد کمیٹی ہے جس کی صدارت صدر فیفا خود کرتے ہیں۔ صدر فیفا نے پی ایف ایف کے سربراہ کی پاکستان میں آٹھ فیفا گول پروجیکٹ/ اکیڈمیوں کے سلسلے میں کئے گئے اقدامات کو سراہتے ہوئے کہا کہ ان پروجیکٹ کی تکمیل سے پاکستان میں فٹ بال کے کھیل میں جدت اور وسعت آئے گی۔ صدر فیفا نے فیصل صالح حیات کی بہ حیثیت ممبر اے ایف سی ایگزیکٹو کمیٹی اور چیئرمین اے ایف سی لیگل کمیٹی خدمات کے حوالے سے کہا کہ اس سے ایشیا میں فٹ بال کی ترقی اور ترویج میں خاطر خواہ اضافہ ہو گا۔ انہوں نے صدر پی ایف ایف کے فیفا اسٹرٹیجک کمیٹی میں اہم رول ادا کرنے پر فیصل صالح حیات کے کردار کی تعریف بھی کی۔ اس ملاقات کے دوران صدر پی ایف ایف نے صدر فیفا کے پاکستان کے لئے آٹھ گول پروجیکٹ میں شروع کروانے پر ان کا شکریہ ادا کیا۔ اس موقع پر جے ایس بلاٹر نے صدر پی ایف ایف کو پاکستان کے لئے مصنوعی ٹرف کی فراہمی کو فیفا کے آئندہ بجٹ میں مختص کرنے کی یقین دہانی کرائی۔ صدر فیفا نے مزید کہا کہ وہ پاکستان کے دورے پر عنقریب آئیں گے۔