Results 1 to 2 of 2

Thread: بھولے بسرے کچھ چہرے یوں بھی یاد آتے ہیں

  1. #1
    *jamshed*'s Avatar
    *jamshed* is offline کچھ یادیں ،کچھ باتیں
    Join Date
    Oct 2010
    Location
    every heart
    Posts
    14,586
    Mentioned
    138 Post(s)
    Tagged
    8346 Thread(s)
    Thanked
    4
    Rep Power
    21474858

    Default بھولے بسرے کچھ چہرے یوں بھی یاد آتے ہیں

    بھولے بسرے کچھ چہرے یوں بھی یاد آتے ہیں
    جیسے لوگ بے مقصد تیلیاں جلاتے ہیں

    خود ہی چل کے جاتے ہیں قریۂ ہزیمت تک
    لوگ اپنی چالوں سے آپ مات کھاتے ہیں

    خال و خد کے شیدائی اپنے آپ کو اکثر
    روشنی بجھا کر ہی آئینہ دکھا تے ہیں

    سایہ دینے والے کو سائے کی طلب کیوں ہو
    پیڑ کب بدن اپنا دھوپ سے چراتے ہیں

    ہجر کی مسافت سے کب نجات مِلتی ہے
    اُس کو یاد کرتے ہی خود کو بھول جاتے ہیں

    اِک تعلّقِ خاطر اُس سے عمر بھر کا ہے
    دل کے ٹوٹنے سے کیا رشتے ٹوٹ جاتے ہیں

    جسم و جاں کو مل جَائے دامنِ اماں کوئی
    ہم اسی تصوّر میں دائرے بنا تے ہیں

    عہد کی کثافت میں نسلِ نو کو مت پھینکو
    لوگ اُجلے پیرا ہن داغ سے بچاتے ہیں

    راز بے خیالی میں بارہا یہ ہوتا ہے
    عکس آئینے پر ہم رکھ کے بھول جاتے ہیں

  2. #2
    Join Date
    Apr 2012
    Location
    Karachi/Lahore Pakistan
    Posts
    12,439
    Mentioned
    34 Post(s)
    Tagged
    9180 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    249126

    Default Re: بھولے بسرے کچھ چہرے یوں بھی یاد آتے ہیں

    buht umdaa

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •