Results 1 to 5 of 5

Thread: Gar Charah Mere Zakham Jigar Ka Nahi Karte

  1. #1
    Join Date
    Jun 2010
    Location
    Jatoi
    Posts
    59,925
    Mentioned
    201 Post(s)
    Tagged
    9827 Thread(s)
    Thanked
    6
    Rep Power
    21474903

    Default Gar Charah Mere Zakham Jigar Ka Nahi Karte




    ‎1912عیسوی میں ملک سلطان محمود ٹوانہ نے قبلہِ عالم پیر سید مہر علی شاہ قدس سرہ کی خدمت میں اپنی کسی پریشانی کے متعلق عریضہ ارسال کیا اور عنوان پر یہ شعر لکھا،

    گر چارہ میرے زخمِ جگر کا نہیں کرتے،
    اچھا یہی کہہ دو کہ ہم اچھا نہیں کرتے،

    حضرت پیر مہر علی شاہ (رح) نے واپسی اپنے قلم مبارک سے یہ منظوم جواب ارسال کیا،

    اُس چشمِ سیاہ مدھ بھری پُر سحرِ و فِتن سے،
    سُلطان بھی اگر اُلجھیں __ تو اچھا نہیں کرتے،

    کہہ دیوے بھلا کیسے کوئی میرِ عرب (ص) سے،
    اچھا یہی کہہ دو کہ ______ ہم اچھا نہیں کرتے،

    ہے "مہر" _____ وفا طرز و ادا آلِ عبا کی،
    ہر گز نہ کہیں گے کہ ہم اچھا نہیں کرتے،

    حضورِ اعلیٰ پیر سید مہر علی شاہ صاحب۔،۔،





    تیری انگلیاں میرے جسم میںیونہی لمس بن کے گڑی رہیں
    کف کوزه گر میری مان لےمجھے چاک سے نہ اتارنا

  2. #2
    Join Date
    Feb 2009
    Location
    City Of Light
    Posts
    26,767
    Mentioned
    144 Post(s)
    Tagged
    10310 Thread(s)
    Thanked
    5
    Rep Power
    21474871

    Default Re: گر چارہ میرے زخمِ جگر کا نہیں کرتے،

    nice



    3297731y763i7owcz zps9ed156a3 - Gar Charah Mere Zakham Jigar Ka Nahi Karte

    MAY OUR COUNTRY PROGRESS IN EVERYWHERE AND IN EVERYTHING SO THAT THE WHOLE WORLD SHOULD HAVE PROUD ON US
    PAKISTAN ZINDABAD











  3. #3
    Join Date
    Feb 2008
    Location
    Islamabad, UK
    Posts
    88,507
    Mentioned
    1031 Post(s)
    Tagged
    9706 Thread(s)
    Thanked
    603
    Rep Power
    21474934

    Default Re: گر چارہ میرے زخمِ جگر کا نہیں کرتے،


  4. #4
    Join Date
    Jun 2010
    Location
    Jatoi
    Posts
    59,925
    Mentioned
    201 Post(s)
    Tagged
    9827 Thread(s)
    Thanked
    6
    Rep Power
    21474903

    Default Re: گر چارہ میرے زخمِ جگر کا نہیں کرتے،

    aapp donoo kaa shukriyaa





    تیری انگلیاں میرے جسم میںیونہی لمس بن کے گڑی رہیں
    کف کوزه گر میری مان لےمجھے چاک سے نہ اتارنا

  5. #5
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    Hijr
    Posts
    152,763
    Mentioned
    104 Post(s)
    Tagged
    8577 Thread(s)
    Thanked
    80
    Rep Power
    21474998

    Default Re: گر چارہ میرے زخمِ جگر کا نہیں کرتے،

    پھر یوں ہوا کے درد مجھے راس آ گیا

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •