Results 1 to 7 of 7

Thread: ایک زمین۔۔۔دو شاعر (فیض احمد فیض، محسن نقوی)۔۔۔ دو غزلیں

  1. #1
    Join Date
    Jun 2010
    Location
    Jatoi
    Posts
    59,925
    Mentioned
    201 Post(s)
    Tagged
    9827 Thread(s)
    Thanked
    6
    Rep Power
    21474903

    Default ایک زمین۔۔۔دو شاعر (فیض احمد فیض، محسن نقوی)۔۔۔ دو غزلیں


    ایک زمین۔۔۔دو شاعر (فیض احمد فیض، محسن نقوی)۔۔۔ دو غزلیں

    اردو شاعری کے دو بڑے نام، فیض احمد فیض اور محسن نقوی کی دو خوبصورت غزلیں، جو ایک ہی زمین میں ہیں۔

    فیض احمد فیض کی غزل ان کی کتاب "شامِ شہر یاراں" میں شامل ہے، جو مکتبۂ کارواں لاہور نے 1978ء میں شائع کی تھی جبکہ محسن نقوی کی غزل اُن کی کتاب "طلوعِ اشک" میں شامل ہے، جو 1992ء میں شائع ہوئی تھی۔

    اس لیے زیادہ قرینِ قیاس بات یہی ہے کہ محسن نقوی نے فیض احمد فیض کی زمین میں غزل لکھی ہے۔

    دونوں غزلوں بیحد خوبصورت ہیں اور پیشِ خدمت ہیں۔

    فیض احمد فیض کی غزل:

    حسرتِ دید میں گزراں ہیں زمانے کب سے
    دشتِ اُمّید میں گرداں ہیں دوانے کب سے

    دیر سے آنکھ پہ اُترا نہیں اشکوں کا عذاب
    اپنے ذمّے ہے ترا قرض نہ جانے کب سے

    کس طرح پاک ہو بے آرزو لمحوں کا حساب
    درد آیا نہیں دربار سجانے کب سے

    سر کرو ساز کہ چھیڑیں کوئی دل سوز غزل
    "ڈھونڈتا ہے دلِ شوریدہ بہانے کب سے"

    پُر کرو جام کہ شاید ہو اِسی لحظہ رواں
    روک رکھا ہے جو اک تیر قضا نے کب سے

    فیضؔ پھر کب کسی مقتل میں کریں گے آباد
    لب پہ ویراں ہیں شہیدوں کے فسانے کب سے

    محسن نقوی کی غزل:

    جستجو میں تیری پھرتا ہوں نجانے کب سے؟

    آبلہ پا ہیں مرے ساتھ زمانے- کب سے!

    میں کہ قسمت کی لکیریں بھی پڑھا کرتا تھا

    کوئی آیا ہی نہیں ہاتھ دکھانے کب سے

    نعمتیں ہیں نہ عذابوں کا تسلسل اب تو!

    مجھ سے رُخ پھیر لیا میرے خدا نے کب سے

    جان چھٹرکتے تھے کبھی خود سے غزالاں جن پر

    بھول بیٹھے ہیں شکاری وہ نشانے کب سے

    وہ تو جنگل سے ہواؤں کو چُرا لاتا تھا

    اُس نے سیکھے ہیں دیے گھر میں جلانے کب سے؟

    شہر میں پرورشِ رسمِ جنوں کون کرے؟

    یوں بھی جنگل میں یاروں کے ٹھکانے کب سے؟

    آنکھ رونے کو ترستی ہے تو دل زخموں کو

    کوئی آیا ہی نہیں احسان جتانے کب سے

    جن کے صدقے میں بسا کرتے تھے اُجڑے ہوئے لوگ

    لُٹ گئے ہیں سرِ صحرا وہ گھرانے کب سے

    لوگ بے خوف گریباں کو کُھلا رکھتے ہیں

    تِیر چھوڑا ہی نہیں دستِ قضا نے کب سے

    جانے کب ٹوٹ کے برسے گی ملامت کی گھٹا؟

    سر جھکائے ہوئے بیٹھے ہیں دِوانے کب سے

    جن کو آتا تھا کبھی حشر جگانا محسؔن

    بختِ خفتہ کو نہ آئے وہ جگانے کب سے!





    تیری انگلیاں میرے جسم میںیونہی لمس بن کے گڑی رہیں
    کف کوزه گر میری مان لےمجھے چاک سے نہ اتارنا

  2. #2
    Join Date
    Feb 2009
    Location
    City Of Light
    Posts
    26,767
    Mentioned
    144 Post(s)
    Tagged
    10310 Thread(s)
    Thanked
    5
    Rep Power
    21474871

    Default Re: ایک زمین۔۔۔دو شاعر (فیض احمد فیض، محسن نقوی)۔۔۔ دو غزلیں




    3297731y763i7owcz zps9ed156a3 - ایک زمین۔۔۔دو شاعر (فیض احمد فیض، محسن نقوی)۔۔۔ دو غزلیں

    MAY OUR COUNTRY PROGRESS IN EVERYWHERE AND IN EVERYTHING SO THAT THE WHOLE WORLD SHOULD HAVE PROUD ON US
    PAKISTAN ZINDABAD











  3. #3
    Join Date
    Sep 2011
    Location
    Jadoo Nagri
    Posts
    19,713
    Mentioned
    198 Post(s)
    Tagged
    8340 Thread(s)
    Thanked
    10
    Rep Power
    21474862

    Default Re: ایک زمین۔۔۔دو شاعر (فیض احمد فیض، محسن نقوی)۔۔۔ دو غزلیں

    Mohsin naqvi ki zyada achi hai

  4. #4
    Join Date
    Apr 2010
    Location
    k, s, a
    Posts
    14,631
    Mentioned
    215 Post(s)
    Tagged
    10286 Thread(s)
    Thanked
    84
    Rep Power
    1503265

    Default Re: ایک زمین۔۔۔دو شاعر (فیض احمد فیض، محسن نقوی)۔۔۔ دو غزلیں

    bhot allaa
    mohsin naqvi wali

  5. #5
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    Hijr
    Posts
    152,763
    Mentioned
    104 Post(s)
    Tagged
    8577 Thread(s)
    Thanked
    80
    Rep Power
    21474998

    Default Re: ایک زمین۔۔۔دو شاعر (فیض احمد فیض، محسن نقوی)۔۔۔ دو غزلیں

    Thanks 4 Sharing
    پھر یوں ہوا کے درد مجھے راس آ گیا

  6. #6
    Join Date
    Jun 2011
    Location
    China
    Posts
    4,833
    Mentioned
    29 Post(s)
    Tagged
    9237 Thread(s)
    Thanked
    2
    Rep Power
    21474847

    Default Re: ایک زمین۔۔۔دو شاعر (فیض احمد فیض، محسن نقوی)۔۔۔ دو غزلیں

    zbrdast
    Zindagi tu apnay he qadmun pe chalti hay Faraz
    Auron k Sahary tu Janazy utha kartay hain

  7. #7
    Join Date
    Jul 2011
    Location
    Lahore-Pakistan
    Posts
    1,636
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    944 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    21474844

    Default Re: ایک زمین۔۔۔دو شاعر (فیض احمد فیض، محسن نقوی)۔۔۔ دو غزلیں

    .one and only Mohsin Naqvi
    aik alag sa sukoon hai in k kalam main
    amazing
    sagar3 - ایک زمین۔۔۔دو شاعر (فیض احمد فیض، محسن نقوی)۔۔۔ دو غزلیں

    جانےکیسا رشتہ ہےمیرا اسکیذاتکےساتھ
    وہذرا بھیخاموشہوتوسانس ٹھہرسی جاتی ہے




Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •