Results 1 to 2 of 2

Thread: کبھی یوں ملیں کوئی مصلحت کوئی خوف دل میں ذرا نہ ہو

  1. #1
    Join Date
    Nov 2008
    Location
    اسلامی جمہوریہ پاکستان
    Posts
    3,460
    Mentioned
    273 Post(s)
    Tagged
    8176 Thread(s)
    Thanked
    90
    Rep Power
    1073759

    exclaim کبھی یوں ملیں کوئی مصلحت کوئی خوف دل میں ذرا نہ ہو

    [size=3 div id=]
    کبھی یوں ملیں کوئی مصلحت کوئی خوف دل میں ذرا نہ ہو
    مجھے اپنی کوئی خبر نہ ہو تجھے اپنا کوئی پتہ نہ ہو

    کبھی دھوپ دے کبھی بدلیاں دل وجاں سے دونوں قبول ھیں
    مگر اس محل میں نہ قید کر جہاں زندگی کی ہوا نہ ہو

    وہ ہزار باغوں کا باغ ہو تری برکتوں کی بہار سے
    جہاں کوئی شاخ ہری نہ ہو جہاں کوئی پھول کھلا نہ ہو

    ترے اختیار میں کیا نہیںمجھے اس طرح سے نواز دے
    یوں دعائیں میری قبول ہوں مرے لب ہی کوئی دعا نہ ہو

    کبھی ہم بھی اس کے قریب تھے دل وجاں سےبڑھ کر عزیز تھے
    مگر آج ایسے ملا ھے وہ کبھی پہلے جیسے ملا نہ ہو
    [/size]
    2v1u8md - کبھی یوں ملیں کوئی مصلحت کوئی خوف دل میں ذرا نہ ہو

  2. #2
    Join Date
    Jul 2010
    Location
    Karachi....
    Posts
    31,280
    Mentioned
    41 Post(s)
    Tagged
    6917 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    21474875

    Default Re: کبھی یوں ملیں کوئی مصلحت کوئی خوف دل میں ذرا نہ ہو

    zbrdast


    Ik Muhabbat ko amar karna tha.....

    to ye socha k ..... ab bichar jaye..!!!!


Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •