Results 1 to 4 of 4

Thread: Sahir Oo Mere Sahir

  1. #1
    Join Date
    Jun 2010
    Location
    Jatoi
    Posts
    59,925
    Mentioned
    201 Post(s)
    Tagged
    9827 Thread(s)
    Thanked
    6
    Rep Power
    21474903

    Default Sahir Oo Mere Sahir


    ساحر او مرے ساحر
    ________________

    26/27 اکتوبر کی درمیانی رات دو بجے کے قریب ایک فون آیا کہ ساحر لدھیانوی نہیں رہے تو پورے بیس دن پہلے کی وہ رات اس شب میں مل گئی جب میں بلغاریہ میں تھی۔ ڈاکٹروں نے کہا تمہارے دل کی حالت تشویشناک ہے۔

    وقت سامنے آگیا جب دلی میں پہلی ایشین رائٹرز کانفرنس ہوئی تھی شاعروں اور ادیبوں کو ان کے ناموں کے ڈیلی گیٹ "بیج" دئيے گۓ جو سب نے اپنے کوٹوں پر لگا رکھے تھے۔ ساحر نے اپنے کوٹ پر میرے نام والا "بیج" لگا لیا تھا اور اپنے نام کا "بیج" اپنے کوٹ سے اتار کر میرے کوٹ پر لگا دیا تھا اس وقت کسی کی نظر پڑی اور اس نے کہا ہم نے غلط "بیج" لگا رکھے ہيں۔ ساحر ہنس دیا تھا کہ بیج دینے والوں سے غلطی ہوئی ہو گی۔ لیکن اس غلطی کو ہم نے درست کرنا تھا نہ کیا۔ اب برسوں بعد رات کو دو بجے خبر سنی کہ ساحر نہيں رہے تو لگا جیسے موت نے اپنا فیصلہ اس بیج کو پڑھ کر کیا جو میرے نام والا تھا اور ساحر کے کوٹ پر لگا ہوا تھا۔

    میری اور ساحر کی دوستی میں کبھی بھی الفاظ حائل نہیں ہوۓ۔ یہ دو خاموشیوں کا ایک حسیں رشتہ تھا۔ میں نے اس کے لیے جو نظمیں کہی تھیں اس مجموعہ کلام کو ساہیتہ اکاڈمی ایوارڈ ملا۔ پریس والے میری تصویریں لینے لگے۔ میں نے اس وقت محسوس کیا کہ میں کاغذ پر کچھ لکھ رہی ہوں۔

    فوٹو گرافر جب تصویر لے کر چلے گۓ تو کاغذ اٹھا کر دیکھا تو اس پر بار بار صرف ایک لفظ لکھا گیا تھا۔

    ساحر۔ ساحر۔ ساحر۔ ۔ ۔ ۔

    آج سے تیس برس پہلے جب "تلخیاں" کا ایک نیا ایڈیشن شائع ہو رہا تھا تو ساحر نے مجھے دیباچہ لکھنے کے لیے کہا تھا مگر میرے احساسات میری طرح خاموش رہے۔ نہ جانے کورے کاغذ کی یہ کیسی ضد تھی میں "تلخیاں" کا دیباچہ نہیں لکھ پائی۔

    کورے کاغذ کی آبرو آج بھی اسی طرح ہے۔ ميں نے اپنی سوانح عمری "رسیدی ٹکٹ" میں اپنے معاشقے کی داستان لکھی تھی۔ ساحر نے پڑھی تھی۔ لیکن اس کے بعد کسی بھی ملاقات میں رسیدی ٹکٹ کا ذکر نہ میری زبان پر آیا نہ ساحر کی زبان پر۔

    آج جب ساحر دنیا میں نہيں اور"تلخیاں" کا ایک نیا ایڈیشن چھپ رہا ہے۔ تو اس کے پبلشر نے چاہا ہے کہ اس کا دیبا+چہ لکھ دوں۔ نظموں کے بارے میں کچھ نہيں کہوں گی کیوں کہ ساحر کی شاعری کا مقام لوگوں کی روح اور تاریخ کی رگوں کا حصہ بن چکا ہے۔

    مجھ پر ساحر کا قرض تھا۔ اس دن سے جب اس نے اپنے مجموعہ کلام پر دیباچہ لکھنے کو کہا اور مجھ سے لکھا نہيں گيا۔ آج وہی قرض اتار رہی ہوں۔ اس کے جانے کے بعد دیرہو گئی! خدایا بہت دیر ہو گئی!

    مجھے یاد ہے ایک مشاعرے میں کچھ لوگ ساحر سے آٹو گراف لے رہے تھے جب چلے گئے اور میں اکیلی اس کے پاس کھڑی رہ گئی تو ہنستے ہوۓ میں نے اپنی ہتھیلی اس کے سامنے بڑھا دی۔ کورے کاغذ کی طرح۔ اور اس نے میری ہتھیلی پر اپنا نام لکھ دیا اور کہا۔"یہ بینک چيک پر میرے دستخط ہيں جو رقم چاہو لکھ لینا اور جب چاہو کیش کروا لینا۔" چآہے وہ کاغذ مانس کی ہتھیلی تھی۔ لیکن اس نے کورے کاغذ کا نصیب پایا تھا۔ اس لیے کوئی حرف اس پر نہيں لکھا جا سکتا تھا۔

    حرف تو آج بھی میرے پاس نہيں۔ یہ تو محض کورے کاغذ کی داستان ہے۔ اس داستان کی ابتداء بھی خاموش تھی اور ساری عمر اس کی انتہا بھی خاموش رہی۔ آج سے چالیس برس پہلے جب لاہور میں ساحر مجھ سے ملنے آتا تھا۔ آکر چپ چاپ سگریٹ پیتا رہتا۔ راکھ دانی جب سگریٹ کے ٹکڑوں سے بھر جاتی تھی تو وہ چلا جاتا اور اس کے جانے کے بعد میں اکیلی سگریٹ کے ان ٹکڑوں کو جلا کر پیتی تھی۔ میرے اور اس کے سگریٹ کا دھواں صرف ہوا میں ملتا تھا۔ سانسیں بھی ہوا میں ملتی رہیں اور نظموں کے لفظ بھی ہوا میں۔

    سوچ رہی ہوں ہوا کوئی بھی فاصلہ طے کر سکتی ہے وہ پہلے بھی شہروں کا فاصلہ طے کرتی تھی اب اس دنیا اور اس دنیا کا فاصلہ بھی ضرور طے کرے گی۔

    امرتا پریتم





    تیری انگلیاں میرے جسم میںیونہی لمس بن کے گڑی رہیں
    کف کوزه گر میری مان لےمجھے چاک سے نہ اتارنا

  2. #2
    Join Date
    Apr 2010
    Location
    k, s, a
    Posts
    14,631
    Mentioned
    215 Post(s)
    Tagged
    10286 Thread(s)
    Thanked
    84
    Rep Power
    1503265

    Default re: Sahir Oo Mere Sahir

    hoooooooooooooooon

  3. #3
    Join Date
    Aug 2008
    Location
    ~Near to Heart~
    Age
    28
    Posts
    78,521
    Mentioned
    3 Post(s)
    Tagged
    2881 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    21474924

    Default re: Sahir Oo Mere Sahir

    ahaaan :X
    2112kjd - Sahir Oo Mere Sahir

  4. #4
    *jamshed*'s Avatar
    *jamshed* is offline کچھ یادیں ،کچھ باتیں
    Join Date
    Oct 2010
    Location
    every heart
    Posts
    14,586
    Mentioned
    138 Post(s)
    Tagged
    8346 Thread(s)
    Thanked
    4
    Rep Power
    21474858

    Default re: Sahir Oo Mere Sahir

    bohat umda

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •