Results 1 to 4 of 4

Thread: اب قتل ہو کے تیرے مقابل سے آئے ہیں

  1. #1
    *jamshed*'s Avatar
    *jamshed* is offline کچھ یادیں ،کچھ باتیں
    Join Date
    Oct 2010
    Location
    every heart
    Posts
    14,586
    Mentioned
    138 Post(s)
    Tagged
    8346 Thread(s)
    Thanked
    4
    Rep Power
    21474858

    Default اب قتل ہو کے تیرے مقابل سے آئے ہیں

    اب قتل ہو کے تیرے مقابل سے آئے ہیں
    ہم لوگ سرخرو ہیں کہ منزل سے آئے ہیں
    شمعِ نظر، خیال کے انجم ، جگر کے داغ
    جتنے چراغ ہیں، تری محفل سے آئے ہیں
    اٹھ کر تو آ گئے ہیں تری بزم سے مگر
    کچھ دل ہی جانتا ہے کہ کس دل سے آئے ہیں
    ہر اک قدم اجل تھا، ہر اک گام زندگی
    ہم گھوم پھر کے کوچۂ قاتل سے آئے ہیں
    بادِ خزاں کا شکر کرو، فیض جس کے ہاتھ
    نامے کہاں بہار شمائل سے آئے ہیں



  2. #2
    Join Date
    Jan 2011
    Location
    pakistan
    Posts
    9,092
    Mentioned
    95 Post(s)
    Tagged
    8378 Thread(s)
    Thanked
    2
    Rep Power
    429513

    Default Re: اب قتل ہو کے تیرے مقابل سے آئے ہیں

    nice


  3. #3
    Join Date
    Aug 2012
    Location
    Baazeecha E Atfaal
    Posts
    12,040
    Mentioned
    300 Post(s)
    Tagged
    207 Thread(s)
    Thanked
    219
    Rep Power
    18

    Default

    Vaah Faiz Ahmad Faiz :-) Bohat Khoob :-)
    Khush Rahai'n :-)
    Aabaad Rahai'n :-)
    (-: Bol Kay Lab Aazaad Hai'n Teray :-)


  4. #4
    Join Date
    Sep 2013
    Location
    Mideast
    Posts
    5,900
    Mentioned
    210 Post(s)
    Tagged
    5074 Thread(s)
    Thanked
    176
    Rep Power
    10

    Default

    Wonderful

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •