Results 1 to 3 of 3

Thread: کچھ یاد گارِ شہرِ ستمگر ہی لے چلیں

  1. #1
    *jamshed*'s Avatar
    *jamshed* is offline کچھ یادیں ،کچھ باتیں
    Join Date
    Oct 2010
    Location
    every heart
    Posts
    14,586
    Mentioned
    138 Post(s)
    Tagged
    8346 Thread(s)
    Thanked
    38
    Rep Power
    21474858

    Default کچھ یاد گارِ شہرِ ستمگر ہی لے چلیں

    کچھ یاد گارِ شہرِ ستمگر ہی لے چلیں
    آئے ہیں اس گلی میں تو پتھر ہی لے چلیں

    یوں کس طرح کٹے گا کڑی دھوپ کا سفر
    سر پر خیالِ یار کی چادر ہی لے چلیں

    رنجِ سفر کی کوئی نشانی تو پاس ہو
    تھوڑی سی خاکِ کوچہء دلبر ہی لے چلیں

    یہ کہہ کے چھیڑتی ہے ہمیں دل گرفتگی
    گھبرا گئے ہیں آپ تو باہر ہی لے چلیں

    اس شہرِ بے چراغ میں جائے گی تو کہاں
    آ اے شبِ فراق تجھے گھر ہی لے چلیں


  2. #2
    Join Date
    Feb 2008
    Location
    Islamabad, UK
    Posts
    88,569
    Mentioned
    1073 Post(s)
    Tagged
    9710 Thread(s)
    Thanked
    664
    Rep Power
    21474935

    Default Re: کچھ یاد گارِ شہرِ ستمگر ہی لے چلیں

    nice /up

  3. #3
    Join Date
    Aug 2012
    Location
    Baazeecha E Atfaal
    Posts
    12,586
    Mentioned
    332 Post(s)
    Tagged
    210 Thread(s)
    Thanked
    261
    Rep Power
    18

    Default

    Vaah .... Bohat Khoob :-)
    (-: Bol Kay Lab Aazaad Hai'n Teray :-)


Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •