Results 1 to 2 of 2

Thread: Lala Rukh Or Mai Se Iqtibas

  1. #1
    *jamshed*'s Avatar
    *jamshed* is offline کچھ یادیں ،کچھ باتیں
    Join Date
    Oct 2010
    Location
    every heart
    Posts
    14,586
    Mentioned
    138 Post(s)
    Tagged
    8346 Thread(s)
    Thanked
    4
    Rep Power
    21474858

    Default Lala Rukh Or Mai Se Iqtibas

    وہ ہیرا منڈی میں نئی نئی آئی تھی مگر اس کی آنکھوں کی پراسرار خاموش اداسی بتاتی تھی کہ وہ لائی گئی ہے خود تو وہ کہیں اور رہتی ہے کسی نا معلوم جزیرے پر۔ ایک روز اپنے سرخ مہندی سے سجی پوروں والے نازک پاؤں میں جھنجھناتی پازیب پہنتے ہوئے مجھ سے بولی " تم نے کبھی اپنے پاؤں دیکھے ہیں مقدس پانیوں میں تیرتے گلابیوں میں گھلی شفاف پتیوں جیسے۔ موسیقیت تھرکتی ہے جب یہ اٹھتے اور تھمتے ہیں، ان چھوئے سے ، جن کے لمس سے چاند کھل اٹھے۔ بناوٹ اور خونصورتی میں بالکل میرے پاؤں جیسے مگر بس ایک ہی فرق ہے کہ میرے پاؤں ایک رقاصہ کے پاؤں ہیں ان کو دیکھ کے احساسات میں وہ پاکیزگی نہیں آتی وہ نرمیاں وہ مقدس شفاف روشنی نہیں آتی بلکہ ایک چیختا چنگھاڑتا نفس کے تاروں کو چھیڑتا، رنگ و بو کا بھاری پن حواس پہ طاری ہو جاتا ہے ۔۔۔۔۔ کیسا وجود۔۔۔۔۔؟ کیسی ذات ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟ یہ سب آنکھ کی پتلی سے نہیں دیکھا جاتا نظر صرف وہی آتا ہے جو آنکھ کی پتلی کے پوشیدہ پردے میں چھپا ہوتا ہے جو تمہارے پاؤں کو مقدس خیال سے چھونے کی جسارت کرتا ہے اور میرے پاؤں پہ کیچڑ ڈال دیتا ہے۔ ورنہ دیکھو نا کوئی فرق ہے دونوں میں۔۔۔۔۔۔؟؟

    فارحہ ارشد کے افسانے "لالہ رخ اور میں" سے اقتباس

    کہاں اتنی سزائیں تھیں بھلا اس زندگانی میں
    ہزاروں گھر ہوئے روشن جو میرا دل جلا محسنؔ


  2. #2
    Join Date
    Sep 2013
    Location
    Mideast
    Posts
    5,905
    Mentioned
    210 Post(s)
    Tagged
    5074 Thread(s)
    Thanked
    176
    Rep Power
    10

    Default

    Khoob

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •