Results 1 to 3 of 3

Thread: چند باتیں جو آپ کی نیند کو بھگاتی ہیں

  1. #1
    *jamshed*'s Avatar
    *jamshed* is offline کچھ یادیں ،کچھ باتیں
    Join Date
    Oct 2010
    Location
    every heart
    Posts
    14,586
    Mentioned
    138 Post(s)
    Tagged
    8346 Thread(s)
    Thanked
    4
    Rep Power
    21474858

    Default چند باتیں جو آپ کی نیند کو بھگاتی ہیں


    چند باتیں جو آپ کی نیند کو بھگاتی ہیں اور آپ کے لیے سونا دشوار بنا دیتی ہیں وہ یہ ہیں۔


    ١۔ آپ کی خواب گاہ میں شور اور تیز روشنی کی موجودگی نیند کی راہ میں رکاوٹ ڈالتی ہے۔


    ٢۔ آپ کا بستر آرام دہ نہ ہو تو نیند نہیں آتی ہے یا اگر آپ کا بستر حد سے زیادہ گرم ہو یا از حد سرد ہوتو نیند آنے میں دشواری ہوتی ہے۔


    ٣۔ اگر آپ کے سونے جاگنے کے معمولات میں تبدیلی ہوجائے تو بھی آپ کی نیند پر اثر پڑتا ہے۔


    ٤۔ اگر آپ جسمانی محنت بہت کم کرتے ہیں اور آرام دہ زندگی بستر کرتے ہیں تو بھی آپ کی نیند پر اثر پڑتا ہے۔


    ٥۔ اگر آپ بہت زیادہ غذا لیتے ہیں تو بھی آپ کی نیند متاثر ہوتی ہے۔


    ٦۔ اگر آپ بہت کم کھاتے ہیں تو صبح سویرے آپ کی آنکھ بھوک کی وجہ سے جلدی کھل سکتی ہے۔


    ٧۔ سگریٹ نوشی‘ چبانے والے تمباکو کا استعمال کافی یا چائے کی زیادتی بھی آپ کی نیند کو متاثر کرتی ہے۔


    ٨۔ جسمانی درد کی اور تکلیف کی صورت میں بھی نیند پر اثر پڑتا ہے۔


    ٩۔ بخار کی کیفیت میں بھی نیند غائب ہوسکتی ہے۔


    ١۰۔ جذباتی الجھنیں‘ نفسیاتی پریشانیاں اور ذہنی و جسمانی دبائو سے نیند متاثر ہوتی ہے۔


    ١١۔ نفسیاتی امراض مثلاً تشویش کی بیماری‘ اداسی کی بیماری اور جنون و یاسیت کی بیماری سے لے کر شیز و فرینیا کی بیماری تک ہر قسم کی نفسیاتی بیماری میں نیند متاثر ہوتی ہے۔


    ١٢۔ مختلف ادویات بھی نیند پر اثر ڈالتی ہیں۔


    اب آپ کو اندازہ ہوگیا ہوگا کہ نیند کتنی نازک ہوتی ہے اور بے خوابی کے کتنے سارے اسباب ہیں۔ اب سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ کیا خواب آور ادویات سے بے خوابی کو دور کیا جاسکتا ہے؟ یوں تو خواب آور ادویات ایک زمانے سے استعمال کی جارہی ہیں اور یہ بھی کوئی ڈھکی چھپی بات نہیں ہے کہ ان ادویات کے استعمال کرنے سے نیند تو آجاتی ہے مگر جاگنے کے بعد طبیعت گری گری رہتی ہے اور مزاج میں چڑچڑاپن بھی پیدا ہوجاتا ہے۔ اس کے علاوہ نیند لانے والی دوائیں بہت جلد اپنے اثرات کھو بیٹھتی ہیں اور بعد میں آپ کو نیند لانے کے لیے ان دوائوں کی زیادہ مقدار کی ضرورت پڑنے لگتی ہے اور یوں کچھ دن بعد ان دوائوں کی عادت پڑ جاتی ہے۔۔۔

    کہاں اتنی سزائیں تھیں بھلا اس زندگانی میں
    ہزاروں گھر ہوئے روشن جو میرا دل جلا محسنؔ


  2. #2
    Join Date
    Oct 2013
    Location
    Limits
    Posts
    5,975
    Mentioned
    667 Post(s)
    Tagged
    5699 Thread(s)
    Thanked
    544
    Rep Power
    1509699

    Default Re: چند باتیں جو آپ کی نیند کو بھگاتی ہیں

    Ye sb to hum ko maloom tha g.......chalo rewise g ho gaya................wese neend na any ka acha solution hai chemistry ki book parhna shoro kr do mera self azmoda hai foran neend aa jaye gi........ya aik boht khobsorat ye k raat ki tasbeehat parhain Jo Aap (S.A.W) ne Hazrat A.R ko parhny ko kaha tha wo parhty hoay hi neend aa jati hai mukammal krny se pehly.............Boht shukriya apka

    animals1 - چند باتیں جو آپ کی نیند کو بھگاتی ہیں

  3. #3
    Join Date
    Sep 2013
    Location
    Mideast
    Posts
    5,905
    Mentioned
    210 Post(s)
    Tagged
    5074 Thread(s)
    Thanked
    176
    Rep Power
    10

    Default

    V nice

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •