Results 1 to 4 of 4

Thread: کچھ ہم اس سے جان کر نہ کھلے

  1. #1
    *jamshed*'s Avatar
    *jamshed* is offline کچھ یادیں ،کچھ باتیں
    Join Date
    Oct 2010
    Location
    every heart
    Posts
    14,586
    Mentioned
    138 Post(s)
    Tagged
    8346 Thread(s)
    Thanked
    4
    Rep Power
    21474858

    Default کچھ ہم اس سے جان کر نہ کھلے



    کچھ ہم اس سے جان کر نہ کھلے
    ہم پہ سب بھید تھے وگرنہ کھلے

    جی میں کیا کیا تھی حسرت پرواز
    جب رہائی ملی تو پر نہ کھلے

    آگے خواہش تھی خون رونے کی
    اب یہ مشکل کہ چشم تر نہ کھلے

    ہو تو ایسی ہو پردہ دارئ زخم
    حال دل کا بھی آنکھ پر نہ کھلے

    سخت تنہا تھے اس کی بزم میں ہم
    رنگ محفل کو دیکھ کر نہ کھلے

    کتنے خوش ہو فراز اسیری پر
    اور یہ بند غم اگر نہ کھلے

    کہاں اتنی سزائیں تھیں بھلا اس زندگانی میں
    ہزاروں گھر ہوئے روشن جو میرا دل جلا محسنؔ


  2. #2
    Join Date
    Jan 2011
    Location
    pakistan
    Posts
    9,092
    Mentioned
    95 Post(s)
    Tagged
    8378 Thread(s)
    Thanked
    2
    Rep Power
    429513

    Default Re: کچھ ہم اس سے جان کر نہ کھلے

    nice


  3. #3
    Join Date
    Aug 2012
    Location
    Baazeecha E Atfaal
    Posts
    12,045
    Mentioned
    303 Post(s)
    Tagged
    207 Thread(s)
    Thanked
    219
    Rep Power
    18

    Default

    Vaah ... Umdaah
    (-: Bol Kay Lab Aazaad Hai'n Teray :-)


  4. #4
    Join Date
    Sep 2013
    Location
    Mideast
    Posts
    5,915
    Mentioned
    213 Post(s)
    Tagged
    5074 Thread(s)
    Thanked
    176
    Rep Power
    10

    Default

    V good

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •