Results 1 to 3 of 3

Thread: درو دیوار میں ،مکان نہیں

  1. #1
    *jamshed*'s Avatar
    *jamshed* is offline کچھ یادیں ،کچھ باتیں
    Join Date
    Oct 2010
    Location
    every heart
    Posts
    14,586
    Mentioned
    138 Post(s)
    Tagged
    8346 Thread(s)
    Thanked
    4
    Rep Power
    21474858

    Default درو دیوار میں ،مکان نہیں

    درو دیوار میں ،مکان نہیں
    واقعہ ہے ،یہ داستان نہیں

    وقت کرتا ہے ہر سوال کو حل
    زیست مکتب ہے امتحان نہیں

    ہر قدم پر اک نئی منزل
    راستوں کا کہیں نشان نہیں

    رنگ بھی زندگی کے مظہر ہیں
    صرف آنسو ہی ترجمان نہیں

    دل سے نکلی ہوئی سدا کے لیے
    کچھ بہت دُور آسمان نہیں

    کل کو ممکن ہے اک حقیقت ہو
    آج جس بات کا گمان نہیں

    شور کرتے ہیں ٹوٹتے
    رشتے
    ہم کو گھر چاہیے مکان نہیں

    خواب ، ماضی! سراب، مستقبل!
    اور " جوہے" وہ میری جان"نہیں"

    اتنے تارے تھے رات لگتا تھا
    کوئی میلہ ہے آسمان نہیں

    شاخ سدرہ کو چھو کے لوٹ آیا
    اس سے آگے میری اُڑان نہیں

    یوں جو بیٹھے ہو بے تعلق سے
    کیا سمجھتے ہو میری زبان نہیں

    کوئی دیکھے تو موت سے بہتر
    زیست کا کوئی پاسبان نہیں

    اک طرف میں ہوں اک طرف تم ہو
    سلسلہ کوئی درمیان نہیں

    کہاں اتنی سزائیں تھیں بھلا اس زندگانی میں
    ہزاروں گھر ہوئے روشن جو میرا دل جلا محسنؔ


  2. #2
    Join Date
    Dec 2009
    Location
    SAb Kya Dil Mein
    Posts
    11,928
    Mentioned
    79 Post(s)
    Tagged
    2306 Thread(s)
    Thanked
    24
    Rep Power
    21474855

    Default

    zabrdast


  3. #3
    Join Date
    Aug 2012
    Location
    Baazeecha E Atfaal
    Posts
    12,045
    Mentioned
    303 Post(s)
    Tagged
    207 Thread(s)
    Thanked
    219
    Rep Power
    18

    Default

    Kamaal Ki Sharing Hai :-)
    Bohat Hi Khhoob :-)
    Keep Sharing ....:-)
    (-: Bol Kay Lab Aazaad Hai'n Teray :-)


Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •