Results 1 to 4 of 4

Thread: ں... "Dabang muqabla 3"

  1. #1
    Join Date
    Apr 2013
    Location
    home
    Posts
    834
    Mentioned
    76 Post(s)
    Tagged
    2592 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    5

    cute ں... "Dabang muqabla 3"

    beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"


    کتابیں جھانکتی ہیں بند الماری کے شیشوں سےبڑی حسرت سے تکتی ہیں
    مہینوں اب ملاقاتیں نہیں ہوتیں
    جو شامیں ان کی صحبت میں کٹا کرتی تھیں، اب اکثر
    گزر جاتی ہیں کمپیوٹر کے پردوں پر
    بڑی بے چین رہتی ہیں
    انہیں اب نیند میں چلنے کی عادت ہو گئی ہے
    بڑی حسرت سے تکتی ہیں
    جو قدریں وہ سناتی تھیں۔۔۔ ۔
    کہ جن کے سیل کبھی مرتے نہیں تھے
    وہ قدریں اب نظر آتی نہیں گھر میں
    جو رشتے وہ سناتی تھیں
    وہ سارے ادھڑے ادھڑے ہیں
    کوئی صفحہ پلٹتا ہوں تو اک سسکی نکلتی ہے
    کئی لفظوں کے معنی گر پڑے ہیں
    بنا پتوں کے سوکھے ٹنڈ لگتے ہیں وہ سب الفاظ

    جن پر اب کوئی معنی نہیں اگتے
    بہت سی اصطلاحیں ہیں۔۔۔ ۔
    جو مٹی کے سکوروں کی طرح بکھری پڑی ہیں
    گلاسوں نے انہیں متروک کر ڈالا
    زباں پہ ذائقہ آتا تھا جو صفحے پلٹنے کا
    اب انگلی کلک کرنے سے بس اک

    جھپکی گزرتی ہے۔۔۔ ۔۔
    بہت کچھ تہ بہ تہ کھلتا چلا جاتا ہے پردے پر
    کتابوں سے جو ذاتی رابطہ تھا، کٹ گیا ہے

    کبھی سینے پہ رکھ کے لیٹ جاتے تھے
    کبھی گودی میں لیتے تھے
    کبھی گھٹنوں کو اپنے رحل کی صورت بنا کر
    نیم-سجدے میں پڑھا کرتے تھے، چھوتے تھے جبیں سے
    خدا نے چاہا تو وہ سارا علم تو ملتا رہے گا بعد میں بھی
    مگر وہ جو کتابوں میں ملا کرتے تھے سوکھے پھول
    کتابیں مانگنے، گرنے، اٹھانے کے بہانے رشتے بنتے تھے
    ان کا کیا ہو گا
    وہ شاید اب نہیں ہوں گے
    14wxh54 - ں... "Dabang muqabla 3"14wxh54 - ں... "Dabang muqabla 3"14wxh54 - ں... "Dabang muqabla 3"
    گلزار


  2. #2
    *jamshed*'s Avatar
    *jamshed* is offline کچھ یادیں ،کچھ باتیں
    Join Date
    Oct 2010
    Location
    every heart
    Posts
    14,586
    Mentioned
    138 Post(s)
    Tagged
    8346 Thread(s)
    Thanked
    4
    Rep Power
    21474858

    Default Re: کتابیں جھانکتی ہیں... "Dabang muqabla 3"

    umda
    کہاں اتنی سزائیں تھیں بھلا اس زندگانی میں
    ہزاروں گھر ہوئے روشن جو میرا دل جلا محسنؔ


  3. #3
    Join Date
    Feb 2009
    Location
    City Of Light
    Posts
    26,767
    Mentioned
    144 Post(s)
    Tagged
    10310 Thread(s)
    Thanked
    5
    Rep Power
    21474871

    Default Re: کتابیں جھانکتی ہیں... "Dabang muqabla 3"




    3297731y763i7owcz zps9ed156a3 - ں... "Dabang muqabla 3"

    MAY OUR COUNTRY PROGRESS IN EVERYWHERE AND IN EVERYTHING SO THAT THE WHOLE WORLD SHOULD HAVE PROUD ON US
    PAKISTAN ZINDABAD











  4. #4
    Join Date
    Apr 2011
    Location
    lahore
    Age
    27
    Posts
    259
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    153 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    0

    Default Re: کتابیں جھانکتی ہیں... "Dabang muqabla 3"

    Quote Originally Posted by geet View Post
    beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"beauty - ں... "Dabang muqabla 3"


    کتابیں جھانکتی ہیں بند الماری کے شیشوں سےبڑی حسرت سے تکتی ہیں
    مہینوں اب ملاقاتیں نہیں ہوتیں
    جو شامیں ان کی صحبت میں کٹا کرتی تھیں، اب اکثر
    گزر جاتی ہیں کمپیوٹر کے پردوں پر
    بڑی بے چین رہتی ہیں
    انہیں اب نیند میں چلنے کی عادت ہو گئی ہے
    بڑی حسرت سے تکتی ہیں
    جو قدریں وہ سناتی تھیں۔۔۔ ۔
    کہ جن کے سیل کبھی مرتے نہیں تھے
    وہ قدریں اب نظر آتی نہیں گھر میں
    جو رشتے وہ سناتی تھیں
    وہ سارے ادھڑے ادھڑے ہیں
    کوئی صفحہ پلٹتا ہوں تو اک سسکی نکلتی ہے
    کئی لفظوں کے معنی گر پڑے ہیں
    بنا پتوں کے سوکھے ٹنڈ لگتے ہیں وہ سب الفاظ

    جن پر اب کوئی معنی نہیں اگتے
    بہت سی اصطلاحیں ہیں۔۔۔ ۔
    جو مٹی کے سکوروں کی طرح بکھری پڑی ہیں
    گلاسوں نے انہیں متروک کر ڈالا
    زباں پہ ذائقہ آتا تھا جو صفحے پلٹنے کا
    اب انگلی کلک کرنے سے بس اک

    جھپکی گزرتی ہے۔۔۔ ۔۔
    بہت کچھ تہ بہ تہ کھلتا چلا جاتا ہے پردے پر
    کتابوں سے جو ذاتی رابطہ تھا، کٹ گیا ہے

    کبھی سینے پہ رکھ کے لیٹ جاتے تھے
    کبھی گودی میں لیتے تھے
    کبھی گھٹنوں کو اپنے رحل کی صورت بنا کر
    نیم-سجدے میں پڑھا کرتے تھے، چھوتے تھے جبیں سے
    خدا نے چاہا تو وہ سارا علم تو ملتا رہے گا بعد میں بھی
    مگر وہ جو کتابوں میں ملا کرتے تھے سوکھے پھول
    کتابیں مانگنے، گرنے، اٹھانے کے بہانے رشتے بنتے تھے
    ان کا کیا ہو گا
    وہ شاید اب نہیں ہوں گے
    14wxh54 - ں... "Dabang muqabla 3"14wxh54 - ں... "Dabang muqabla 3"14wxh54 - ں... "Dabang muqabla 3"
    گلزار

    hmmmmmm theek hai

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •