Results 1 to 5 of 5

Thread: Rizq

  1. #1
    Join Date
    Oct 2013
    Location
    Limits
    Posts
    5,975
    Mentioned
    667 Post(s)
    Tagged
    5699 Thread(s)
    Thanked
    544
    Rep Power
    1509699

    Default Rizq

    کسی گاوں میں ایک نو جوان رہتا تھا ۔ پڑھائی لکھائی جب ختم ہوئی تو والدین نے نوکری کے لئے دباؤ ڈالنا شروع کر دیا۔ کئی مہینے وہ نوکری کی تلاش میں پھرتا رہا لیکن کہیں نوکری نہ ملی ۔ ایک دن تھک ہار کر خود سے بولا رزق تو اللہ کی ذات نے دینا ہے۔ اب میں نوکری کی تلاش میں نہیں پھروں گا بلکہ سکون سے زندگی گزاروں گا۔۔ اللہ رازق ہے تو گھر بیٹھے ہی رزق دے گا ۔

    اسی سوچ کے ساتھ یہ جوان صبح کی سیر کے لئے نکلا
    سیر کے بعد گاؤں کے قریب سے گزرنے والی نہر کے کنارے جا کر بیٹھ گیا ۔ ابھی بیٹھے پندرہ منٹ ہی ہوئے تھے کہ دیکھا ایک پتہ نیچے کی طرف آ رہا ہے۔۔
    چھلانگ لگا کر پتہ پکڑا تو یہ کیا ۔ پتے پر دو نان اور ان پر حلوہ پڑا تھا ۔
    واہ خدایا ۔ واقعی رزق تو کھانے والے تک خود پہنچتا ہے۔۔
    حلوہ کھایا بہت لذیذ تھا۔۔

    پیٹ بھر کر واپس گھر آ گیا ۔ ظہر کے بعد پھر نہر کنارے چلا گیا ۔
    ایک بار پھر حلوہ اور نان پتے پر آتے نظر آئے ۔ اٹھائے اور کھا ليے
    مغرب کی نماز کے بعد پھر نہر کنارے چلا گیا ۔ اس بار بھی وہی ہوا ۔
    واہ! رات کے کھانے کا انتظام بھی ہو گیا ۔

    اب روزانہ فجر، ظہر اور مغرب کی نماز کے بعد نہر کنارے جا کر بیٹھ جاتا اور بلا ناغہ نان اور حلوہ مل جاتے ۔ یہ سلسلہ کئی دنوں تک چلتا رہا۔۔

    ایک دن خیال آیا کہ دیکھوں کہ اللہ تعالٰی کس طرح یہ نان اور حلوہ بھجواتے ہیں ۔ اسی سوچ میں صبح کی نماز کے بعد نہر کی اوپری طرف چل پڑا ۔کچھ کلومیٹر ہی گیا ہو گا کہ دیکھا ، ایک بابا جی ہیں جو نان اور حلوہ لئے نہر کنارے بیٹھے ہیں۔۔
    قریب جا کر دیکھا ۔۔ تو بابا جی نان کے اندر حلوہ رکھتے اور پھر اس گرم گرم حلوے سے اپنی ٹانگ پر نکلے ایک پھوڑے کو ٹکور کرتے پھر ایک پتے پر نان اور حلوہ رکھ کر نہر میں بہا دیتے ۔

    جوان کا دل ایک دم خراب ہونا شروع ہو گیا۔ ابکائیاں آنے لگیں
    کیا میں اتنے دنوں سے یہ حلوہ اور نان کھا رہا تھا؟
    بابا جی سے پوچھا یہ ماجرا کیا ہے؟

    بابا جی بولے ، کئی دنوں سے یہ پھوڑا نکلا ہوا تھا ۔۔جس کی وجہ سے بہت تکلیف تھی۔ حکیم کے پاس گیا تو حکیم نے مشورہ دیا کہ روزانہ دن میں تیں بار سوجی کے حلوے کو نان پر رکھ کر اس کی ٹکور کروں ۔۔ سو میں فجر ، ظہر اور مغرب کے بعد ادھر آ جاتا ہوں ۔۔ نان اور حلوے کی ٹکور کے بعد نان اور حلوے کو پتے پر رکھ کر نہر میں بہا دیتا ہوں تاکہ خراب ہونے کی بجائے چرند پرند اور مچھلیاں ہی کھا لیں .

    بے شک اللہ رازق ہے۔ ، رزق اللہ نے ہی دینا ہے، محنت اور کاہلی کے درمیان پھل کا فرق ہے ۔

    جو محنت کرتے ہیں انھیں پاک اور صاف رزق ملتا ہے۔۔
    جو کاہلی میں وقت گزارتے ہیں اور حالات کے سامنے ہتھیار ڈال دیتے ہیں ،رزق تو انہیں بھی ملتا ہے مگر وہ رزق جس میں کراہت اور گندگی ہو ۔




    1




    animals1 - Rizq

  2. #2
    Join Date
    Sep 2013
    Location
    Karachi, Pakistan
    Posts
    7,416
    Mentioned
    504 Post(s)
    Tagged
    5438 Thread(s)
    Thanked
    359
    Rep Power
    874041

    Default

    Bohat khoob.

  3. #3
    Cute PaRi's Avatar
    Cute PaRi is offline ♥Häppïnëss ïs Süċċëss♥
    Join Date
    Sep 2012
    Location
    ♥ündër möthër's fëët♥
    Posts
    9,560
    Mentioned
    132 Post(s)
    Tagged
    9855 Thread(s)
    Thanked
    2
    Rep Power
    1533321

    Default

    bhot umda

    paspayi2 zps86d6ac40 - Rizq

  4. #4
    Join Date
    Apr 2012
    Location
    Beyond The Sky
    Posts
    1,478
    Mentioned
    55 Post(s)
    Tagged
    3259 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    214755

    Default

    Nice ........ /up



    دل اگر بے نقاب ھوتے

    تو سوچو..! کتنے فساد ھوتے




  5. #5
    *jamshed*'s Avatar
    *jamshed* is offline کچھ یادیں ،کچھ باتیں
    Join Date
    Oct 2010
    Location
    every heart
    Posts
    14,586
    Mentioned
    138 Post(s)
    Tagged
    8346 Thread(s)
    Thanked
    4
    Rep Power
    21474858

    Default

    bu - Rizq
    کہاں اتنی سزائیں تھیں بھلا اس زندگانی میں
    ہزاروں گھر ہوئے روشن جو میرا دل جلا محسنؔ


Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •