Results 1 to 4 of 4

Thread: Palkon Ki Kachi Neendh Ka Raas

  1. #1
    Join Date
    May 2012
    Location
    lhr
    Age
    35
    Posts
    227
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    188 Thread(s)
    Thanked
    1
    Rep Power
    6

    Default Palkon Ki Kachi Neendh Ka Raas

    بس یہ ہُوا کہ اُس نے تکلّف سے بات کی
    اور ہم نے روتے روتے دوپٹے بھگو لیے

    پلکوں پہ کچی نیندوں کا رَس پھیلتا ہو جب
    ایسے میں آنکھ دھُوپ کے رُخ کیسے کھولیے

    تیری برہنہ پائی کے دُکھ بانٹتے ہُوئے
    ہم نے خُود اپنے پاؤں میں کانٹے چبھو لیے

    میں تیرا نام لے کے تذبذب میں پڑ گئی
    سب لوگ اپنے اپنے عزیزوں کو رو لیے!

    ’’خوشبو کہیں نہ جائے‘‘ یہ اصرار ہے بہت
    اور یہ بھی آرزو کہ ذرا زُلف کھولیے

    تصویر جب نئی ہے ، نیا کینوس بھی ہے
    پھر طشتری میں رنگ پُرانے نہ گھولیے
    Merey jaisi aankhon walay jab Sahil per aatay hain
    lehrain shor machati hain, lo aaj samandar doob gaya

  2. #2
    Join Date
    Apr 2012
    Location
    Beyond The Sky
    Posts
    1,478
    Mentioned
    55 Post(s)
    Tagged
    3259 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    214755

    Default

    Nice ............



    دل اگر بے نقاب ھوتے

    تو سوچو..! کتنے فساد ھوتے




  3. #3
    Join Date
    Nov 2013
    Location
    Dream Land
    Age
    21
    Posts
    3,220
    Mentioned
    97 Post(s)
    Tagged
    2597 Thread(s)
    Thanked
    3
    Rep Power
    429507

    Default

    /up

  4. #4
    *jamshed*'s Avatar
    *jamshed* is offline کچھ یادیں ،کچھ باتیں
    Join Date
    Oct 2010
    Location
    every heart
    Posts
    14,586
    Mentioned
    138 Post(s)
    Tagged
    8346 Thread(s)
    Thanked
    4
    Rep Power
    21474858

    Default

    nice
    کہاں اتنی سزائیں تھیں بھلا اس زندگانی میں
    ہزاروں گھر ہوئے روشن جو میرا دل جلا محسنؔ


Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •