اسلام آباد (آن لائن) غداری کیس میں خصوصی عدالت نے پرویز مشرف کے حوالے سے ایف آئی اے کی تحقیقاتی رپورٹ پرویز مشرف کے وکلاء کے حوالے کرنے کا حکم دے دیا اور کیس کی سماعت 22 مئی تک ملتوی کردی۔
تفصیلات کے مطابق بدھ کے روز غداری کیس کی سماعت جسٹس فیصل عرب کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے کی جس میں عدالت نے فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ پرویز مشرف کے حوالے سے ایف آئی اے کی جانب سے جو انکوائری کی گئی ہے وہ رپورٹ 14 مئی تک پرویز مشرف اور ان کے وکلاء کے حوالے کردی جائے کیونکہ پرویز مشرف کے وکلاء نے درخواست دائر کی تھی جس میں انہوں نے موقف ظاہر کیا تھا کہ رپورٹ حاصل کرنا ملزم کا حق ہوتا ہے جس کے مطابق آئندہ کا لائحہ عمل تیار کیا جاتا ہے اور پھر کیس کی پیشرفت کیلئے دلائل دئیے جاتے ہیں
۔

فیصلے میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ کیس کے حوالے سے تمام ریکارڈ تک رسائی ملزم کا قانونی حق ہے۔ تحقیقات کے دوران اگر کسی فرد نے کوئی اضافی نوٹ بھی لکھا ہے تو وہ بھی پرویز مشرف کے وکلاء کو فراہم کیا جائے تاکہ 22 مئی سے کیس کے حوالے سے شہادتیں اکٹھی کرنے کا عمل شروع کیا جا سکے۔

For more detail visit this link