Results 1 to 5 of 5

Thread: ہرا ہرا مرا مصرع دکھائی دیتا ہے

  1. #1
    Join Date
    Jun 2011
    Location
    rawalpindi
    Age
    33
    Posts
    1,273
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    10 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    429505

    Default ہرا ہرا مرا مصرع دکھائی دیتا ہے

    1غزل

    میں پہلی بار اِس جنگل سے گزرا تھا تو سب ایسا نہیں تھا
    یہاں کچھ کچھ پرندے بولنے والے تھے ، سناٹا نہیں تھا

    محبت نے مجھے قید ِ عناصر سے بہت آگے بُلایا
    مگر میں اپنی مٹی کے شکنجے سے نکل پایا نہیں تھا

    اِسی نقارخانے سے مجھے تربیت ِ فن مل رہی تھی
    میں اپنے شعر کا ڈنکا بجانا سیکھ کر آیا نہیں تھا

    یہ تُو نے کس لیے آنچل پہ تازہ خواہشوں کے پھول کاڑھے
    ترے پلو سے کیا باندھا ہُوا وہ ریشمی وعدہ نہیں تھا

    بقدر ِ آرزو میرا سمندر سے تعلق تھا نہ لیکن
    میں اُتھلے پانیوں سے اپنا رشتہ جوڑنے والا نہیں تھا

    مری تقدیر میں کُچھ سرفرازی کے ہرے لمحے لکھے تھے
    نمو پاتے ہی جو پامال ہو جائے میں وہ سبزہ نہیں تھا

    خموشی ، برف کے مانند ہونٹوں پر دھری رہتی تھی یاور
    گلابی لفظ کے باہر نکلنے کا کوئی رستہ نہیں تھا

    یاور عظیم


    2غزل

    نئے نظام کی جو ابتداء نہیں کرتی
    وہ قوم اپنا فریضہ ادا نہیں کرتی

    میں آسماں سے بغلگیر ہونا چاہتا ہوں
    زمین ، اپنی کشش سے رہا نہیں کرتی

    جو روشنی ہے تہ ِ حرف ِ مدعا ، موجود
    ستارگاں کے لبوں پر کِھلا نہیں کرتی

    سو اب لہو سے رقم کی گئی ہے دستاویز
    یقین ورنہ یہ خلق ِ خدا نہیں کرتی

    دعا کے پاس نہیں ہے کلید ِ بست و کشود
    دعا تو باب ِ اجابت کو وا نہیں کرتی

    ہرا ہرا مرا مصرع دکھائی دیتا ہے
    یہ بات کیا مجھے سب سے جُدا نہیں کرتی

    سجا دیا ہے کتابوں کو شیلف میں یاور
    مطالعے کی فراغت ملا نہیں کرتی

    یاور عظیم


    3غزل
    آنکھ کو اشکوں کی مالا دے کے رُخصت ہو گیا
    وہ ہمیں کیا خوب تحفہ دے کے رُخصت ہو گیا

    کس کی آہٹ رات بھر مصرع کشی کرتی رہی
    کون سناٹوں کو لہجہ دے کے رخصت ہو گیا

    صبح کی پہلی کرن کے جاگنے میں دیر تھی
    چاند ، پیشانی پہ بوسہ دے کے رخصت ہو گیا

    آسماں کو اک ذرا چھونے کی خواہش دل میں تھی
    وہ مجھے خوابوں کا زینہ دے کے رخصت ہو گیا

    جو کھڑا تھا ایک سنگ ِ راہ بن کر سامنے
    وہ بھی آخر مجھ کو رستہ دے کے رُخصت ہو گیا

    جس نے کھائی تھی سفر میں ساتھ دینے کی قسم
    دو قدم مجھ کو سہارا دے کے رُخصت ہو گیا

    وا کیا میں نے قفس کے باب کو یاور عظیم
    اور دعا کوئی پرندہ دے کے رخصت ہو گیا

    یاور عظیم
    Last edited by yawar azeem; 09-05-2014 at 02:16 AM.

    sigpic13827 8 - ہرا ہرا مرا مصرع دکھائی دیتا ہے

  2. #2
    Join Date
    Apr 2014
    Location
    Under Bed
    Age
    23
    Posts
    125
    Mentioned
    3 Post(s)
    Tagged
    426 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    4

    Default

    Bohat alaa sir
    Signature, not required.

  3. #3
    Join Date
    Dec 2009
    Location
    SAb Kya Dil Mein
    Posts
    11,928
    Mentioned
    79 Post(s)
    Tagged
    2306 Thread(s)
    Thanked
    24
    Rep Power
    21474855

    Default

    bu - ہرا ہرا مرا مصرع دکھائی دیتا ہے


  4. #4
    Join Date
    Dec 2014
    Location
    soudi arab makkah
    Age
    30
    Posts
    599
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    92 Thread(s)
    Thanked
    14
    Rep Power
    214753

    Default

    Log kehte hain mohabbat main assar hota hai,
    Kon se sheher mein hota hai, kidhar hota hai ???

  5. #5
    Join Date
    Mar 2015
    Location
    Karachi
    Posts
    726
    Mentioned
    6 Post(s)
    Tagged
    59 Thread(s)
    Thanked
    1
    Rep Power
    3

    Default

    بہت اعلیٰ

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •