Results 1 to 7 of 7

Thread: ٢٨ شعبان المعظم - حضرت با یزید بسطامی رحمۃ اللہ علیہ

  1. #1
    Join Date
    Feb 2011
    Location
    Is Duniya me
    Posts
    1,576
    Mentioned
    15 Post(s)
    Tagged
    1284 Thread(s)
    Thanked
    1
    Rep Power
    21474844

    Default ٢٨ شعبان المعظم - حضرت با یزید بسطامی رحمۃ اللہ علیہ

    Hazrat Bayazeed Bistami Rehmatullah Alaih
    ٢٨ شعبان المعظم - حضرت با یزید بسطامی رحمۃ اللہ علیہ


    Bayazid BastamiGraveBastam - ٢٨ شعبان المعظم - حضرت با یزید بسطامی رحمۃ اللہ علیہ

    76 big - ٢٨ شعبان المعظم - حضرت با یزید بسطامی رحمۃ اللہ علیہ

    ولادتِ باسعادت:ولادت باسعا دت۱۶۰ ھ میں بسطام میں ہوئی ۔


    شجرہ نسب:آپ رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ پہلے طبقہ والوں میں ہیں،آپ کا نام طیفور بن عیسیٰ بن آدم بن سروشان ہے۔


    ہم عصر:آپ رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ کو احمد خضرویہ،ابوحفص حداد،یحییٰ معاذ رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہم کا زمانہ نصیب ہوا۔آپ حضرتِ سیدنا شفیق بلخی رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ کی زیارت سے مشرف ہوئے۔


    تعلیم وتربیت:آپ رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ جلیل القدر اکابر مشائخ میں سے ہیں،آپ کی ابتدائی تعلیم وتربیت مقامی مکتب میں والدین رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہما کے زیرِ سایہ ہوئی،بعد ازاں مزید تحصیل علم کے لئے رختِ سفر باندھا،سالہا سال طلبِ علم، مجاہدات وریاضات میں مشغول رہے،بے شمار مشائخ سے نیاز حاصل کی،صدہااولیاء اللہ کے فیوض وبرکات سے مستفیض ہوئے،آپ رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ کی شان رفیع تر ہے،آپ کے مراتب کوئی نہیں جانتا،آپ کی جلالتِ شان میں استاذالصوفیاء حضرتِ جنید رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ فرماتے ہیں:بایزید کی حیثیت ہمارے درمیان ایسی ہے جیسے ملائکہ میں جبریل کی،میر سید مکی رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ لکھتے ہیں:آپ غوثیت وقطبیت سے گزر کر مقامِ محبوبیت سے سرفراز ہوئے۔آپ رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ کا جسم مجاہدہ میں اور قلب مشاہدہ میں غرق تھا،ذاتِ الٰہی کی پنہائیوں میں مقامِ فنائیت پرپہنچ گئے، ہروقت یادِ الہٰی میں مستغرق وشیدا رہتے،ہر طرف حق ہی حق تھا، نماز پڑھتے تو ہیبتِ خدا سے آپ کے سینہ کی ہڈیوں سے آواز آتی،وقتِ وفات آپ نے یہ کہہ کر جان جان آفریں کے سپرد کر دی: خدایا میں نے تیری یاد میں غفلت کی،تیری خدمت میں کوتاہی کی۔


    سلسلۂ بیعت:آپ رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ نے حضرت سیدنا امام جعفر صادق رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے خلافت کا شرف پایا۔


    دینی خدمات:آپ رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ خلافتِ الہیہ کے منصب پر فائز تھے،مسندِ رشد وہدایات پر متمکن ہوئے،خلقِ خدا کو فیض یاب کیا، آپ حجۃ اللہ، قطبِ عالم، مرجعِ اوتاد،طریقت کے امام،معرفت ومحبت کے آسمان تھے،آپ کے کمالات اظہر من الشمس ہیں،شیخ ابو سعید الخیر رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ فرماتے ہیں:میں پورے عالم کو آپ کے اوصاف سے لبریز دیکھتا ہوں۔حقائق ومعارف میں آپ کے کلمات بہت مشہور ہیں، آپ فرماتے ہیں: معرفتِ الہٰی کا ایک ذرہ دل میں وہ لذات وسرشاریاں پیدا کر دیتا ہے کہ بہشت کے لاکھ محلات بھی اس کے مقابل ہیچ لگتے ہیں،نیک لوگوں کی صحبت نیک اعمال سے بہتر،بروں کی صحبت برے اعمال سے بدتر ہے۔


    تلامذہ: حضرتِ سیدنا ابو موسیٰ آپ کے شاگردِ خاص ہیں۔

    حضرت داتا گنج بخش رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ نے ”کشف المحجوب“ میں ذکر کیا ہے کہ بایزید رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ جب سفر حجاز سے واپس تشریف لائے تو ان کے آنے کی منادی کی گئی۔ لوگوں میں مشہور ہوا کہ بایزید تشریف لائے ہیں۔ شہر کے لوگ جمع ہوئے اور آپ کے استقبال کیلئے شہر سے باہر آئے تاکہ اعزاز و اکرام کے ساتھ شہر میں لائیں۔ حضرت بایزید رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ لوگوں کی آمدورفت کو دیکھ کر جب ان کی طرف مشغول ہوگئے تو محسوس فرمایا کہ اب ان کا دل بھی تقرب الٰہی سے دور ہو رہا ہے تو پریشان ہوگئے لوگوں کو اپنے سے دور کرنے کیلئے آپ نے یہ حیلہ کیا کہ جب وسط شہر میں تشریف لائے تو روٹی کا ایک ٹکڑا نکال کر سرعام چبانا شروع کر دیا۔ ماہ رمضان میں آپ کے اس عمل پر عوام میں منافرت پیدا ہوگئی اور لوگ حضرت بایزید رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ کو تنہا چھوڑ کر چل دئیے۔ کیونکہ یہ واقعہ رمضان شریف میں ہوا تھا اس لئے لوگوں نے آپ کے سر عام کھانے کے عمل پر سخت ناراضگی کا اظہار کیا۔ حضرت بایزید کے ہمراہ ایک مرید تھا۔ آپ نے اس مرید سے فرمایا ”دیکھا تونے شریعت مطہرہ کے ایک مسئلہ پر میں نے عمل کیا تو لوگوں نے مجھے چھوڑ دیا۔ آپ کا اشارہ مسئلہ شرعی کی طرف تھا کہ مسافر اگر بحالت مسافرت روزہ نہ رکھے تو اس پر گناہ نہیں۔ وہ اس روزے کی قضا دوسرے ایام میں کر سکتا ہے۔


    حضرت بایزید رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ اسی طرح اپنے نفس کا علاج کیا کرتے تھے اور اس کیلئے کبھی نفس پر عتاب فرماتے اور کبھی تکبر کے احساس کا تدارک کرتے۔


    تاریخ وفات ومدفن:آپ رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ نے۲۸ شعبان المعظم۲۳۴ھ کو وصال فرمایا،آپ کا مزارمبارک بسطام میں مرجعِ خلائق ہے۔

    Last edited by shaikh_samee; 16-06-2015 at 02:16 PM.

  2. #2
    Join Date
    Apr 2010
    Location
    k, s, a
    Posts
    14,631
    Mentioned
    215 Post(s)
    Tagged
    10286 Thread(s)
    Thanked
    84
    Rep Power
    1503265

    Default

    nyc information


  3. #3
    Join Date
    Dec 2009
    Location
    SAb Kya Dil Mein
    Posts
    11,928
    Mentioned
    79 Post(s)
    Tagged
    2306 Thread(s)
    Thanked
    24
    Rep Power
    21474855

    Default

    jazakAllah khair

  4. #4
    Join Date
    Sep 2010
    Location
    Mystic falls
    Age
    29
    Posts
    52,044
    Mentioned
    326 Post(s)
    Tagged
    10829 Thread(s)
    Thanked
    5
    Rep Power
    21474896

    Default

    Jazak ALLAH khair

  5. #5
    °Têhrêêr°'s Avatar
    °Têhrêêr° is offline .·★ ƒяɨ€ɲď ๏ƒ ɲąţµя€ ★.·´
    Join Date
    May 2014
    Location
    ●♥forest♥●
    Age
    24
    Posts
    3,439
    Mentioned
    15 Post(s)
    Tagged
    1546 Thread(s)
    Thanked
    2
    Rep Power
    7

    Default

    Jazak Allah khair

  6. #6
    Join Date
    May 2013
    Location
    pakistan
    Posts
    5,720
    Mentioned
    128 Post(s)
    Tagged
    7184 Thread(s)
    Thanked
    6
    Rep Power
    644255

    Default

    mashallah mujhe nafs wali bat bohat achi lgi

  7. #7
    Join Date
    Feb 2011
    Location
    Is Duniya me
    Posts
    1,576
    Mentioned
    15 Post(s)
    Tagged
    1284 Thread(s)
    Thanked
    1
    Rep Power
    21474844

    Default


Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •