Results 1 to 4 of 4

Thread: Arab Israel War June 1967

  1. #1
    Join Date
    Jun 2010
    Location
    Jatoi
    Posts
    59,925
    Mentioned
    201 Post(s)
    Tagged
    9827 Thread(s)
    Thanked
    6
    Rep Power
    21474903

    Default Arab Israel War June 1967



    جون ١٩٦٧ء کی عرب اسرائیل کی جنگ
    (Arab Israel War June 1967) میں اسرائیلیوں نے بیت المقدس پر قبضہ کر لیا تو ان کے مذہبی پیشواؤں اور سیاسی لیڈروں نے کہا تھا کہ ہم (یہودی ) دو ہزار سال بعد اپنے گھر واپس آگئے ہیں ۔ اسی جنگ میں انہوں نے اسرائیل کے ارد گرد عربوں کے بیشمار علاقے پر قبضہ کرلیا تھا ۔ مسلمان ممالک کی افواج نے اتحاد کے فقدان کی وجہ سے اسرائیلیوں سے بہت بری شکست کھائی ۔ اس کے بعد اقوام متحدہ (united nations) میں تقریروں ، قراردادوں اور مذاکرات کا وہ سلسلہ شروع ہوگیا جو چل تو پڑتا ہے مگر کسی انجام کو نہیں پہنچتا ۔





    اسرائیلیوں نے اقوام متحدہ کی کسی ایک بھی تقریر اور ایک بھی قرارداد کی پروا نہ کی ۔ انہوں نے مقبوضہ علاقوں میں اپنی نئی بستیاں آباد کرنی شروع کردیں ۔ شام کی جنگی اہمیت کے کوہستانی علاقے گولان کی بلندیوں پر بھی اسرائیلیوں نے ١٩٦٧ء کی چھ روزہ جنگ میں قبضہ کر لیا تھا ۔ وہاں انہوں نے پختہ اور مستقل مورچہ بندی قائم کرلی ۔ اسرائیلیوں کے اس روّیے اور اقدامات سے صاف پتہ چلتا تھا کہ وہ مقبوضہ علاقے نہیں چھوڑیں گے ۔


    ١٩٧٣ء میں مصریوں نے نہر سویز
    جنگِ رمضان میں بے خبری میں جا لیا(Suez Canal) پار کرکے اسرائیلیوں کو سینائی(Sinai) اور کچھ علاقہ آزاد کرالیا اور نہر سویز بھی اسرائیلیوں سے آزاد کرالی اور اسے کھول دیا ۔ پھر جنگ بند ہوگئی بلکہ ان بڑی طاقتوں سے بند کرادی جن کے ہم سب مقروض اور امداد کے محتاج ہیں ۔ مصر (Egypt) کے اس وقت کے صدر انور السادات مرحوم نے اپنی یادداشتوں میں لکھا ہے کہ جنگ رمضان ١٩٧٣ء کے دوران امریکا (USA) کا اس وقت کا سیکرٹری خارجہ ہنری کیسنجر (United States Secretary of State Henry Kissinger) مصر پہنچا اور سادات سے ملا ۔ اسرائیلیوں کے قدم اکھڑ گئے تھے اور وہ مسلسل پسپا ہوتے چلے جارہے تھے ۔ ہنری کیسنجر نے سادات کو دھمکی دی کہ اس نے جنگ بند نہ کی تو امریکا اپنے وہ جدید اسلحہ اور طیارے مصری فوج کے خلاف استعمال کرے گا جو ایک دو دنوں میں مصری فوج ، فضائیہ اور بحریہ کو تباہ کردے گا ۔ سادات کو اس دھمکی کے علاوہ ہنری کیسنجر نے (جس کے متعلق پتہ چلا ہے کہ یہودی ہے ) کچھ لالچ بھی دیا تھا ۔ سادات کو معلوم تھا کہ امریکا کے پاس کیسا تباہ کار اسلحہ ہے ، چنانچہ اس نے اس صورت حال میں جنگ بندی کا اعلان کردیا کہ اسرائیل پسپا ہو رہے تھے ۔


    اس کے بعد جینیوا مطالبہ تھا کہ اسرائیل عربوں کے علاقے واپس کردے لیکن اسرائیل نے ایک نئی اصطلاح تخلیق کرلی ۔ یہ تھی PROTECTED FRONTIERS اور مقبوضہ علاقے اپنے قبضے میں رکھنے کے لیے یہ دلیل دی کہ اسرائیل کی حفاظت کے لیے اسے اپنے ارد گرد ان مقبوضہ علاقوں کی ضرورت ہے جہاں وہ دفاعی مورچہ بندی کرے گا تاکہ اسرائیل پر حملہ کرنے والوں کو اسرائیل کی اصل سرحد سے دور روکا اور پسپا کیا جا سکے ۔
    اسرائیلیوں کی کتنی بڑی کامیابی ہے کہ انہوں نے اصل تنازعہ کی صورت ہی بدل ڈالی ہے ۔ اصل تنازعہ یہ تھا کہ اسرائیل کوئی ملک نہیں ۔ یہ استعماری طاقتوں کا ( جن میں روس بھی شامل ہے ) ایک ناجائز بچہ ہے ۔ تاریخ میں غالباً یہ واحد مثال ہے کہ چند ایک بڑی طاقتیں مل کر کسی چھوٹے سے ملک کے باشندوں کو وہاں سے دہشت زدہ کرکے نکال دیں اور وہاں کسی اور قوم کو آباد کرکے اس ملک کا نام ہی بدل ڈالیں ۔ اصل تنازعہ یہ تھا کہ اسرائیل دراصل فلسطین ہے جس پر اسرائیلیوں نے استعماری اور اسلام دشمن قوموں کی جنگی مدد سے قبضہ کیا تھا ۔ آگے چل کر اسرائیلیوں نے عربوں کے علاقوں پر قبضہ کر لیا اور انہیں چھوڑنے سے انکار کردیا اور اصل تنازعہ کی صورت یہ بنادی کہ اسرائیل مقبوضہ علاقے چھوڑ دے ۔ اس کے بعدتنازعہ کی صورت یہ بنی کہ عرب ممالک اسرائیل کو تسلیم کریں ۔
    یہ صحیح ہے کہ اسرائیل کے قیام ، استحکام اور اس کی توسیع امریکا ، برطانیہ ، فرانس اور روس کی متحدہ کوششوں کا نتیجہ ہے لیکن یہ کارنامہ یہودیوں کا ہے کہ انہوں نے ان بڑی طاقتوں کو اپنی مخصوص استادی سے اپنے زیر اثر لیا اور ان سے اپنا وجود ایک ملک کی صورت میں قائم کرالیا ____

    Last edited by sarfraz_qamar; 06-08-2014 at 11:58 PM.





    تیری انگلیاں میرے جسم میںیونہی لمس بن کے گڑی رہیں
    کف کوزه گر میری مان لےمجھے چاک سے نہ اتارنا

  2. #2
    °Têhrêêr°'s Avatar
    °Têhrêêr° is offline .·★ ƒяɨ€ɲď ๏ƒ ɲąţµя€ ★.·´
    Join Date
    May 2014
    Location
    ●♥forest♥●
    Age
    24
    Posts
    3,439
    Mentioned
    15 Post(s)
    Tagged
    1546 Thread(s)
    Thanked
    2
    Rep Power
    7

    Default

    jaany yeh laraiyaan kab khatm hongi kb be gunahon ki jaan is azab sy niklen gy
    I aM sTrOnG bEaCaUsE I DePeNdS oN AllAh

  3. #3
    Join Date
    Jan 2014
    Location
    Lahore.Pakistan
    Posts
    677
    Mentioned
    42 Post(s)
    Tagged
    1823 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    221345

    Default

    indeed....unity is strength..............

  4. #4
    Join Date
    Sep 2013
    Location
    Karachi, Pakistan
    Posts
    7,416
    Mentioned
    507 Post(s)
    Tagged
    5438 Thread(s)
    Thanked
    359
    Rep Power
    874041

    Default

    baRi kaRwii tareekh hay..... !

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •