Results 1 to 2 of 2

Thread: Khuwhish

  1. #1
    Join Date
    Dec 2009
    Location
    SAb Kya Dil Mein
    Posts
    11,928
    Mentioned
    79 Post(s)
    Tagged
    2306 Thread(s)
    Thanked
    24
    Rep Power
    21474855

    snow Khuwhish

    خواہشوں کے زہر میں اخلاص کا رس گھول کر
    وہ تو پتھر ہو گیا دو چار دن ہنس بول کر

    دِل ہجومِ غم کی زد میں تھا سنبھلتا کب تلک؟
    اِک پرندہ آندھیوں میں رہ گیا پَر تول کر

    اپنے ہونٹوں پرسجا لے قیمتی ہیروں سے لفظ
    اپنی صورت کی طرح باتیں بھی تو انمول کر

    آج اُس کی حدِ بخشش ہے تیرے سر سے بلند
    آج اپنے سر سے بھی اُونچا ذرا کشکول کر

    بند ہاتھوں کا مقدر تھیں سبھی کرنیں مگر
    سارے جگنو اُڑ گئے دیکھا جو مٹھی کھول کر

    شہر والے جھوٹ پر رکھتے ہیں بنیادِ خلوص
    مجھ کو پچھتانا پڑا "محسن" یہاں سچ بول کر



  2. #2
    Join Date
    Apr 2010
    Location
    k, s, a
    Posts
    14,631
    Mentioned
    215 Post(s)
    Tagged
    10286 Thread(s)
    Thanked
    84
    Rep Power
    1503265

    Default


Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •