ScreenShot2014 10 03at50217PM zps2e82da17 - جمائمہ خان کو یہودن کہنے والے




عمران خان کی سابقہ اہلیہ جمائمہ خان جنھیں ہمارے معاشرے میں یہودن کہا جاتا ہے اور انہی سے شادی کے جرم میں عمران خان کو یہودی کہا جاتا ہے۔۔۔



آج حج کے مبارک موقع پر آپ لوگوں کے علم میں اضافہ کر دوں کہ جمائمہ خان دو ہزار سات میں حج کا فریضہ ادا کر چکی ہیں۔۔۔۔انھوں نے یہ حج عمران خان سے طلاق کے بعد ادا کیا۔۔۔۔اگر ان کے قبول اسلام کا مقصد صرف عمران خان سے شادی ہوتا تو وہ طلاق کے بعد واپس یہودی بن جاتی۔۔۔۔۔

جمائمہ خان کو یہودن کہنے والے ان کی نیم عریاں تصاویر منظر عام پر لاتے ہیں۔۔۔ان سے پوچھا جاتا ہے یورپین معاشرے میں رہنے والے کروڑوں مسلمان عورتوں میں سے کیا یہ واحد ہے جو بکنی پہن کر ساحل سمندر پر جاتی ہے؟؟؟اگر نہیں تو باقی سب بھی مسلمان عورتیں جن کا تعلق پاکستان سمیت کئی دوسرے ممالک سے بکنی پہن کر ساحل سمندر پر جاتی ہیں تو کیا وہ سب یہودی ہیں؟

نیم عریاں پھرنے کو گناہِ کبیرہ، حرام کام تو کہا جا سکتا ہے لیکن اس کی بنا پر کسی مسلمان کو یہودن نہیں کہا جا سکتا۔۔۔

ہمارے پاکستانی معاشرے میں تو جب کسی کے حج پر جانے کی خبر ملتی ہے تو کہا جاتا ہے

"بڑے کرم کے ہیں فیصلے، بڑے نصیب کی بات ہے۔۔"

لیکن شاید سیاسی اختلافات اس قدر شدت اختیار کر چکے ہیں کہ ایک حاجن بھی اب یہودن کہلائی جاتی ہے۔۔۔۔

بہرحال حوالہ ملاحظہ ہو
یہاں آپ دنیا کی تمام مشہور شخصیات کے حج کی خبر پڑھ سکتے ہیں جن میں باکسر عامر خان، مائیک ٹائی سن شعیب اختر وغیرہ کا ذکر ہے۔۔

http://myexpress.com.au/world/hajj-2014-stars-who-have-made-the-religious-pilgrimage-to-mecca