حدیث : میری امت کا غریب وہ ہے جو قیامت کے دن نماز، روزہ اور زکوۃ لائے گا لیکن اس نے کسی کو گالی دی ہو گی کسی پر بہتان لگایا ہو گا، کسی کا مال کھایا ہو گا، کسی کو مارا پیٹا ہو گا، پس اسکی نیکیاں مظلوموں میں تقسیم کر دی جائیں گی، جب نیکیاں ختم ہو جائیں گی تو مظلوموں کے گناہ ڈال کر اس کو جہنم میں پھینک دیا جائے گا



(ترمذی،ابواب الصفة قیامت،
باب: حساب و قصاص،
راوی: ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ)