Results 1 to 3 of 3

Thread: کبھی کتابوں میں پھول رکھنا

  1. #1
    Join Date
    Mar 2015
    Location
    Karachi
    Posts
    726
    Mentioned
    6 Post(s)
    Tagged
    59 Thread(s)
    Thanked
    1
    Rep Power
    3

    Default کبھی کتابوں میں پھول رکھنا

    کبھی کتابوں میں پھول رکھنا، کبھی درختوں پہ نام لکھنا
    ہمیں بھی ہے یاد آج تک وہ نظر سے حرفِ سلام لکھنا
    وہ چاند چہرے وہ بہکی باتیں، سلگتے دن تھے، سلگتی راتیں
    وہ چھوٹے چھوٹے سے کاغذوں پر محبتوں کے پیام لکھنا
    گلاب چہروں سے دل لگانا، وہ چپکے چپکے نظر ملانا
    وہ آرزوؤں کے خواب بننا، وہ قصۂ ناتمام لکھنا
    مرے نگر کی حسیں فضاؤ! کہیں جو ان کا نشان پاؤ
    تو پوچھنا یہ کہاں بسے وہ، کہاں ہے ان کا قیام لکھنا
    گئی رتوں میں حسن ہمارا بس ایک ہی تو مشغلہ ہے
    کسی کے چہرے کو صبح لکھنا، کسی کی زلفوں کو شام لکھنا
    (حسن رضوی)

    1 - کبھی کتابوں میں پھول رکھنا

  2. #2
    Join Date
    Dec 2009
    Location
    SAb Kya Dil Mein
    Posts
    11,928
    Mentioned
    79 Post(s)
    Tagged
    2306 Thread(s)
    Thanked
    24
    Rep Power
    21474855

    Default

    nice


  3. #3
    Join Date
    Sep 2013
    Location
    Mideast
    Posts
    5,905
    Mentioned
    210 Post(s)
    Tagged
    5074 Thread(s)
    Thanked
    176
    Rep Power
    10

    Default

    KHoob

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •