Results 1 to 3 of 3

Thread: اے دوست ہم نے ترکِ محبت کے باوجود

  1. #1
    Join Date
    Mar 2015
    Location
    Karachi
    Posts
    726
    Mentioned
    6 Post(s)
    Tagged
    59 Thread(s)
    Thanked
    1
    Rep Power
    3

    Default اے دوست ہم نے ترکِ محبت کے باوجود

    ہوتی ہے تیرے نام سے وحشت کبھی کبھی
    برہم ہوئی ہے یوں بھی طبیعت کبھی کبھی
    اے دل کسے نصیب یہ توفیقِ اضطراب
    ملتی ہے زندگی میں یہ راحت کبھی کبھی
    تیرے کرم سے اے عالمِ حسن آفریں
    دل بن گیا ہے دوست کی خلوت کبھی کبھی
    جوشِ جنوں میں درد کی طغیانیوں کے ساتھ
    آنکھوں میں ڈھل گئی تیری صورت کبھی کبھی
    تیرے قریب رہ کے بھی دل مطمئن نہ تھا
    گزری ہے مجھ پہ بھی یہ قیامت کبھی کبھی
    کچھ اپنا ہوش تھا نہ تمہارا خیال تھا
    یوں بھی گزر گئی شبِ فرقت کبھی کبھی
    اے دوست ہم نے ترکِ محبت کے باوجود
    محسوس کی ہے تیری ضرورت کبھی کبھی
    (ناصر کاظمی)
    1 - اے دوست ہم نے ترکِ محبت کے باوجود

  2. #2
    Join Date
    Dec 2009
    Location
    SAb Kya Dil Mein
    Posts
    11,928
    Mentioned
    79 Post(s)
    Tagged
    2306 Thread(s)
    Thanked
    24
    Rep Power
    21474855

    Default

    bu - اے دوست ہم نے ترکِ محبت کے باوجود


  3. #3
    Join Date
    Sep 2013
    Location
    Mideast
    Posts
    5,890
    Mentioned
    210 Post(s)
    Tagged
    5074 Thread(s)
    Thanked
    176
    Rep Power
    10

    Default

    Awesome

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •