Results 1 to 2 of 2

Thread: چہرے پہ میرے زلف کو پھیلاؤ کسی دن

  1. #1
    Join Date
    Mar 2015
    Location
    Karachi
    Posts
    726
    Mentioned
    6 Post(s)
    Tagged
    59 Thread(s)
    Thanked
    1
    Rep Power
    3

    Default چہرے پہ میرے زلف کو پھیلاؤ کسی دن

    چہرے پہ میرے زلف کو پھیلاؤ کسی دن
    کیا روز گرجتے ہو، برس جاؤ کسی دن
    رازوں کی طرح اترو میرے دل میں کسی شب
    دستک پہ میرے ہاتھ کی کھل جاؤ کسی دن
    پیڑوں کی طرح حسن کی بارش میں نہالوں
    بادل کی طرح جھوم کے گھر آؤ کسی دن
    خوشبو کی طرح گزرو میرے دل کی گلی سے
    پھولوں کی طرح مجھ پہ بکھر جاؤ کسی دن
    پھر ہاتھ کو خیرات ملے بندِ قبا کی
    پھر لطف شب وصل کو دہراؤ کسی دن
    گزریں جو میرے گھر سے تو رک جائیں ستارے
    اس طرح میری رات کو چمکاؤ کسی دن
    میں اپنی ہر اک سانس اسی رات کو دے دوں
    سر رکھ کے میرے سینے پہ سوجاؤ کسی دن
    (امجد اسلام امجد)
    1 - چہرے پہ میرے زلف کو پھیلاؤ کسی دن

  2. #2
    Join Date
    Dec 2009
    Location
    SAb Kya Dil Mein
    Posts
    11,928
    Mentioned
    79 Post(s)
    Tagged
    2306 Thread(s)
    Thanked
    24
    Rep Power
    21474855

    Default

    zabardast


Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •