Results 1 to 3 of 3

Thread: ڈھونڈو گے اگر ملکوں ملکوں، ملنے کے نہیں نایاب ہیں ہم

  1. #1
    Join Date
    Mar 2015
    Location
    Karachi
    Posts
    726
    Mentioned
    6 Post(s)
    Tagged
    59 Thread(s)
    Thanked
    1
    Rep Power
    3

    Default ڈھونڈو گے اگر ملکوں ملکوں، ملنے کے نہیں نایاب ہیں ہم

    ڈھونڈو گے اگر ملکوں ملکوں، ملنے کے نہیں نایاب ہیں ہم
    تعبیر ہے جس کی حسرت و غم، اے ہم نفسو وہ خواب ہیں ہم
    اے درد بتا کچھ تو ہی بتا! اب تک یہ معمہ حل نہ ہوا
    ہم میں ہے دلِ بے تاب نہاں یا آپ دل دلِ بے تاب ہیں ہم
    میں حیرت و حسرت کا مارا، خاموش کھڑا ہوں ساحل پر
    دریائے محبت کہتا ہے، آ ! کچھ بھی نہیں پایاب ہیں ہم
    لاکھوں ہی مسافر چلتے ہیں منزل پہ پہنچتے ہیں دو ایک
    اے اہلِ زمانہ قدر کرو نایاب نہ ہوں، کم یاب ہیں ہم
    مرغانِ قفس کو پھولوں نے، اے شاد! یہ کہلا بھیجا ہے
    آجاؤ جو تم کو آنا ہو ایسے میں، ابھی شاداب ہیں ہم
    (شاد عظیم آبادی)

    1 - ڈھونڈو گے اگر ملکوں ملکوں، ملنے کے نہیں نایاب ہیں ہم

  2. #2
    Join Date
    Dec 2009
    Location
    SAb Kya Dil Mein
    Posts
    11,928
    Mentioned
    79 Post(s)
    Tagged
    2306 Thread(s)
    Thanked
    24
    Rep Power
    21474855

    Default

    zabardast


  3. #3
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    Hijr
    Posts
    152,763
    Mentioned
    104 Post(s)
    Tagged
    8577 Thread(s)
    Thanked
    80
    Rep Power
    21474998

    Default

    بہت عمدہ ..........
    پھر یوں ہوا کے درد مجھے راس آ گیا

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •