شاید ابھی نہ پہنچی ہو دعا قبول تک

زندگی ذرا سی اور کہ توبہ سفر میں ہے