Results 1 to 2 of 2

Thread: صحرا ہی غنیمت ہے، جو گھر جاؤ گے لوگو

  1. #1
    Join Date
    Mar 2015
    Location
    Karachi
    Posts
    726
    Mentioned
    6 Post(s)
    Tagged
    59 Thread(s)
    Thanked
    1
    Rep Power
    3

    Default صحرا ہی غنیمت ہے، جو گھر جاؤ گے لوگو

    صحرا ہی غنیمت ہے، جو گھر جاؤ گے لوگو
    وہ عالم وحشت ہے کہ مرجاؤ گے لوگو
    یادوں کے تعاقب میں اگر جاؤگے لوگو
    میری ہی طرح تم بھی بکھر جاؤ گے لوگو
    وہ موجِ صبا بھی ہو تو ہشیار ہی رہنا
    سوکھے ہوئے پتے ہو بکھر جاؤگے لوگو
    اس خاک پہ موسم تو گزرتے ہی رہے ہیں
    موسم ہی تو ہو تم بھی گزر جاؤ گے لوگو
    اجڑے ہیں کئی شہر، تو یہ شہر بسا ہے
    یہ شہر بھی چھوڑا تو کدھر جاؤگے لوگو
    حالات نے چہروں پہ بہت ظلم کئے ہیں
    آئینہ اگر دیکھا تو ڈر جاؤ گے لوگو
    اس پر نہ قدم رکھنا کہ یہ راہِ وفا ہے
    سرشار نہیں ہو، کہ گزر جاؤگے لوگو
    (سرشار صدیقی)

    1 - صحرا ہی غنیمت ہے، جو گھر جاؤ گے لوگو

  2. #2
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    Hijr
    Posts
    152,763
    Mentioned
    104 Post(s)
    Tagged
    8577 Thread(s)
    Thanked
    80
    Rep Power
    21474998

    Default

    پھر یوں ہوا کے درد مجھے راس آ گیا

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •